உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Gold: سونے سے ملازمین کی تنخواہوں کی ادائیگی! جانیے دنیا کی کونسی ہے وہ کمپنی؟

    عالمی وبا کورونا وائرس (Covid-19) کے آغاز کے بعد سے لیبر مارکیٹ میں سب سے بڑی توسیع ہوئی ہے

    عالمی وبا کورونا وائرس (Covid-19) کے آغاز کے بعد سے لیبر مارکیٹ میں سب سے بڑی توسیع ہوئی ہے

    کیمرون پیری نے مزید کہا کہ اس طرح کے اوقات میں جب روایتی پیسہ مسلسل اپنی قوت خرید کھو رہا ہے، سونا لوگوں کو افراط زر سے آگے رہنے کا بہترین موقع فراہم کرتا ہے۔ پیری نے کہا کہ پاؤنڈ کی خرچ کرنے کی طاقت تیز رفتار سے کم ہو رہی ہے، جبکہ ہر سال سونے کی قیمت میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔

    • Share this:
      لندن کے مقامی کاروباری اخبار سٹی اے ایم (City A.M) کی ایک رپورٹ کے مطابق لندن میں مقیم سی ای او اب اپنے ملازمین کو مہنگائی سے بچنے اور ان کی بہتر مدد کے لیے سونے کی شکل میں ادائیگی کرے گا۔ کیمرون پیری (Cameron Parry) مالیاتی خدمات سے متعلق کمپنی ٹالی منی TallyMoney کے سی ای او ہیں۔ انھوں نے اخبار کو بتایا کہ سونا ہر وقت کی آزمائشی مہنگائی سے بچنے کا واحد ذریعہ ہے۔

      کیمرون پیری نے مزید کہا کہ اس طرح کے اوقات میں جب روایتی پیسہ مسلسل اپنی قوت خرید کھو رہا ہے، سونا لوگوں کو افراط زر سے آگے رہنے کا بہترین موقع فراہم کرتا ہے۔ پیری نے کہا کہ پاؤنڈ کی خرچ کرنے کی طاقت تیز رفتار سے کم ہو رہی ہے، جبکہ ہر سال سونے کی قیمت میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔

      انھوں نے سٹی اے ایم کو بتایا کہ زندگی گزارنے کی لاگت بد سے بدتر ہوتی جارہی ہے، جب ہر گزرتے دن کے ساتھ اس کی قدر میں مزید کمی ہوتی جارہی ہے تو پاؤنڈز میں تنخواہوں میں اضافے کی پیشکش جاری رکھنا کوئی معنی نہیں رکھتا۔ یہ ایک کھلے زخم پر بینڈ ایڈ لگانے کے مترادف ہے۔

      ابھی کے لیے Parry's TallyMoney، جو کہ 20 سے زائد افراد کو ملازمت دیتا ہے، صرف سینئر عملے کے ارکان کو سونے میں ادائیگی کر رہا ہے۔ لیکن کمپنی نئی تنخواہ کی اسکیم کو پورے بورڈ میں توسیع دینے کا ارادہ رکھتی ہے۔ اخبار نے رپورٹ کیا کہ پیری خود اپنی تنخواہ سونے میں لے رہا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      شیوسینا کی ریلی میں Uddhav Thackerayکی للکار،کہا-بی جے پی داود کو بھی لڑواسکتی ہے الیکشن

      پیری نے کہا کہ سونا اس وقت بہت آگے بڑھ جاتا ہے جب اس کا تبادلہ ان اشیا اور خدمات سے ہوتا ہے جن کی قیمت پاؤنڈ اور پینس میں ہوتی ہے۔ تاہم اس کی فرم کے ملازمین اب بھی اپنی تنخواہیں پاؤنڈ میں وصول کرتے رہنے کا انتخاب کر سکتے ہیں۔

      برطانیہ میں زندگی گزارنے کے اخراجات بڑھ رہے ہیں اور پاؤنڈ کی قدر دو سال کی کم ترین سطح پر آ گئی ہے۔ بینک آف انگلینڈ نے خبردار کیا ہے کہ 2022 معیشت کے لیے کساد بازاری کا سال ہو گا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: