உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ریلائنس ریٹیل نے خریدی اربن لیڈر میں حصے داری، 182 کروڑ روپئے میں ہوا سودا

    ریلائنس ریٹیل نے خریدی اربن لیڈر میں حصے داری، 182 کروڑ روپئے میں ہوا سودا

    ہندستان میں آن لائن ریٹیل مارکیٹ میں اپنی گرفت اور مضبوط کرتے ہوئے ریلائنس انڈسٹریز نے اربن لیڈر میں 96 فیصدی حصے داری 182.12 کروڑ روپئے میں خرید لی ہے۔ کمپنی کا کہنا ہے کہ اس سودے سے آن لائن ریٹیل مارکیٹ میں تویسع کرنے کا موقع ملے گا۔

    • Share this:
      نئی دہلی۔ ہندستان میں آن لائن ریٹیل مارکیٹ میں اپنی گرفت اور مضبوط کرتے ہوئے ریلائنس انڈسٹریز  (Reliance Industries) نے اربن لیڈر (Urban Ladder) میں 96 فیصدی حصے داری 182.12 کروڑ روپئے میں خرید لی ہے۔ کمپنی کا کہنا ہے کہ اس سودے سے آن لائن ریٹیل مارکیٹ میں توسیع کرنے کا موقع ملے گا۔

      فلپ کارٹ (Flipkart) اور ایمیزون  (Amazon) کے دبدبے والے گروسریز (Groceries)، اپیرل (Apparel) اور الیکٹرانک کے آن لائن ڈیلیوری کے کاروبار میں ریلائنس انڈسٹریز نے بھی اس سودے کے ذریعہ اپنی توسیع کی طرف ایک بڑا قدم بڑھایا ہے۔ اس سودے کے بعد ریلائنس ریٹیل کے کنزیومر پروڈکٹ کے رینج میں مزید توسیع ہو گی۔ ریلائنس انڈسٹریز کی ذیلی کمپنی ریلائنس ریٹیل وینچرس (Reliance Retail Ventures Limited) کے پاس اربن لیڈر میں باقی کی حصہ داری خریدنے کا بھی متبادل موجود ہے۔ ریلائنس ریٹیل نے ایک بیان میں کہا ہے کہ دسمبر 2023 تک 75 کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری سے باقی بچی ہوئی حصےداری بھی خریدے گی۔ اس سے کمپنی کو اربن لیڈر کی 100 فیصد شیئر ہولڈنگ مل جائے گی۔

      ہندستان میں اربن لیڈر کی شروعات 17 فروری، 2012 میں ہوئی تھی۔ 8 سال پرانی اسٹارٹ اپ کمپنی ہوم فرنیچر اور ڈیکور پروڈکٹس کی فروخت ڈیجیٹل پلیٹ فارم پر کرتی ہے۔ اس کے علاوہ اربن لیڈر کے ہندستان کے کئی شہروں میں ریٹیل اسٹور بھی ہیں۔ سال 2018 میں آن لائن فرنیچر ریٹیلر اربن لیڈر کی ویلیو ایک اندازہ کے مطابق، 1200 کروڑ روپئے کی تھی جو سال 2019 میں گر کر 750 کروڑ روپئے ہو گئی۔ اسٹاک ایکسچینج فائلنگ کے مطابق 2019 میں اربن لیڈر کا ٹرن اوور 434 کروڑ روپئے تھا۔ اس سال کمپنی کو 49.41 کروڑ روپئے کا منافع ہوا۔

      (ڈسکلیمر: نیوز 18 اردو ڈاٹ کام ریلائنس انڈسٹریز کی کمپنی نیٹ ورک 18 میڈیا اینڈ انویسٹمنٹ لمیٹڈ کا حصہ ہے۔ نیٹ ورک 18 میڈیا اینڈ انویسٹمنٹ لمیٹڈ ریلائنس انڈسٹریز کی ملکیت ہے۔)


      Published by:Nadeem Ahmad
      First published: