உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Sukanya Samriddhi Yojana: میچوریٹی سے پہلے بھی بند کرایا جاسکتا ہے اکاؤنٹ لیکن یہ شرط کرنا ہوگی پوری!

    Sukanya Samriddhi Yojana: میچوریٹی سے پہلے بھی بند کرایا جاسکتا ہے اکاؤنٹ لیکن یہ شرط کرنا ہوگی پوری!

    Sukanya Samriddhi Yojana: میچوریٹی سے پہلے بھی بند کرایا جاسکتا ہے اکاؤنٹ لیکن یہ شرط کرنا ہوگی پوری!

    Sukanya Samriddhi Yojana: سوکنیا سمردھی اسکیم کا فائدہ یہ ہے کہ اس میں آپ بہت کم پیسوں سے بھی سرمایہ کاری کرسکتے ہیں۔ سالانکہ کم از کم 250 روپے جمع کراکر بھی آپ اکاونٹ کھلواسکتے ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Madhya Pradesh | Uttar Pradesh | Telangana | Maharashtra
    • Share this:
      Sukanya Samriddhi Yojana: ملک میں کئی چھوٹی بچت اسکیم ہیں۔ ان اسکیم میں اچھا ریٹرن ملتا ہے اور سرکاری گیارنٹی ہونے کی وجہ سے پیسہ ڈوبنے کا خطرہ بھی نہیں ہوتا ہے۔ چھوٹی بچت اسکیم ان لوگوں کے لئے بہت فائدہ مند ہیں جو تھوڑا تھوڑا سرمایہ کاری کر کے مستقبل کے لئے پیسہ جمع کرنا چاہتے ہیں۔ بیٹی کی شادی یا اعلیٰ تعلیم کے لئے کم پیسے لگا کر اچھا خاصہ فنڈ بنانے کے لئے سوکنیا سمردھی یوجنا (Sukanya Samriddhi Yojana – SSY)میں بھی بہت سے لوگ سرمایہ کاری کرتے ہیں۔

      دیگر چھوٹی سیونگ اسکیم اور بینک ایف ڈی کے مقابلے بہتر ریٹرن دینے کی وجہ سے یہ اسکیم کافی مقبول ہے۔ سوکنیا سمردھی اسکیم میں فی الحال 7.6 فیصدی سالانہ حساب سے انٹرسٹ مل رہا ہے۔ سوکنیا سمردھی اسکیم میں ابھی تک دو بیٹیوں کے اکاونٹ پر ہی انکم ٹیکس قوانین کی دفعہ 80C کے تحت ٹیکس چھوٹ کا فائدہ ملتا تھا۔ تیسری بیٹی ہونے کی صورت میں ٹیکس چھوٹ نہیں ملتی تھی، لیکن اب قوانین میں تبدیلی کر کے تیسری بیٹی کے اکاونٹ پر بھی ٹیکس چھوٹ کا اعلان حکومت نے کیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Credit Card کی کیسے ہوئی شروعات، اس آئیڈیا پر آخر کیوں ہنستے تھے لوگ!

      یہ بھی پڑھیں:
      EPFO کی اس اسکیم کے تحت ہر اکاؤنٹ ہولڈر کو ملتا ہے 7لاکھ روپے کا مفت بیمہ،جانیے تفصیل

      250 روپے سے کھلوائیں کھاتہ
      سوکنیا سمردھی اسکیم کا فائدہ یہ ہے کہ اس میں آپ بہت کم پیسوں سے بھی سرمایہ کاری کرسکتے ہیں۔ سالانکہ کم از کم 250 روپے جمع کراکر بھی آپ اکاونٹ کھلواسکتے ہیں۔ اس میں سال میں 1.5 لاکھ روپے تک جمع کیے جاسکتے ہیں۔ اگر سال میں کم از کم رقم جمع نہیں کرائی جاتی ہے تو اکاونٹ ڈیفالٹ ہوجاتا ہے۔ اکاونٹ دوبارہ ایکٹیو نہیں ہونے پر بھی اکاونٹ میں جمع رقم پر میچیوریٹی تک لاگو شرح سے سود ملتا رہتا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: