உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Electric Vehicles in India: الیکٹرک کار خریدنے والوں کیلئے اچھی خبر! نتنگ گڈکری نے کیا یہ بڑا اعلان

    ہندوستان میں جلد ہی الیکٹرک وہیکل مینوفیکچرنگ شروع کرنے کے لئے ٹیسلا کو دی گئی دعوت

    ہندوستان میں جلد ہی الیکٹرک وہیکل مینوفیکچرنگ شروع کرنے کے لئے ٹیسلا کو دی گئی دعوت

    پٹرول اور ڈیزل کی بڑھتی قیمتوں کے درمیان اب لوگ الیکٹرک گاڑیاں خریدنے میں کافی دلچسپی دکھا رہے ہیں لیکن بہت سے لوگ اس وقت زیادہ قیمتوں کی وجہ سے الیکٹرک گاڑیاں خریدنے سے کتراتے ہیں لیکن اب ایسے لوگوں کے لیے خوشخبری ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی. ان دنوں ملک بھر میں الیکٹرک گاڑیوں (Electric Vehicles in India) کی دھوم ہے۔ نئی الیکٹرک کاریں اور اسکوٹر لگاتار لانچ کیے جا رہے ہیں۔ پٹرول اور ڈیزل کی بڑھتی قیمتوں کے درمیان اب لوگ الیکٹرک گاڑیاں خریدنے میں کافی دلچسپی دکھا رہے ہیں لیکن بہت سے لوگ اس وقت زیادہ قیمتوں کی وجہ سے الیکٹرک گاڑیاں خریدنے سے کتراتے ہیں لیکن اب ایسے لوگوں کے لیے خوشخبری ہے۔ مرکزی وزیرر روڈ ٹرانسپورٹ کے نتن گڈکری (Union Road Transport and Highways Minister Nitin Gadkari ) نے کہا کہ اگلے دو سالوں میں الیکٹرک اور پٹرول گاڑیوں کی قیمت ایک ہو جائے گی۔ نتن گڈکری کا کہنا ہے کہ جلد ہی اس علاقے میں انقلاب آنے والا ہے۔
      انڈین چیمبر آف کامرس اور FY21 AGM کے سالانہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے، گڈکری نے کہا، "دو سال کے اندر، الیکٹرک گاڑیوں کی قیمت اس سطح پر آ جائے گی جو ان کے پیٹرول کی ویرئنٹ کے برابر ہو گی۔" انہوں نے یہ بھی کہا کہ حکومت ای وی چارجنگ کی سہولیات کو بڑھانے کے لیے کام کر رہی ہے۔ گڈکری نے مزید کہا، "ہم 2023 تک بڑی شاہراہوں پر 600 ای وی چارجنگ پوائنٹس قائم کر رہے ہیں۔
      کم ہو جائے گی قیمت
      مرکزی وزیرر روڈ ٹرانسپورٹ کے نتن گڈکری نے کہا کہ ای وی کی قیمت زیادہ ہے کیونکہ ان کی تعداد کم ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان EV انقلاب کا منتظر ہے، جس میں 250 اسٹارٹ اپ کاروبار لاگت سے موثر EV ٹیکنالوجی کی تیاری میں مصروف ہیں۔ اس کے علاوہ، بڑے کار ساز اداروں نے EV کی پیداوار کی لاگت کو کم کرنے کی کوشش میں افواج میں شمولیت اختیار کی ہے۔ الیکٹرک گاڑیوں پر جی ایس ٹی صرف 5 فیصد ہے اور لیتھیم آئن بیٹریوں کی قیمت بھی کم ہو رہی ہے۔
      سب سے سستا ٹرانسپورٹ
      گڈکری کا یہ بھی ماننا ہے کہ فی کلومیٹر سستی ہونے کی وجہ سے ہندوستان میں الیکٹرک گاڑیوں کی بہت زیادہ فروخت ہوگی۔ گڈکری نے کہا، "پٹرول سے چلنے والی کار کی قیمت 10 روپے فی کلومیٹر، ڈیزل کی قیمت 7 روپے فی کلومیٹر اور بجلی کی قیمت صرف 1 روپے فی کلومیٹر ہے۔" وزیر نے پٹرول اور ڈیزل جیسے روایتی ایندھن پر انحصار کم کرنے کے لیے ایتھنول اور سی این جی جیسے متبادل ایندھن کے استعمال پر زور دیا ہے۔
      ملک کی قومی راجدھانی دہلی میں ہوا کا معیار (Delhi Air Quality) بہتر ہوا ہے لیکن اس کے باوجود یہ خراب زمرے میں ہے۔ دریں اثنا، دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے Gopal Rai) نے اعلان کیا ہے کہ 27 نومبر سے الیکٹرک اور سی این جی (CNG) گاڑیوں کی انٹری ملے گی، جو ضروری خدمات میں مصروف ہیں۔ اس کے علاوہ پیٹرول اور ڈیزل گاڑیوں (Petrol and Diesel Vehicles) کےگاڑیوں کی انٹری پر 3 دسمبر تک پابندی رہے گی۔ اس کے ساتھ ہی آلودگی میں بہتری کو دیکھتے ہوئے دہلی کابینہ نے اب 29 نومبر سے اسکول دوبارہ کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔

      اس کے علاوہ گوپال رائے نے کہا کہ ان جگہوں کے لیے بسیں چلائی جائیں گی جہاں سے دہلی حکومت کے زیادہ سے زیادہ ملازمین آتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت دہلی سکریٹریٹ سے آئی ٹی او اور اندرا پرستھ میٹرو اسٹیشنوں تک اپنے ملازمین کے لیے شٹل بس سروس بھی شروع کرے گی۔ جبکہ گزشتہ تین دنوں میں ہوا کے معیار میں بہتری آئی ہے۔ شہر کا AQI دیوالی سے پہلے کے دنوں جیسا ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: