ہوم » نیوز » معیشت

Q4 Results : تین گنا بڑھا Reliance Jio کا نیٹ پرافٹ ، 38.75 کروڑ کل سبسکرائبرس

31 مارچ 2020 تک ملک میں ریلائنس جیو کے کل 38.75 کروڑ سبسکرائبرس ہیں ۔ سال در سال کی بنیاد پر اس میں 26.3 فیصد کا اضافہ ہوا ہے ۔

  • Share this:
Q4 Results : تین گنا بڑھا Reliance Jio کا نیٹ پرافٹ ، 38.75 کروڑ کل سبسکرائبرس
گلوبل سرمایہ کاروں کو جیو Jio کیوں ہے پسند؟: اب سوال اٹھتا ہے کہ گلوبل سرمایہ کاروں کو جیو کیوں پسند ہے؟۔ اس پر نظر ڈالیں تو جیو پلیٹ فارم Jio Platform انڈیا کے Digital Potential کا سب سے اچھا Representative ہے۔ اس کو انڈیا مارکیٹ کی گہری سمجھ ہے۔ کوروناوائرس(Covid-19 pandemic) کے بعد ڈجیٹلائزیشن کے مواقع بڑھے ہیں۔ جدید ٹکنالوجی اور ٹولس کا استعمال بڑھا پے جس کا فائدہ اس کو ملنا طے ہے۔

ریلائنس انڈسٹریز لمیٹڈ کی ٹیلی کام یونٹ رئلائنس جیو  (Reliance Jio) نے چوتھی سہ ماہی میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے ۔ جنوری سے مارچ 2020 کے دوران کمپنی کا نیٹ پرافٹ (Jio Net Profit) تقریبا تین گنا بڑھ کر 2331 کروڑ روپے رہا ۔ گزشتہ سال اسی مدت میں ریلائنس جیو کا نیٹ پرافٹ 840 کروڑ روپے تھا ۔ فی الحال 38.75 کروڑ سبسکرائبرس کے ساتھ ریلائنس جیو دنیا کی سب سے بڑی ٹیلی کام کمپنی ہے ۔


ریلائنس نے کہا ہے کہ فیس بک کو 43574 کروڑ روپے میں 9.99 فیصدی شیئر بیچنے کے بعد اس کا ایک تہائی حصہ جیو کیلئے رکھا جائے گا ، جس کا استعمال مستقبل میں جیو آپریشنز کو بڑھانے کیلئے کیا جائے گا ۔ کمپنی نے کہا کہ کل انویسٹمنٹ میں سے 14976 کروڑ روپے جیو پلیٹ فارم کے پاس ہوگا تاکہ کمپنی کے فروغ پر اس کو خرچ کیا جاسکے ۔


جنوری ۔ مارچ سہ ماہی میں ریلائنس انڈسٹریز کا آپریشنز کے ذریعہ آنے والا اسٹینڈالون ریوینیو 14835 کروڑ روپے رہا ۔


اس دوران جیو کی ایبٹڈا 6201 کروڑ روپے اور EBITDA  مارجن 41.8 فیصدی رہی ۔

چوتھی سہ ماہی میں ریلائنس جیو کا نیٹ پرافٹ 2331 کروڑ روپے رہا ۔ گزشتہ سال اسی مدت کے مقابلہ یہ تین گنا زیادہ ہے ۔ جنوری ۔ مارچ 2019 میں یہ 840 کروڑ روپے رہا تھا ۔

31 مارچ 2020 تک ملک میں ریلائنس جیو کے کل 38.75 کروڑ سبسکرائبرس ہیں ۔ سال در سال کی بنیاد پر اس میں 26.3 فیصد کا اضافہ ہوا ہے ۔

آر آئی ایل نے رائٹس ایشو کو دی منظوری

ریلائنس انڈسٹریز کی بورڈ میٹنگ میں 53125 کروڑ روپے کے رائٹس ایشو کو منظوری مل گئی ہے ۔ اس کیلئے 1:15 کا ریشیو ( 15 شیئر رکھنے والے انویسٹروں کو ایک شیئر خریدنے کا موقع ہوگا ) طے کیا گیا ہے ۔ یہ رائٹس ایشو 14 فیصدی رعایت یعنی 1257 روپے کے دام پر آرہا ہے ۔ آپ کو بتادیں کہ ریلائنس انڈسٹریز نے 29 سالوں میں پہلی مرتبہ رائٹس ایشو کو منظوری دی ہے ۔ اس سے پہلے کمپنی نے 1991 میں کنورٹیبل ڈیبنچرس کے ذریعہ پیسہ اکٹھا کیا تھا اور بعد میں ان ڈیبنچرس کو 55 روپے کی شرح سے اکیویٹی شیئر میں بدل دیا تھا ۔

ڈسکلمیر : نیوز 18 اردو ، ریلائنس انڈسٹریز کی کمپنی نیٹ ورک 18 میڈیا اینڈ انویسمنٹ لمیٹڈ کا حصہ ہے ۔ نیٹ ورک 18 میڈیا اینڈ انویسٹمنٹ لمیٹڈ کی ملکیت ریلائنس انڈسٹریز کے پاس ہی ہے ۔


First published: Apr 30, 2020 08:44 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading