ہوم » نیوز » معیشت

Company Result : ریلائنس کے نیٹ پرافٹ میں 34.8 فیصد کا اچھال ، سات روپے فی شیئر ڈیویڈنٹ اعلان

چوتھی سہ ماہی میں ریلائنس انڈسٹریز کا منافع دوگنے سے زیادہ ہوکر 13227 کروڑ روپے رہا ۔ سالانہ پرافٹ 53739 کروڑ پر پہنچا ۔

  • Share this:
Company Result : ریلائنس کے نیٹ پرافٹ میں 34.8 فیصد کا اچھال ، سات روپے فی شیئر ڈیویڈنٹ اعلان
Company Result : ریلائنس کے نیٹ پرافٹ میں 34.8 فیصد کا اچھال ، سات روپے فی شیئر ڈیویڈنٹ اعلان

نئی دہلی : ملک کی سب سے بڑی کمپنیوں میں شمار ریلائنس انڈسٹریز (Reliance Industries) کو مالی سال 2021 کی آخری سہ ماہی یعنی جنوری مارچ 2021 میں 13227 کروڑ روپے کا کنسولیڈیٹڈ پرافٹ ہوا ہے ۔ اس میں سالانہ بنیاد پر 108.4 فیصد اور سہ ماہی بنیاد پر ایک فیصد کا اضافہ ہوا ہے ۔


ریلائنس انڈسٹریز نے جمعہ کو اپنے مالی نتائج کا اعلان کرتے ہوئے یہ جانکاری دی ہے ۔ کمپنی نے فی شیئر سات روپے کے فائدہ کا اعلان کیا ہے ۔ غور طلب ہے کہ گزشتہ سال یعنی مارچ 2020 کی سہ ماہی میں کورونا وبا کو روکنے کیلئے لاک ڈاون کی وجہ سے 6358 کروڑ روپے کا ہی فائدہ ہوا تھا جبکہ دسمبر سہ ماہی میں منافع 13101 کروڑ روپے تھا ۔ مالی سال 2021 کی چوتھی سہ ماہی میں کمپنی کنسولیڈیٹڈ انکم 1,54,896 کروڑ روپے رہی ہے ۔ سالانہ بنیاد پر کمپنی کی انکم میں گیارہ فیصد کا اضافہ دیکھنے کو ملا ہے ۔ وہیں سہ ماہی بنیاد پر اس میں 24.9 فیصد کا اضافہ ہوا ہے ۔


کمپنی کے چیئرمین مکیش دھیرو بھائی امبانی نے اس موقع پر کہا کہ ہم نے او 2 سی اور ریٹیل سیگمنٹ میں مضبوط ریکوری اور ڈیجیٹل سروسز کے کاروبار میں مضوبط اضافہ درج کیا ہے ۔ چوتھی سہ ماہی میں کمپنی کے آئل ٹو کیمیکل کاروبار کی انکم میں سہ ماہی بنیاد پر 2.6 فیصد کا اضافہ دیکھنے کو ملا اور یہ 10108 کروڑ روپے پر رہا ہے ۔ اسی طرح اس سیگمنٹ کا EBITDA سہ ماہی بنیاد پر 16.9 فیصد کے اضافہ کے ساتھ 11407 کروڑ روپے پر رہا ہے ۔ لیکن اس سیگمنٹ کی EBITDA مارجن میں 30 بیسک پوائنٹس کی کمزوری دیکھنے کو ملی ہے اور یہ 11.3 فیصدی پر رہی ہے ۔


کمپنی نے بی ایس ای فائلنگ میں بتایا ہے کہ مالی سال 2021 میں کمپنی کے منافع میں 34.8  فیصد کا ضافہ ہوا ہے اور یہ 53.79 کروڑ روپے پر رہا ہے ۔ اسی طرح مالی سال 2021 میں کمپنی کی انکم 4,86,326 کروڑ روپے پر رہی ہے جو کہ مالی سال 2020 میں6,12,437 کروڑ روپے پر تھی ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 30, 2021 11:11 PM IST