Choose Municipal Ward
    CLICK HERE FOR DETAILED RESULTS
    ہوم » نیوز » معیشت

    نئے سال میں نجی شعبوں میں کام کرنے والے مرد ملازمین کوملےگاحکومت کا بڑا تحفہ۔ تفیصل پڑھیں یہاں

    وزارت لیبرنے پیٹرنٹی رخصت کے معاملے پرایک علیحدہ قومی پالیسی بنانے کی تیاری شروع کردی ہے۔

    • Share this:
    نئے سال میں نجی شعبوں میں کام کرنے والے مرد ملازمین کوملےگاحکومت کا بڑا تحفہ۔ تفیصل پڑھیں یہاں
    وزارت لیبرنے پیٹرنٹی رخصت کے معاملے پرایک علیحدہ قومی پالیسی بنانے کی تیاری شروع کردی ہے۔

    حکومت نئے سال میں نجی شعبوں کے مرد ملازمین کو ایک بڑاتحفہ دے سکتی ہے۔سی این بی سی آواز کو ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق وزارت لیبرنے پیٹرنٹی رخصت کے معاملے پرایک علیحدہ قومی پالیسی بنانے کی تیاری شروع کردی ہے۔ اس کے مطابق ، ڈپارٹمنٹ پرسنل اینڈ ٹرننگ (ڈی او پی ٹی) کے حکام اور مختلف انڈسٹریز کے نمائندوں کےدرمیان بات چیت ہوئی ہے۔ ذرائع کے مطابق ، آنے والے دنوں میں اس معاملے پرغوروفکرکرکے اس منصوبہ پرکوئی فیصلہ لیاجائیگا اور حکومت کے مختلف انڈسٹریز کے نمائندوں اور ٹریڈ یونینوں کا سہ فریقی اجلاس ہوگا۔ اس کے منصوبہ کوقطعیت دی جائیگی


    ہم آپ کو بتادیں کہ اس وقت ملک میں پیٹرنٹی رخصت کےلئے کوئی قومی پالیسی نہیں ہے۔ اس وقت مرکزی ملازمین کو 15 دن کی پٹیرینٹی رخصت دینے کا لزوم ہے۔ انہی خطوط پر ، کچھ نجی کمپنیاں اپنے ملازمین کو 15 دن کی چھٹی مع تنخواہ دیتی ہے۔تاہم،نجی سیکٹر کی کچھ کمپنیاں چھٹیوں کے ایام میں کمی کردیتی ہے۔لیکن یہ بھی ایک تلخ حقیقت ہے کہ نجی سیکٹر کی بیشترکمپنیاں اپنے مرد ملازمین کو یہ فوائد نہیں دے رہی ہیں۔


    نجی کمپنیوں میں کام کرتے ہوئے ملازمین۔(تصویر:نیوز18 )۔
    نجی کمپنیوں میں کام کرتے ہوئے ملازمین۔(تصویر:نیوز18 )۔


    لہذا، وزارت لیبرماننا ہے کہ اسے قانون کی شکل دی جائے۔ اس کو بطور پالیسی لایا جانا چاہئے تاکہ نجی شعبے میں کام کرنے والے تمام ملازمین کو اس کے فوائد حاصل ہوں۔ اس کے ساتھ ہی 15 دن کی حد میں بھی اضافہ کیا جائے۔ تاہم ، انڈسٹریز کے ذرائع کا کہنا ہے کہ زچگی کی چھٹی کے خطوط پراسے 26 ہفتوں تک نہیں بڑھایا جاسکتا۔ کیونکہ کسی بھی ادارے میں ملازمین 70 فیصد حصہ مرد افرادی قوت پرمشتمل ہوتاہے۔انڈسٹریزکے ذمہ داروں کا مانناہے کہ زیادہ سے زیادہ ، اس رخصت کو ایک ماہ تک بڑھایاجاسکتاہے۔حکومت مرد اور خواتین ملازمین کے مابین فرق کو کم کرنے کی تیاری بھی کررہی ہے تاکہ نجی شعبے کی کمپنیوں کو خواتین ملازمین کی بھرتی کرنے کی ترغیب دی جائے۔
    First published: Jan 02, 2020 09:25 AM IST
    corona virus btn
    corona virus btn
    Loading