ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

PAN-Aadhaar Linking: کیاہوگااگرآپ پین اورآدھار کارڈ کو 30 جون تک لنک نہیں کرائیں گے؟

سینٹرل بورڈ آف ڈائریکٹ ٹیکس (Central Board of Direct Taxes ) نے اپنے نوٹیفکیشن میں کہا ہے کہ اگر کوئی بھی پین کارڈ کو آدھار کارڈ سے لنک کرنے میں ناکام رہا ہے تو وہ ناکارہ ہوجائے گا۔ اس میں یہ بھی واضح کیا گیا کہ اگر ڈیڈ لائن گزرنے کے بعد صارف اپنا پین آدھار کارڈ سے لنک کرے گا تو پھر پین کارڈ "آدھار نمبر کی اطلاع دہندگی کی تاریخ سے آپریٹ ہوجائے گا۔"

  • Share this:
PAN-Aadhaar Linking: کیاہوگااگرآپ پین اورآدھار کارڈ کو 30 جون تک لنک نہیں کرائیں گے؟
سینٹرل بورڈ آف ڈائریکٹ ٹیکس (Central Board of Direct Taxes ) نے اپنے نوٹیفکیشن میں کہا ہے کہ اگر کوئی بھی پین کارڈ کو آدھار کارڈ سے لنک کرنے میں ناکام رہا ہے تو وہ ناکارہ ہوجائے گا۔ اس میں یہ بھی واضح کیا گیا کہ اگر ڈیڈ لائن گزرنے کے بعد صارف اپنا پین آدھار کارڈ سے لنک کرے گا تو پھر پین کارڈ "آدھار نمبر کی اطلاع دہندگی کی تاریخ سے آپریٹ ہوجائے گا۔"

مرکزی حکومت نے ملک میں وبائی حالت کی صورتحال کو مدنظر رکھتے ہوئے مستقل اکاؤنٹ نمبر (PAN) اور آدھار کارڈ (Aadhaar card) کو لنک کرنے کی آخری تاریخ میں توسیع کردی تھی۔ آخری تاریخ 31 مارچ سے 30 جون 2021 تک بڑھا دی گئی ہے۔ تاہم یہ توسیع کی آخری تاریخ قریب ہے اور دونوں دستاویزات کو جوڑنے کے لئے ایک ماہ سے بھی کم وقت باقی ہے۔


سینٹرل بورڈ آف ڈائریکٹ ٹیکس (Central Board of Direct Taxes ) نے اپنے نوٹیفکیشن میں کہا ہے کہ اگر کوئی بھی پین کارڈ کو آدھار کارڈ سے لنک کرنے میں ناکام رہا ہے تو وہ ناکارہ ہوجائے گا۔ اس میں یہ بھی واضح کیا گیا کہ اگر ڈیڈ لائن گزرنے کے بعد صارف اپنا پین آدھار کارڈ سے لنک کرے گا تو پھر پین کارڈ "آدھار نمبر کی اطلاع دہندگی کی تاریخ سے آپریٹ ہوجائے گا۔"Aadhaar کو PAN سے SMS کے ذریعہ کیسے کریں لنک، جانئے پورا طریقہ


بجٹ 2021 میں مرکزی حکومت نے انکم ٹیکس ایکٹ 1961 میں ایک نئی دفعہ 234 ایچ شامل کی، جہاں افراد کے پاس اگر مقررہ تاریخ کے بعد آدھار سے منسلک ہوجائے تو ان سے فیس وصول کی جاسکتی ہے۔ نئے سیکشن کے مطابق اگر 1 جولائی 2021 کو یا اس کے بعد پین کو آدھار سے منسلک کیا گیا ہے، تو وہ شخص جرمانہ ادا کرنے کا پابند ہوگا جو ایک ہزار روپے سے زیادہ نہیں ہوسکتا ہے۔


اگر آپ کا پین کارڈ ناکارہ ہوجاتا ہے تو آپ جہاں کہیں بھی لازمی قرار دیتے ہیں اس سے مالی لین دین نہیں کرسکیں گے۔ فروری 2021 کے سی بی ڈی ٹی نوٹیفکیشن میں یہ ذکر کیا گیا ہے کہ ایک بار پین کو آدھار کے ساتھ جوڑ دیا گیا ہے ، یہ اس تاریخ سے دوبارہ آپریٹو ہوجائے گا جس دن پین کو آدھار سے منسلک کیا گیا ہے۔

اگر پین کارڈ ڈیڈ لائن کے بعد یعنی 30 جون 2021 کو لنک ہوجاتا ہے تو افراد اس فیس کے لئے ذمہ دار ہوں گے جو سیکشن 234 ایچ کے تحت عائد ہوگی۔ لہذا آخری تاریخ گزرنے سے پہلے دونوں کو جوڑنے کا مشورہ دیا جاتا ہے۔

انکم ٹیکس کے قوانین کے مطابق اگر کسی فرد کا پین 30 جون 2021 تک آدھار سے منسلک نہ ہونے کی وجہ سے غیر موزوں ہوجاتا ہے اور ایسے شخص کو پین پیش کرنا یا حوالہ دینا ضروری ہے، تو یہ سمجھا جائے گا کہ انہوں نے مطلوبہ پیش کردہ / مطلع / حوالہ نہیں دیا ہے۔ دستاویز اس سے وہ انکم ٹیکس ایکٹ کے تحت ہونے والے تمام نتائج کا ذمہ دار بنیں گے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Jun 22, 2021 07:04 AM IST