உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    میٹا کے 13 فیصدملازمین کی چھٹائی سےکئی ملازمین فکرمند، H-1B ویزا ہولڈرز کوسب سے زیادہ خطرہ

    جو اقدامات کیے جا رہے ہیں ان میں امیگریشن سپورٹ بھی شامل ہے۔

    جو اقدامات کیے جا رہے ہیں ان میں امیگریشن سپورٹ بھی شامل ہے۔

    اس بات کو تسلیم کرتے ہوئے کہ چھٹائی کرنے کا کوئی اچھا طریقہ نہیں ہے، زکربرگ نے کہا کہ کمپنی کو امید ہے کہ متاثرہ افراد کی جلد از جلد تمام متعلقہ معلومات حاصل کرے گی اور پھر اس کے ذریعے ان کی مدد کے لیے جو کچھ ہو سکتا ہے، وہ کیا جائے گا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • USA
    • Share this:
      فیس بک کی پیرنٹ کمپنی میٹا میں بڑے پیمانے پر برطرفی شروع ہوئی ہے۔ اس کے ساتھ ہی H-1B جیسے ورک ویزا پر ملازمین کو اب اپنی امیگریشن کی حیثیت پر غیر یقینی صورتحال کا سامنا ہے۔ میٹا کے سی ای او مارک زکربرگ نے تسلیم کیا کہ اگر آپ یہاں ویزا پر ہیں تو یہ لمحہ یقیناً مشکل ہے لیکن متاثرہ افراد کو مدد کی پیشکش کی جائے گی۔ میٹا نے اعلان کیا کہ وہ 11,000 ملازمین یا اس کی افرادی قوت کے 13 فیصد کو باہر کا راستہ دیکھایا جائے اور انھیں برطرف کیا جائے گا۔ زکربرگ نے اسے میٹا کی تاریخ میں کی گئی سب سے مشکل تبدیلیوں میں سے کچھ کے طور پر بیان کیا ہے۔

      امریکہ میں قائم ٹیکنالوجی کمپنیاں H-1B کارکنوں کی ایک بڑی تعداد کی خدمات حاصل کرتی ہیں، جن میں سے زیادہ تر کا تعلق ہندوستان جیسے ممالک سے ہے۔ ایچ۔ ون بی ویزا ایک غیر تارکین وطن ویزا ہے جو امریکی کمپنیوں میں غیر ملکی کارکنوں کو خصوصی پیشوں میں ملازمت دینے کی اجازت دیتا ہے جن کے لیے تھیوریٹیکل یا تکنیکی مہارت کی ضرورت ہوتی ہے۔ امریکہ کی کئی ٹیکنالوجی کمپنیاں ہندوستان اور چین جیسے ممالک سے ہر سال دسیوں ہزار ملازمین کی خدمات حاصل کرنے کے لیے اس پر انحصار کرتی ہیں۔

      زکربرگ نے ملازمین کو لکھے گئے خط میں کہا کہ میں نے اپنی ٹیم کا سائز تقریباً 13 فیصد کم کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اپنے 11,000 سے زیادہ باصلاحیت ملازمین کو جانے دیا ہے۔ ہم اخراجات کو کم کرکے اور زیادہ موثر کمپنی بننے کے لیے کئی اضافی اقدامات بھی کر رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ میں ان فیصلوں کا احتساب کرنا چاہتا ہوں کہ ہم یہاں کیسے پہنچے؟ میں جانتا ہوں کہ یہ سب کے لیے مشکل ہے اور مجھے خاص طور پر متاثر ہونے والوں کے لیے افسوس ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: 


      اس بات کو تسلیم کرتے ہوئے کہ چھٹائی کرنے کا کوئی اچھا طریقہ نہیں ہے، زکربرگ نے کہا کہ کمپنی کو امید ہے کہ متاثرہ افراد کی جلد از جلد تمام متعلقہ معلومات حاصل کرے گی اور پھر اس کے ذریعے ان کی مدد کے لیے جو کچھ ہو سکتا ہے، وہ کیا جائے گا۔ امریکہ میں کمپنی کی طرف سے برطرفی سے متاثر ہونے والوں کی مدد کے لیے جو اقدامات کیے جا رہے ہیں ان میں امیگریشن سپورٹ بھی شامل ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: