ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

PF Withdrawal: ای پی ایف اکاؤنٹ سے رقم نکالتے وقت کی جانے والی 5 غلطیاں! کیسے رہیں اس سے محفوظ

کوروناوبا کے دوران بہت سے لوگوں کے لئے مشکل حالات پر غور کرتے ہوئے ای پی ایف او (ملازم پروویڈنٹ فنڈ آرگنائزیشن) نے اب اپنے اراکین کو کووڈ۔19بحران یا بے روزگاری کی صورت میں اپنی کل رقم کا کچھ حصہ لینے کے قابل بنادیاہے۔ اسی طرح اگرکوئی بھی ملازم نوکری تبدیل کرتا ہے تو اس رقم کو ایک اکاوئٹ سے دوسرے اکاوئٹ میں منتقل کیا جاسکتا ہے۔ عام طور پر EPF اکاؤنٹ 8.5 فیصد کی سالانہ واپسی کی پیش کش کرتاہے۔

  • Share this:
PF Withdrawal: ای پی ایف اکاؤنٹ سے رقم نکالتے وقت کی جانے والی 5 غلطیاں! کیسے رہیں اس سے محفوظ
یو اے این کو آدھار کے ساتھ مربوط کرنا بھی ضروری ہے۔

عالمی وبا کورونا وائرس (کووڈ۔19) کی وجہ سے پیدا ہونے والی کساد بازاری ہندوستان میں محنت کش طبقے کو سخت نقصان پہنچا رہی ہے۔ اچھی بچت کے ساتھ پیسہ بچانے کا ایک طریقہ پروویڈنٹ فنڈ (PF) ہے۔ یہ ایک فنڈ ہے جس میں ملازم اور آجر دونوں ملازم کی ماہانہ بنیادی اجرت کا کچھ فیصد سرمایہ کاری کرتے ہیں۔ اصولی طور پر کسی ملازم کی کمائی ہوئی رقم یا EPF اکاؤنٹ میں موجود رقم کا کچھ حصہ ریٹائرمنٹ یا استعفیٰ کی صورت میں واپس لیا جاسکتا ہے۔


کورونا وبا کے دوران بہت سے لوگوں کے لئے مشکل حالات پر غور کرتے ہوئے ای پی ایف او (ملازم پروویڈنٹ فنڈ آرگنائزیشن) نے اب اپنے اراکین کو کووڈ۔19 بحران یا بے روزگاری کی صورت میں اپنی کل رقم کا کچھ حصہ لینے کے قابل بنا دیا ہے۔ اسی طرح اگر کوئی بھی ملازم نوکری تبدیل کرتا ہے تو اس رقم کو ایک اکاوئٹ سے دوسرے اکاوئٹ میں منتقل کیا جاسکتا ہے۔ عام طور پر EPF اکاؤنٹ 8.5 فیصد کی سالانہ واپسی کی پیش کش کرتا ہے۔


تاہم اگر آپ اپنے پی ایف کو نکالنا چاہتے ہیں تو ان 5 غلطیوں سے بچیں:


  • یو اے این سیڈ بینک اکاؤنٹ UAN Seed Bank Account:


یو اے این (یونیورسل اکاؤنٹ نمبر) کو بینک اکاؤنٹ نمبر میں ڈالنا چاہئے۔ اگر آپ کا اکاؤنٹ بیج نہیں ہے تو آپ کو فنڈز حاصل کرنے میں دشواری ہوسکتی ہے۔ اس کے علاوہ ای پی ایف او ریکارڈوں میں دیا گیا آئی ایف ایس سی نمبر درست ہونا چاہئے۔

  • نامکمل کے وائی سی Incomplete KYC:


اگر کسی اکاؤنٹ ہولڈر کا کے وائی سی نامکمل ہے تو آپ کی درخواست مسترد کردی جاسکتی ہے۔ آپ کے کے سی کے معلومات کو بھی توثیق کرنا ہوگا۔ اپنے ممبر ای سروس اکاؤنٹ میں لاگ ان کرکے آپ یہ طے کرسکتے ہیں کہ آیا کے وائی سی مکمل اور تصدیق شدہ ہے۔

  • غلط تاریخ پیدائش (ڈی او بی) Incorrect Date of Birth (DoB):


اگر ای پی ایف او میں اندراج شدہ تاریخ (ڈی او بی) اور آجر کے ریکارڈ میں درج تاریخ پیدائش مماثل نہیں ہے تو آپ کی درخواست مسترد کردی جاسکتی ہے۔ ای پی ایف او نے اس سے قبل 3 اپریل کو ایک سرکلر جاری کیا تھا، جس میں ای پی ایف او ریکارڈ میں درج تاریخ پیدائش میں ترمیم اور یو اے این کو آدھار سے منسلک کرنے کے معیار میں نرمی کی گئی تھی۔ جو کہ اگلے تین سال کے لئے ہے۔ اس دوران آپ اپنی تاریخ پیدائش تبدیل کرسکتے ہیں۔

  • یو این اے-آدھار لنک UAN-Aadhaar link:


یو اے این کو آدھار کے ساتھ مربوط کرنا بھی ضروری ہے۔ اگر آپ کا یو اے این اور آدھار لنک نہیں ہیں تو آپ کی ای پی ایف واپسی کی درخواست مسترد کردی جاسکتی ہے۔ یو اے این یا ای پی ایف اکاؤنٹ کو آدھار سے منسلک کرنے کے چار طریقے ہیں۔ آپ گھر بیٹھے ہوئے بھی لنک کرسکتے ہیں۔


  • غلط بینک اکاؤنٹ کی معلومات Incorrect Bank Account Information:


پی ایف کی رقم اسی اکاؤنٹ میں منتقل کردی جائے گی ، جس کا دستاویز ای پی ایف او ریکارڈ میں کیا جائے گا۔ نتیجہ کے طور پر دعوی دائر کرتے وقت اس اکاؤنٹ کی معلومات کو پوری طرح سے پُر کرنا یقینی بنائیں۔ اگر آپ غلط اکاؤنٹ نمبر یا کوئی دوسرا اکاؤنٹ نمبر جمع کراتے ہیں تو آپ کی درخواست سے انکار کردیا جائے گا۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Jul 11, 2021 06:34 PM IST