உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وزیر اعظم نریندر مودی نے Jewar Airport کا رکھا سنگ بنیاد، ایک لاکھ لوگوں کو ملے گا روزگار

    Youtube Video

    PM Narendra Modi inaugurate Jewar Noida International Airport: اس موقع پر موجود عوام سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ جیور اب بین الاقوامی سطح پر آچکا ہے اور یوپی کے لوگوں کے ساتھ دہلی این سی آر کو بھی اس کا فائدہ ہوگا۔

    • Share this:
      جیور/نئی دہلی: وزیراعظم نریندر مودی نوئیڈا میں آج جیور انٹرنیشنل ایئرپورٹ کا سنگ بنیاد رکھا۔اس تقریب میں اترپردیش کے وزراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ بھی موجود رہے۔ اس موقع پر موجود عوام سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ جیور اب بین الاقوامی سطح پر آچکا ہے اور یوپی کے لوگوں کے ساتھ دہلی این سی آر کو بھی اس کا فائدہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ 21 ویں صدی کا ہندوستان آج ایک سے زیادہ جدید انفراسٹرکچر کی تعمیر کر رہا ہے۔ بہتر سڑکیں، ریلوے اور ہوائی اڈے صرف بنیادی منصوبے نہیں ہوتے ہیں بلکہ یہ پورے خطے کو بدل دیتے ہیں۔ لوگوں کی زندگیاں بدل دیتے ہیں، غریب ہو یا درمیانی ​​طبقہ سب کو اس سے بہت فائدہ ملتا ہے۔ انفرا پروجیکٹس کی طاقت اس وقت بڑھ جاتی ہے جب ان میں ہموار اور آخری میل کنیکٹیوٹی ہو۔ جیور انٹرنیشنل ایئرپورٹ کنیکٹیویٹی کے لحاظ سے ایک ماڈل ہوگا۔

      وزیراعظم نے کہا کہ ملک میں ہوا بازی کا شعبہ تیزی سے ترقی کر رہا ہے۔ ہندوستانی کمپنیاں سینکڑوں طیارے خرید رہی ہیں، ان کے لیے بھی نوئیڈا انٹرنیشنل ایئرپورٹ بڑا کردار ادا کرے گا۔ یہ ہوائی اڈہ طیاروں کی دیکھ بھال اور مرمت کا سب سے بڑا مرکز ہو گا۔ وزیراعظم نے کہا کہ یہاں سے ملک اور بیرون ملک کے طیارے سروس حاصل کریں گے اور سینکڑوں نوجوانوں کو روزگار ملے گا۔ وزیراعظم نے کہا کہ آج بھی ہم اپنے 85 فیصد طیارے مرمت کے لیے بیرون ملک بھیجتے ہیں۔ مرمت پر صرف 15 ہزار کروڑ خرچ ہوتے ہیں۔ یہ ہوائی اڈہ اس صورتحال کو بدلنے میں بھی مددگار ثابت ہوگا۔ پی ایم نے کہا کہ اس ہوائی اڈے کے ذریعے ملٹی ماڈل کارگو کا خواب پورا ہو رہا ہے۔ اس پورے علاقے کی ترقی کو تقویت ملے گی۔


      یہ ایئرپورٹ بانسٹھ سو ہیکٹئر اراضی پر ہوگا۔ایئرپورٹ کی تعمیر پر تیس ہزار کروڑ کی لاگت آئے گی۔ایئر پورٹ کی تعمیر کا کام مرحلے وارمکمل ہوگا۔ پہلے دو رن وے اور ایک ٹرمینل کی تعمیر ہوگی۔اس کے بعد تین رن وے بنائے جائیں گے۔ جیور انٹرنیشنل ایئرپورٹ سے پہلی پرواز کا ہدف چھبیس ستمبر دو ہزارچوبیس مقرر کیا گیا ہے۔

      اِس ہوائی اڈے کے سبب اترپردیش کے راستے دنیا کیلئے کھل جائیں گے اور اِس سے ریاست کو لوجسٹک کے عالمی نقشے میں مقام حاصل ہوجائے گا۔۔اس ایئرپورٹ کی تعمیر سے مغربی یوپی کی تصویر بدلنے اور روزگار کے مواقع پیدا ہونے کے دعوے بھی کیے جارہے ہیں۔

       
      Published by:Sana Naeem
      First published: