உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Twitter کافیکٹ چیک پروگرام اب خود پلیٹ فارم پر موجودکچھ صارفین کوکرےگاآگاہ! آخرکیسے

    علامتی تصویر

    علامتی تصویر

    برڈ واچ کو عام ٹویٹر صارفین کے لیے پوشیدہ کے طور پر بیان کیا گیا ہے اور اعداد و شمار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ یوکرین پر روس کے حملے سے پہلے رضاکاروں کے ذریعے روزانہ 50 سے کم ٹویٹس کو جھنڈا لگایا جاتا تھا اور منسلک کیا جاتا تھا۔

    • Share this:
      مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹویٹر (Twitter) نے مبینہ طور پر اپنی برڈ واچ اسکیم میں توسیع کا اعلان کیا ہے، جس میں رضاکار فیکٹ چیک کرنے والے ممکنہ طور پر گمراہ کن ٹویٹس کو دیکھتے ہیں۔ کمپنی نے کہا کہ ابھی تک امریکہ میں مقیم صارفین کے ایک چھوٹے سے بے ترتیب گروپ کو حقائق کی جانچ پڑتال کے نوٹس متنازعہ یادداشتوں کے ساتھ ملیں گے۔

      تاہم مکمل رول آؤٹ کے بجائے ٹوئٹر نے کہا کہ یہ پائلٹ کی مرئیت میں مزید توسیع ہوسکتی ہے۔ اس کا ارادہ ہے کہ صارفین کی زیادہ تعداد سے زیادہ فیڈ بیک حاصل کرنے میں مدد کرنے کی بجائے کسی بھی چیز سے زیادہ وسیع پیمانے پر۔ برڈ واچ ان بلا معاوضہ فیکٹ چیک کرنے والوں کو سیاق و سباق کے نوٹس منسلک کرنے کی اجازت دے کر کام کرتی ہے جو کہ اب تک صرف ایک علیحدہ برڈ واچ سائٹ پر ہی نظر آتے ہیں۔

      خبردار! آپ کوآن لائن چاٹنگ کےدوران Thumbs-up Emoji کااستعمال پڑسکتا ہے بھاری! استعمال کرناکیوں کرےبند؟



      تاہم یہ نوٹ اس توسیعی ٹرائل کے دوران عام صارفین تک نہیں پہنچیں گے جب تک کہ کافی دوسرے برڈ واچ رضاکار ان پر مثبت ووٹ نہ دیں۔ یہ ووٹ وسیع تعداد میں ’مختلف نقطہ نظر‘ کے حامل صارفین سے آنے کی ضرورت ہوگی، جس کی وضاحت ٹویٹر نے اپنے ساتھی رضاکاروں کی مخالفت میں ووٹ دینے کے طور پر کی ہے۔ یہ اقدام واشنگٹن پوسٹ کی جانب سے ٹویٹر پر تنقید کرنے والی ایک رپورٹ شائع کرنے کے صرف 48 گھنٹے بعد سامنے آیا ہے۔ برڈ واچ کو اس کے عالمی صارف کی بنیاد پر متعارف کروائیں۔


      برڈ واچ کو عام ٹویٹر صارفین کے لیے پوشیدہ کے طور پر بیان کیا گیا ہے اور اعداد و شمار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ یوکرین پر روس کے حملے سے پہلے رضاکاروں کے ذریعے روزانہ 50 سے کم ٹویٹس کو جھنڈا لگایا جاتا تھا اور منسلک کیا جاتا تھا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: