உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    گورنر شکتی کانت داس کا انتباہ! مارچ 2022 تک خوب پریشان کرے گی مہنگائی، جانیں کب ملے گی راحت

    RBI on Retail Inflation - ریزرو بینک کے گورنر نے مہنگائی کو لے کر بڑا بیان دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ جو کھانا، سبزیاں، ایندھن اور کپڑے وہ خرید رہے ہیں وہ مہنگے ہیں تو ان کے ذہن میں مہنگائی ہی گھومے گی۔

    RBI on Retail Inflation - ریزرو بینک کے گورنر نے مہنگائی کو لے کر بڑا بیان دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ جو کھانا، سبزیاں، ایندھن اور کپڑے وہ خرید رہے ہیں وہ مہنگے ہیں تو ان کے ذہن میں مہنگائی ہی گھومے گی۔

    RBI on Retail Inflation - ریزرو بینک کے گورنر نے مہنگائی کو لے کر بڑا بیان دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ جو کھانا، سبزیاں، ایندھن اور کپڑے وہ خرید رہے ہیں وہ مہنگے ہیں تو ان کے ذہن میں مہنگائی ہی گھومے گی۔

    • Share this:
      ای دہلی۔ ریزرو بینک آف انڈیا کے گورنر شکتی کانتا داس (RBI Governor Shaktikant Das) نے مانیٹری پالیسی جائزہ میٹنگ (RBI MPC Meeting) کے بعد جمعرات کو کہا کہ رواں سہ ماہی جنوری-مارچ 2022 میں خوردہ مہنگائی صارفین (Retail Inflation) کو بہت پریشان کرے گی۔ نئے مالی سال کے آغاز کے بعد ہی اس میں نرمی کے آثار نظر آرہے ہیں۔

      مانیٹری کمیٹی کی تین روزہ میٹنگ کے بعد، گورنر شکتی کانت داس نے مالی سال 2022-23 کے لیے تخمینی خوردہ مہنگائی کے اعداد و شمار جاری کیے۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ مالی سال میں خوردہ مہنگائی 4.5 فیصد رہنے کی توقع ہے۔ موجودہ سہ ماہی میں مہنگائی کی شرح اونچی رہے گی، لیکن یہ 6 فیصد کی مقررہ حد سے آگے نہیں جائے گی۔ تاہم خبر رساں ادارے روئٹرز نے ماہرین اقتصادیات کے درمیان کرائے گئے ایک سروے میں کہا ہے کہ جنوری میں خوردہ مہنگائی 6 فیصد تک پہنچ جائے گی جو کہ آر بی آئی کے دائرہ کار کا آخری چھور ہے۔



      ستمبر کے بعد ہی نرمی کے آثار
      شکتی کانت داس نے کہا ہے کہ فی الحال خوردہ مہنگائی سے زیادہ راحت ملتی نظر نہیں آرہی اور 2022-23 کی دوسری ششماہی یعنی ستمبر 2022 کے بعد ہی اس میں نرمی کے آثار دکھائی دے رہے ہیں۔ مہنگائی پر گھریلو وجوہات سے سے زیادہ گلوبل فیکٹر کا دباؤ ہے۔ پوری دنیا میں مہنگائی بڑھ رہی ہے۔ ایسی صورت حال میں فی الوقت صرف ہندوستان میں اس کے نیچے گرنے کا کوئی امکان نہیں نظر آرہا ہے۔

       

      عوام کی سوچ میں مہنگائی بیٹھ گئی ہے: داس
      ریزرو بینک کے گورنر نے مہنگائی کو لے کر بڑا بیان دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ جو کھانا، سبزیاں، ایندھن اور کپڑے وہ خرید رہے ہیں وہ مہنگے ہیں تو ان کے ذہن میں مہنگائی ہی گھومے گی۔ حالانکہ صارفین کی مصنوعا (Consumer Products) ت کی کمپنیوں اور ٹیلی کام کمپنیوں (Telecom Companies) کی جانب سے قیمتوں میں اضافے کا اثر خوردہ مہنگائی پر بھی ضرور نظر آئے گا۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: