உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    SBI Fraud Alert :بینک نے کیا ’اسکرین شیئرنگ‘ فراڈ سے الرٹ، جانیے کیا ہے محفوظ رہنے کا طریقہ

    SBI نے اپنے گاہکوں کو اسکرین شیئرنگ فراڈ کو لے کر کیا الرٹ۔

    SBI نے اپنے گاہکوں کو اسکرین شیئرنگ فراڈ کو لے کر کیا الرٹ۔

    SBI کارڈ نے صارفین کو مشورہ دیا ہے کہ وہ کبھی بھی کریڈٹ کارڈ کی تفصیلات جیسے کہ میعاد ختم ہونے کی تاریخ، CVV، OTP اور PIN کی تفصیلات شیئر نہ کریں، یہاں تک کہ SBI کارڈ کے نمائندوں کے ساتھ بھی۔

    • Share this:
      نئی دہلی: SBI Fraud Alert :اسٹیٹ بینک آف انڈیا(SBI) کے کریڈٹ کارڈ برانچ، ایس بی آئی کارڈ نے اپنے صارفین کو 'اسکرین شیئرنگ' دھوکہ دہی کے خلاف خبردار کیا ہے جس کا استعمال اسکیمرز کے ذریعے بینک کھاتوں سے پیسہ نکالنے کے لیے کیا جا رہا ہے۔ ملک کے سب سے بڑے سرکاری بینک کے کریڈٹ کارڈ ڈپارٹمنٹ نے 'اسکرین شیئرنگ' فراڈ کے بارے میں بیداری پیدا کرنے کے لیے اپنے صارفین کے ساتھ ایک ای میل شیئر کی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      QR کوڈ اسکین کرتے ہی آپ کا پیسہ کسی دوسرے کے اکاونٹ میں بھی جاسکتا ہے، فراڈ سے کیسے بچیں؟

      اسکرین شیئرنگ سے کررہے ہیں فراڈ
      ایک ای میل میں، ایس بی آئی کارڈ نے کہا کہ اسکرین شیئرنگ فراڈ آن لائن اسکیمرز کے لیے آپ کی ذاتی اور مالی معلومات تک رسائی حاصل کرنے کا ایک نیا طریقہ ہے۔ بینک نے اپنے صارفین کو بتایا کہ جعلساز آپ کو تھرڈ پارٹی ایپلی کیشنز ڈاؤن لوڈ کرنے اور آپ کے ڈیوائس پر مکمل کنٹرول حاصل کرنے پر راضی کرکے دھوکہ دہی کی فراق میں ہیں۔ ایس بی آئی کارڈ نے کئی ایسے طریقے بھی شیئر کیے جن کا استعمال کرتے ہوئے صارفین اپنے آپ کو اسکرین شیئرنگ فراڈ کا شکار ہونے سے بچا سکتے ہیں۔ لینڈر نے دھوکہ بازوں کا طریقہ کار بھی شیئر کیا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Bank holidays in April: اپریل میں ان دنوں بینک رہیں گےبند، جانیے مکمل فہرست

      ایسے ہوتا ہے فراڈ!
      ایس بی آئی کارڈ نے اپنی ای میل میں کہا کہ دھوکہ باز کمپنی کا نمائندہ ظاہر کرتا ہے اور آپ سے ریموٹ ایکسیس/اسکرین شیئرنگ ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کو کہتا ہے۔ قرض دینے والے نے اپنی بات چیت میں مزید کہا، ’جیسے ہی آپ ایپ ڈاؤن لوڈ کرتے ہیں اور اسے استعمال کرنا شروع کرتے ہیں، دھوکہ باز کو آپ کی معلومات تک مکمل کنٹرول اور رسائی مل جاتی ہے۔

      SBI نے ایسا کرنے کو کبھی نہیں کہا
      صارفین کو نوٹ کرنا چاہیے کہ SBI کارڈ ان سے کبھی بھی تھرڈ پارٹی ریموٹ رسائی یا اسکرین شیئرنگ ایپلی کیشنز کو ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے نہیں کہتا ہے۔ محکمہ نے اپنے صارفین پر زور دیا کہ وہ کسی بھی کال/SMS/ای میل کا جواب نہ دیں جس میں آپ کو آن لائن مدد کے لیے ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے یا دستاویزات کو اپ ڈیٹ کرنے کے لیے کہا جائے۔ SBI کارڈ نے صارفین کو مشورہ دیا ہے کہ وہ کبھی بھی کریڈٹ کارڈ کی تفصیلات جیسے کہ میعاد ختم ہونے کی تاریخ، CVV، OTP اور PIN کی تفصیلات شیئر نہ کریں، یہاں تک کہ SBI کارڈ کے نمائندوں کے ساتھ بھی۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: