உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Air India کو ٹاٹا کو سونپنے میں ہوگی دیر، جنوری تک مکمل ہوگی یہ ڈیل

    جنوری تک پوری ہوجائے گی ایئر انڈیا کو لے کر ٹاٹا گروپ کے ساتھ ڈیل۔

    جنوری تک پوری ہوجائے گی ایئر انڈیا کو لے کر ٹاٹا گروپ کے ساتھ ڈیل۔

    اس پورے معاملے سے واقف ایک عہدیدار نے کہا کہ ابھی تک کچھ منظوریاں نہیں ملی ہیں لیکن جلد ہی اسے پورا کرلیا جائے گا۔ عہدیدار نے نام سامنے نہ آنے کی شرط پر کہا، ’’یہ کارروائی جنوری تک پوری ہوجائے گی۔‘‘ حالانکہ، انہوں نے اس کے لئے کوئی تاریخ نہیں بتائی ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: مانا جارہا ہے کہ ایئر انڈیا کو ٹاٹا گروپ کو سونپنے میں ابھی ایک مہینے سے زیادہ کا وقت لگ سکتا ہے۔ ریگولیٹری اپروول میں دیر ہونے کی وجہ سے ڈیل دسمبر کے آخر تک پوری ہوجانی چاہیے تھی، وہ اب جنوری میں پوری ہوگی۔ مانا جارہا تھاکہ اس مہینے کے آخری تک ٹرانزکشن پورا ہوجائے گا۔ 20 دسمبر کو CCI یعنی کامپٹیشن کمیشن آف انڈیا سے بھی اس ڈیل کو منظوری مل گئی تھی۔

      حکومت نے پچھلے اکتوبر میں ٹاٹا سنس کی ایک کمپنی کی جانب سے لگائی گئی بولی کو تسلیم کرکے ایئر انڈیا کے حصول کو منظوری دے دی تھی۔ ایئر انڈیا کے ساتھ اُس کی سستی ایئر سروس ایئر انڈیا ایکسپریس (Air India Express) کی بھی سو فیصد حصہ داری کو بیچا جائے گا۔ اس کے ساتھ ہی اُس کی گراونڈ ہینڈلنگ کمپنی اے آئی ایس اے ٹی ایس (Air India SATS Airport Services) کی 50 فیصدی حصہ داری ٹاٹا گروپ کو دی جائے گی۔

      تاریخ کو لے کر فی الحال نہیں ہے جانکاری
      اُس وقت حکومت کی جانب سے کہا گیا تھا کہ اس حصولیابی سے جڑی تمام رسمی کارروائیوں کو دسمبر کے آخر تک پورا کرلیا جائے گا۔ رولس کے مابق، سپردگی سے متعلق کارروائی آٹھ ہفتوں میں پوری ہوجانی چاہیے لیکن دونوں فریق کے راضی ہونے پر اسے آگے بڑھایا جاسکتا ہے۔ اس معاملے میں بھی تاریخ آگے بڑھانے پر بات چل رہی ہے۔

      جنوری تک پوری ہوجائے گی کارروائی
      اس پورے معاملے سے واقف ایک عہدیدار نے کہا کہ ابھی تک کچھ منظوریاں نہیں ملی ہیں لیکن جلد ہی اسے پورا کرلیا جائے گا۔ عہدیدار نے نام سامنے نہ آنے کی شرط پر کہا، ’’یہ کارروائی جنوری تک پوری ہوجائے گی۔‘‘ حالانکہ، انہوں نے اس کے لئے کوئی تاریخ نہیں بتائی ہے۔

      18 ہزار کروڑ میں ہوئی یہ ڈیل
      حکومت نے 25 اکتوبر کو 18،000 کروڑ روپے میں ایئر انڈیا کی فروختگی کے لئے ٹاٹا سنس کے ساتھ ڈیل کی تھی۔ ٹاٹا سودے کے عوض میں حکومت کو 2،700 کروڑ روپے کیش دے گی اور ایئرلائن پر بقایہ 15،300 کروڑ روپے کے قرض کی دین داری لے گی۔

      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: