உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    America: روس کے خلاف امریکہ کی بڑی کاروائی! 1 بلین ڈالر سے زائد کمپنی پر پابندی

    امریکی صدر جو بائیڈن (فائل فوٹو)

    امریکی صدر جو بائیڈن (فائل فوٹو)

    پوٹن کے 24 فروری کو یوکرین پر حملے کے بعد ریاستہائے متحدہ امریکہ اور یورپی ممالک نے روسی کمپنیوں اور اشیا کے خلاف کریک ڈاؤن تیز کر دیا ہے۔ اس عمل سے مغربی پابندیوں مںی اضافہ ہورہا ہے۔

    • Share this:
      امریکہ نے جمعرات کو ایک امریکی کمپنی کو بلاک کر دیا جس کی مالیت 1 بلین ڈالر سے زیادہ ہے جس کا تعلق روس کے امیر سلیمان کریموف سے ہے۔ جس کے بارے میں کہا گیا ہے کہ صدر ولادیمیر پوتن کے اتحادی نے اسے فنڈز کی فراہمی اور سرمایہ کاری کے لیے استعمال کیا۔

      محکمہ خزانہ نے کہا کہ روسی سیاست میں سرگرم ایک ارب پتی کریموف نے خفیہ طور پر ڈیلاویئر میں قائم ہیریٹیج ٹرسٹ کا انتظام کیا جس نے اپنا پیسہ کئی بڑی عوامی کمپنیوں میں لگایا۔ محکمہ خزانہ کے حکام نے بتایا کہ ہیریٹیج ٹرسٹ 2017 میں قائم کیا گیا تھا، شیل کمپنیوں اور یورپ میں قائم ریڈار فاؤنڈیشنز کے ذریعے امریکہ میں پیسہ لایا گیا۔

      ٹریژری سکریٹری جینٹ ییلن نے اس عزم کا اظہار کیا کہ امریکہ کارروائی کرتا رہے گا یہاں تک کہ جب روسی اشرافیہ پراکسیوں اور پیچیدہ قانونی انتظامات کے پیچھے چھپے ہوئے ہیں۔ انہوں نے ایک بیان میں کہا کہ امریکہ یوکرین کے خلاف روس کی جنگ سے فنڈز اور فائدہ اٹھانے والوں پر لگائی گئی کثیر الجہتی مربوط پابندیوں کو فعال طور پر نافذ کرے گا۔

      یہ کارروائی فیجی کی جانب سے کیریموف سے منسلک 300 ملین ڈالر کی سپر یاٹ امریکہ کے حوالے کرنے کے چند ہفتوں بعد ہوئی ہے، جو مبینہ طور پر منی لانڈرنگ اور روسی حکومت میں اس کے کردار کی وجہ سے 2018 سے امریکی پابندیوں کی زد میں ہے۔

      پوٹن کے 24 فروری کو یوکرین پر حملے کے بعد ریاستہائے متحدہ امریکہ اور یورپی ممالک نے روسی کمپنیوں اور اشیا کے خلاف کریک ڈاؤن تیز کر دیا ہے۔ اس عمل سے مغربی پابندیوں مںی اضافہ ہورہا ہے۔

      کریموف اصل میں قفقاز میں روسی جمہوریہ داغستان سے تھے، سوویت یونین کے زوال کے بعد دنیا کے امیر ترین افراد میں سے ایک بن گئے۔

      مزید پڑھیں: Agneepath Recruitment: انڈین آرمی میں اگنی پتھ اسکیم کے تحت بھرتی 2022، جانیے تفصیلات

      اس مہم کے ذریعہ اب تک 1.35 کروڑ روپے اکٹھے کیے گئے ہیں، جو ایک ماہ کے لیے مقرر کیا گیا ہدف صرف 24 گھنٹوں میں پورا کر لیا گیا ہے۔

      مزید پڑھیں: Agnipath Scheme: مرکز اور ریاستی سرکاروں کے 'اگنی ویروں' کیلئے اہم اعلانات

      اس کا خاندان سونے کے بڑے پروڈیوسر پولیئس کو کنٹرول کرتا ہے۔ سات صنعتی جمہوریتوں کے گروپ نے اتوار کو روس سے سونے کی برآمدات پر پابندی عائد کرنے پر اتفاق کیا۔

      بلومبرگ بلینیئرز انڈیکس نے انہیں 2021 کے آخر میں 11.8 بلین ڈالر کی مالیت کے ساتھ دنیا کے 190ویں امیر ترین شخص کے طور پر درجہ دیا تھا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: