உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    RBI MPC Meet: آج شروع ہوگی آر بی آئی کی میٹنگ، 3دن بعد اور مہنگے ہو سکتے ہیں لون اور EMI

    RBI MPC Meet Today: آپ کو بتاتے چلیں کہ آر بی آئی کی جانب سے ریپو ریٹ بڑھانے کے بعد تمام نجی اور سرکاری سیکٹر کے بینک قرضوں کی شرح سود میں اضافہ کرتے ہیں، جس کا براہ راست اثر عام عوام پر پڑتا ہے۔

    RBI MPC Meet Today: آپ کو بتاتے چلیں کہ آر بی آئی کی جانب سے ریپو ریٹ بڑھانے کے بعد تمام نجی اور سرکاری سیکٹر کے بینک قرضوں کی شرح سود میں اضافہ کرتے ہیں، جس کا براہ راست اثر عام عوام پر پڑتا ہے۔

    RBI MPC Meet Today: آپ کو بتاتے چلیں کہ آر بی آئی کی جانب سے ریپو ریٹ بڑھانے کے بعد تمام نجی اور سرکاری سیکٹر کے بینک قرضوں کی شرح سود میں اضافہ کرتے ہیں، جس کا براہ راست اثر عام عوام پر پڑتا ہے۔

    • Share this:
      RBI MPC Meet Today: ملک بھر میں مہنگائی اپنے عروج پر پہنچ گئی ہے۔ ایسے میں اسے کم کرنے کی بہت سی کوششیں کی جا رہی ہیں۔ آر بی آئی کی مانیٹری پالیسی میٹنگ آج یعنی پیر کو شروع ہوگی۔ یہ میٹنگ 3 دن تک جاری رہے گی۔ بدھ کو، ریزرو بینک آف انڈیا پالیسی شرحوں میں اضافہ یا کمی کا اعلان کرے گا۔ ماہرین کا خیال ہے کہ اس میٹنگ میں گورنر شکتی کانت داس شرح سود میں 40 بیسس پوائنٹس کا اضافہ کریں گے۔
      EMI مہنگا ہو سکتا ہے۔
      آر بی آئی ایک بار پھر پالیسی سود کی شرحوں میں اضافہ کر سکتا ہے۔ اس کا اثر یہ ہوگا کہ قرض کی EMI ایک بار پھر مہنگی ہو سکتی ہے۔ اگر آپ پہلے ہی قرض لے چکے ہیں، تو آپ کی EMI بڑھ جائے گی اور آپ کو مزید سود ادا کرنا پڑے گا چاہے آپ مزید قرض لینے کا ارادہ کر رہے ہوں۔

      بینک بھی بڑھاتے ہیں لون کی قیمتیں
      آپ کو بتاتے چلیں کہ آر بی آئی کی جانب سے ریپو ریٹ بڑھانے کے بعد تمام نجی اور سرکاری سیکٹر کے بینک قرضوں کی شرح سود میں اضافہ کرتے ہیں، جس کا براہ راست اثر عام عوام پر پڑتا ہے۔

      گزشتہ میٹنگ میں بھی قتیتوں میں بھی کیا گیا تھا اضافہ
      مرکزی بینک نے گزشتہ ماہ بغیر کسی شیڈول کے منعقد ہونے والی مانیٹری پالیسی کمیٹی (MPC) کی میٹنگ میں ریپو ریٹ میں 0.40 فیصد اضافہ کیا تھا۔ 4 مئی کو مانیٹری پالیسی میٹنگ کے بعد، RBI نے اچانک ریپو ریٹ کو 40 بیسس پوائنٹس بڑھا کر 4.40 فیصد کر دیا اور کیش ریزرو ریشو کو 50 بیسس پوائنٹس بڑھا کر 4 فیصد سے 4.50 فیصد کر دیا۔

      پچھلی بار شرح بڑھنے کی وجہ سے ای ایم آئی مہنگی ہو گئی تھی۔
      آر بی آئی نے 4 مئی کو ریپو ریٹ میں 40 بیسس پوائنٹ اضافے کا اعلان کیا تھا، اس کے بعد سے پبلک پرائیویٹ بینکوں سے لے کر ہاؤسنگ فائنانس کمپنیوں تک، ہوم لون سے لے کر دیگر قسم کے قرض مہنگے ہوتے جا رہے ہیں۔ اس لیے جن صارفین نے پہلے ہی قرض لیا ہے ان کی EMI مہنگی ہو رہی ہے۔ اور EMI مہنگا ہونے کا عمل یہیں رکنے والا نہیں ہے۔ جون میں مانیٹری پالیسی کمیٹی  کی میٹنگ کے بعد قرض لینے والوں کو دوبارہ دھچکا لگ سکتا ہے۔

      خام تیل120 کے پار، چیک کریں اپنے شہر میں آج کی Petrol-Diesel کی نئی قیمتیں

      Haunted Places:یہ ہیں دنیا کی 10سب سے زیادہ بھوتیاجگہیں، دن میں بھی جانے سے کانپتے ہیں لوگ

      مہنگائی 8 سال کی بلند ترین سطح پر
      خوردہ مہنگائی اپریل میں لگاتار ساتویں مہینے بڑھ کر 7.79 فیصد کی آٹھ سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی۔ اس کی بڑی وجہ یوکرین روس جنگ کی وجہ سے ایندھن سمیت دیگر اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ ہے۔ ہول سیل قیمتوں پر مبنی افراط زر 13 ماہ سے دوہرے ہندسوں میں رہا اور اپریل میں 15.08 فیصد کی بلند ترین سطح کو چھو گیا۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: