ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Mastercard : آر بی آئی کی جانب سےماسٹرکارڈز پرکیوں عائدکی جارہی ہے پابندی؟یہاں جانئے تمام تفصیلات

ریزرو بینک آف انڈیا (Reserve Bank of India) نے واضح کیا کہ یہ کارروائی ماسٹر کارڈ کی طرف سے ادائیگی کے نظام کے اعداد و شمار کے ذخیرہ کرنے سے متعلق آر بی آئی کی ہدایت پر عمل کرنے میں ناکامی کا نتیجہ ہے۔

  • Share this:
Mastercard : آر بی آئی  کی جانب سےماسٹرکارڈز پرکیوں عائدکی جارہی ہے پابندی؟یہاں جانئے تمام تفصیلات
ریزرو بینک آف انڈیا (Reserve Bank of India) نے واضح کیا کہ یہ کارروائی ماسٹر کارڈ کی طرف سے ادائیگی کے نظام کے اعداد و شمار کے ذخیرہ کرنے سے متعلق آر بی آئی کی ہدایت پر عمل کرنے میں ناکامی کا نتیجہ ہے۔

ریزرو بینک آف انڈیا (Reserve Bank of India) نے چہارشنبہ کے روز ماسٹر کارڈ ایشیاء (Mastercard Asia) کو کسی بھی نئے گھریلو صارفین کو اپنے کارڈ نیٹ ورک (card network) پر آن بورڈنگ (on-boarding) سے روک دیا۔ اس کا مطلب یہ ہوگا کہ ماسٹرکارڈ ہندوستان میں صارفین کے لیے کوئی نیا کارڈ جاری نہیں کرسکے گا۔ایک بیان میں ریزرو بینک آف انڈیا (Reserve Bank of India) نے واضح کیا کہ یہ کارروائی ماسٹر کارڈ کی طرف سے ادائیگی کے نظام کے اعداد و شمار کے ذخیرہ کرنے سے متعلق آر بی آئی کی ہدایت پر عمل کرنے میں ناکامی کا نتیجہ ہے۔


امریکن ایکسپریس بینکنگ کارپوریشن اور ڈینرز کلب انٹرنیشنل لمیٹڈ کے بعد اس سال یکم مئی کو ادائیگی کے دیگر دو نظام آپریٹرز پر بھی اسی طرح کی پابندیاں عائد کرنے کے بعد ماسٹر کارڈ اس طرح کی پابندیوں کا سامنا کرنے والا تیسرا بڑا ادائیگی سسٹم آپریٹر بن گیا ہے۔ مذکورہ حکم کے مطابق ماسٹر کارڈ پر پابندی اس سال 22 جولائی کو نافذ ہوگی۔


آر بی آئی کی جانب سے جاری ایک پریس بیان میں کہا گیا ہے کہ کافی وقت اور مناسب مواقع کی وصولی کے باوجود یہ ادارہ ادائیگی کے نظام کے ڈیٹا کو ذخیرہ کرنے کی ہدایات کے مطابق نہیں ہے‘‘۔ایک بیان میں آر بی آئی نے واضح کیا کہ اس کے حکم سے ماسٹر کارڈ کے موجودہ صارفین پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔


آر بی آئی نے کہا کہ ’’ماسٹر کارڈ تمام کارڈ جاری کرنے والے بینکوں اور غیر بینکوں کو ان ہدایات پر عمل پیرا ہونے کا مشورہ دے گا۔ ادائیگی اور تصفیے کے نظام ایکٹ 2007 (پی ایس ایس ایکٹ) کے سیکشن 17 کے تحت آر بی آئی کے اختیار کردہ اختیارات کے استعمال کے تحت یہ کارروائی کی گئی ہے‘‘۔

مرکزی بینک نے بتایا کہ ادائیگی کے نظام کے آپریٹر ماسٹر کارڈ کو آر بی آئی کے ادائیگی اور آبادکاری نظام ایکٹ 2007 کے تحت کارڈ نیٹ ورک چلانے کا اختیار ہے۔

  • ماسٹر کارڈ پر پابندی کیوں؟


6 اپریل 2018 کو 'ادائیگی کے نظام کے ڈیٹا کو ذخیرہ کرنے کے بارے میں اپنے سرکلر کا حوالہ دیتے ہوئے آر بی آئی نے کہا کہ تمام ادائیگی سسٹم آپریٹرز فراہم کرنے والوں کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ اس بات کا یقین کریں کہ ان کی ادائیگی کے نظام سے متعلق سارا ڈیٹا صرف ہندوستان میں کسی سسٹم پر محفوظ ہے۔

سوال میں شامل ڈیٹا میں دیگر کلیدی تفصیلات کے علاوہ مکمل اختتام سے آخر تک لین دین کی تفصیلات ، صارفین کی معلومات اور ادائیگی کی ہدایات شامل ہیں۔

اس وقت آر بی آئی نے سرکلر کی تعمیل کے لئے ادائیگی کے نظام کے آپریٹرز کو چھ ماہ کی مہلت دی تھی۔ماسٹر کارڈ سمیت ادائیگی کے دیگر آپریٹرز کو بھی کہا گیا کہ وہ آر بی آئی کی ہدایات پر عمل کریں اور بورڈ سے منظور شدہ سسٹم آڈٹ رپورٹ سی ای آر ٹی ان آئنڈیٹر کے ذریعہ پیش کریں۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Jul 15, 2021 11:44 AM IST