ہوم » نیوز » معیشت

اپریل سے کم ہو جائے گی آپ کی تنخواہ، EMI چکانے میں ہو سکتی ہے پریشانی، جانیں کیا ہے حکومت کا پلان

نیا سال آنے میں بس ایک دن کا وقت بقایہ ہے۔ 2021 کئی نئی تبدیلی کے ساتھ دستک دے گا۔ ایسے مرکزی حکومت آپ کی تنخواہ کو لیکر بڑا فیصلہ لے سکتی ہے۔

  • Share this:
اپریل سے کم ہو جائے گی آپ کی تنخواہ، EMI  چکانے میں ہو سکتی ہے پریشانی، جانیں کیا ہے حکومت کا پلان
2021 کئی نئی تبدیلی کے ساتھ دستک دے گا۔

نیا سال آنے میں بس ایک دن کا وقت بقایہ ہے۔ 2021 کئی نئی تبدیلی کے ساتھ دستک دے گا۔ ایسے مرکزی حکومت آپ کی تنخواہ کو لیکر بڑا فیصلہ لے سکتی ہے۔ ایسا مانا جا رہا ہے کہ مرکزی حکومت نئے کمپنسیشن اصول (New Compensation Rule) کو اپریل 2021 سے نافذ کر دیا جائے گا جس کے بعد آپ کی ٹیک ہوم تنخواہ کم ہو جائے گی۔ نئی تنخواہ کے قواعد کے تحت ملازمین کی سیلری اسٹرکچر میں تبدیلی کرنی ہوگی۔

کم ہو جائے گی ان ہینڈ تنخواہ

منی کنٹرول کی خبر کے مطابق نئے قواعد کے تحت کمپنیوں کے ذریعے ملازمین کو دئے جانے والے پیمنٹ اسٹرکچر میں تبدیلی ہوگی۔ عام طور پر ان کمہنیوں میں نان۔الاؤنس (Non-Allowance) حصہ کم ہوتا ہے۔ کچھ معاملوں میں تو یہ 50 فیصدی سے بیحد کم ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ ملاإین کی گریچوئٹی (Gratuity) اور پروویڈینڈٹ فنڈ (Provident Fund) کونٹریبیوشن (contributionsٌ) میں اضافہ ہوگا۔ حالانکہ ہاتھ میں آنے والی تنخواہ کم ہو جائے گی۔

اس وقت زیادہ تر کمپنیوں میں بیسک تنخواہ کے مقابلے الاؤنس کمپونینٹ زیادہ ہوتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ مرکزی حکومت کے نئے اصول کے نفاذ کے بعد پرائیویٹ سیکٹر کے ملازمین پر سب سے زیادہ اثر پڑے گا۔

ریٹائرمینٹ کے بعد ملے گا فائدہ

آپ کو بتادیں کہ ایک طرف نئے اصول سے ریٹائرمنٹ کے بعد آپ کو کافی فائدہ ملے گا۔ وہیں دوسری طرف ان ہینڈ سیلری کم ہونے سے آپ کی موجودہ فائنینشیل پلاننگ خراب ہو سکتی ہیں۔ اس کا اثر آپ کے گھریلو حرچ، انویسٹیمنٹ اور ای ایم آئی پر بھی دیکھنے کو ملے گا۔

موجودہ حالات میں ہو سکتی ہے پریشانی
اس وقت دیکھا گیا ہے کہ تنخواہ کلاس کا چالیس فیصدی حصہ ای ایم آئی چکانے میں ہی چلا جاتا ہے۔ میٹرو سٹی میں لوگ ہوم، کار اور پرسنل لون لیکر اپنی ضرورتوں کو پورا کرتے ہیں تو ایسے میں ہاتھ میں آنے والی تنخواہ کم ہونے سے کافی لوگوں کو پریشانیوں کا سامنا پڑتا ہے
Published by: sana Naeem
First published: Dec 30, 2020 03:23 PM IST