உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یکم اپریل سے یہ چیزیں ہوں گی مہنگی:  TV۔ AC، فریج، LED کے ساتھ Mobile چلانا بھی مہنگا، جانیں کتنا بڑھے گا بوجھ؟

     دراصل، وزیر خزانہ نرملا سیتارمن (FM Nirmala Sitharaman)  نے اس سال فروری میں پیش کیے گئے بجٹ میں کئی مصنوعات پر درآمدی ڈیوٹی بڑھا دی تھی، جب کہ کچھ پر اس میں کٹوتی کی گئی تھی۔ نئی فیس کا اطلاق یکم اپریل سے ہوگا۔

    دراصل، وزیر خزانہ نرملا سیتارمن (FM Nirmala Sitharaman) نے اس سال فروری میں پیش کیے گئے بجٹ میں کئی مصنوعات پر درآمدی ڈیوٹی بڑھا دی تھی، جب کہ کچھ پر اس میں کٹوتی کی گئی تھی۔ نئی فیس کا اطلاق یکم اپریل سے ہوگا۔

    دراصل، وزیر خزانہ نرملا سیتارمن (FM Nirmala Sitharaman) نے اس سال فروری میں پیش کیے گئے بجٹ میں کئی مصنوعات پر درآمدی ڈیوٹی بڑھا دی تھی، جب کہ کچھ پر اس میں کٹوتی کی گئی تھی۔ نئی فیس کا اطلاق یکم اپریل سے ہوگا۔

    • Share this:
      نئی دہلی. بجٹ 2022 میں کی گئی کچھ تبدیلیوں کی وجہ سے یکم اپریل سے صارفین پر مہنگائی کا بوجھ مزید بڑھنے جا رہا ہے۔ کل سے ٹی وی، اے سی فریج  TV, AC  کے ساتھ موبائل mobile چلانا بھی مہنگا ہو جائے گا۔ دراصل، وزیر خزانہ نرملا سیتارمن (FM Nirmala Sitharaman)  نے اس سال فروری میں پیش کیے گئے بجٹ میں کئی مصنوعات پر درآمدی ڈیوٹی بڑھا دی تھی، جب کہ کچھ پر اس میں کٹوتی کی گئی تھی۔ نئی فیس کا اطلاق یکم اپریل سے ہوگا۔ اس لیے جن خام مال پر ایکسائز ڈیوٹی میں اضافہ کیا گیا ہے، ان سے متعلقہ مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا خیال ہے۔ ایندھن کی قیمتوں میں لگی آگ، 10دن میں6.40 مہنگا ہوا Petrol۔Diesel، جانئے آپ کے شہر کی نئی قیمتیں

      اس لیے ٹی وی، اے سی،  ہو جائیں گے فریج مہنگے

      حکومت نے یکم اپریل سے ایلومینیم ایسک اور کنسنٹریٹ پر 30 فیصد درآمدی ڈیوٹی عائد کر دی ہے۔ یہ ٹی وی، اے سی اور فریج کے لیے ہارڈ ویئر بنانے کے لیے استعمال ہوتا ہے۔ کچے مال کی مہنگی فراہمی کے باعث کمپنیوں کی پیداواری لاگت بڑھے گی اور اس کا براہ راست بوجھ صارفین پر پڑے گا۔ اس کے علاوہ کمپریسر میں استعمال ہونے والے پرزوں پر بھی درآمدی ڈیوٹی بڑھا دی گئی ہے جس کی وجہ سے ریفریجریٹر  کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہو جائے گا۔

      ایل ای ڈی LED   بلب کی قیمت بھی بڑھ جائے گی۔
      حکومت نے ایل ای ڈی LED  بلب بنانے میں استعمال ہونے والے مواد پر بنیادی کسٹم ڈیوٹی کے ساتھ 6 فیصد ری ایمبرسمنٹ ڈیوٹی لگانے کی بات کہی ہے۔ یکم اپریل سے اس کے نئے اصول کے نفاذ کے بعد ایل ای ڈی بلب بھی مہنگے ہو جائیں گے۔

      حکومت نے چاندی پر درآمدی ڈیوٹی میں بھی تبدیلی کی ہے جس کی وجہ سے چاندی کے برتن اور اس سے بنی اشیاء بھی یکم اپریل کے بعد مہنگی ہو جائیں گی۔ اس کے علاوہ اسٹیل کا سامان بھی مہنگائی کی زد میں آئے گا اور کل سے اسٹیل کے برتن مہنگے ہو جائیں گے۔

      یہ بھی پڑھیں: امریکہ نے ہندستان کا سفر کرنے والے اپنے شہریوں کیلئے جاری کیTravel Advisory، جموں۔کشمیر نہیں جانے کی صلاح

      موبائل سے جیب پر بوجھ بڑھے گا۔
      حکومت نے موبائل فون بنانے کے لیے استعمال ہونے والے پرنٹ شدہ سرکٹ بورڈز پر بھی کسٹم ڈیوٹی عائد کر دی ہے۔ یعنی اب باہر سے ان مصنوعات کی درآمد مہنگی ہو جائے گی جس سے کمپنیوں کی پیداواری لاگت متاثر ہو گی۔ امریکی فرم گرانٹ تھرونٹن  Grant Thronton  کے مطابق حکومت کے اس فیصلے کا  سیدھا اثر صارفین پر پڑے گا اور موبائل کی قیمتیں بڑھ سکتی ہیں۔
      Pakistan Blasphemy: توہین رسالت کے الزام میں مدرسے میں خواتین نے ساتھی ٹیچر کا کاٹ دیا گلا، جانئے پورا معاملہ

      ٹیلی کام کمپنیاں بھی دیں گی جھٹکا ۔
      اب تک وہ ٹیلی کام کمپنیاں جو اپنے صارفین کو مفت لامحدود ڈیٹا اور کالنگ کی سہولت دے رہی تھیں۔ وہ یہ خدمات 31 مارچ کو ختم کر دیں گے۔ ایسے میں 4G مارکیٹ میں بڑھتی ہوئی مسابقت کے درمیان ایسے صارفین کو اب ٹیرف پلان کا انتخاب کرنا ہوگا اور ان پر موبائل چلانے کی قیمت بھی غیر ارادی طور پر بڑھ جائے گی۔

      وائرلیس ایئربڈز اور ہیڈ فون مہنگے ہوں گے۔
      بجٹ میں حکومت نے وائرلیس ایئربڈز میں استعمال ہونے والی کچھ ڈیوائسز پر درآمدی ڈیوٹی بڑھا دی ہے جس سے ان کی پیداوار مہنگی ہو جائے گی۔ خیال کیا جا رہا ہے کہ اپریل سے وائرلیس ایئربڈز بنانے والی کمپنیاں بھی اپنی مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کر سکتی ہیں۔ اس کے علاوہ پریمیم ہیڈ فونز کی درآمد پر بھی ڈیوٹی بڑھے گی جس کی وجہ سے یکم اپریل کے بعد ہیڈ فون خریدنا صارفین کو مہنگا پڑے گا۔

      یہ مصنوعات سستی ہوسکتی ہیں۔
      بجٹ میں اسمارٹ فونز سے متعلق کئی مصنوعات پر درآمدی ڈیوٹی بھی کم کردی گئی ہے۔ اس میں موبائل چارجر، ٹرانسفارمر، کیمرہ لینس ماڈیول جیسی اشیاء شامل ہیں۔ نئی ڈیوٹی کے نفاذ کے بعد متعلقہ مصنوعات کی قیمتوں میں کمی آسکتی ہے۔ حکومت نے سمارٹ واچز اور فٹنس بینڈ کے کچھ حصوں پر ایکسائز ڈیوٹی بھی کم کر دی ہے جس کی وجہ سے اپریل سے یہ مصنوعات کچھ سستی ہو سکتی ہیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: