اپنا ضلع منتخب کریں۔

    سستے ہوسکتے ہیں پٹرول اور ڈیزل! سرکار نے امپورٹ پر ونڈ فال ٹیکس کم کرکے دیا اشارہ

    سستے ہوسکتے ہیں پٹرول اور ڈیزل! سرکار نے امپورٹ پر ونڈ فال ٹیکس کم کرکے دیا اشارہ

    سستے ہوسکتے ہیں پٹرول اور ڈیزل! سرکار نے امپورٹ پر ونڈ فال ٹیکس کم کرکے دیا اشارہ

    Windfall Tax: مرکزی حکومت نے یکم دسمبر سے گھریلو طور پر پیدا ہونے والے خام تیل اور ڈیزل کی برآمدات پر ونڈ فال ٹیکس کو کم کرنے کا اعلان کیا ہے۔ یہ فائدہ صرف ملک میں نکالے گئے تیل اور ڈیزل کے لئے ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | New Delhi
    • Share this:
      نئی دہلی : مرکزی حکومت نے یکم دسمبر سے گھریلو طور پر پیدا ہونے والے خام تیل اور ڈیزل کی برآمدات پر ونڈ فال ٹیکس کو کم کرنے کا اعلان کیا ہے۔ یہ فائدہ صرف ملک میں نکالے گئے تیل اور ڈیزل کے لئے ہے۔ ماہرین کا خیال ہے کہ حکومت کے اس قدم سے پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں کمی کی امید بڑھ گئی ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ عالمی منڈی میں خام تیل سستا ہوا ہے، اس لئے حکومت نے برآمدات پر ٹیکس کم کردیا ہے۔ اب گھریلو مارکیٹ میں تیل کی سپلائی کافی اچھی ہو گئی ہے، جس کی وجہ سے کمپنیوں پر دباؤ کم ہو گیا ہے اور وہ قیمتیں کم کر سکتی ہیں ۔

      حکومت کے اس قدم سے ملکی پیداوار کی حوصلہ افزائی ہوگی، کیونکہ ٹیکس صرف اسی تیل پر گھٹایا ہے، جس کا پروڈکشن ملک میں ہو رہا ہے ۔ نئے فیصلہ کے بعد ملک میں نکالے گئے تیل پر ونڈ فال ٹیکس کم ہوکر 4900 روپے فی ٹن ہو گیا ہے۔ وہیں ڈیزل کی برآمدات پر یہ 6.5 روپے فی لیٹر پر آ گیا ہے۔ سرکاری حکم کے مطابق ونڈ فال ٹیکس میں یہ تبدیلی کل یعنی 2 دسمبر سے لاگو ہوگی ۔

      یہ بھی پڑھئے: ایل جی منوج سنہا نے کیا امر جوان شوریہ استھل کا افتتاح اور شہیدوں کو پیش کیا خراج عقیدت


      یہ بھی پڑھئے : مشہورسنگر جبین نوٹیال حادثے کا شکار، سر میں چوٹ،کوہنی و پسلیوں میں فریکچر، اسپتال میں داخل


      ونڈ فال ٹیکس ایسی کمپنیوں یا انڈسٹری پر لگایا جاتا ہے ، جنہیں کسی خاص طرح کے حالات میں فورا کافی فائدہ ہوتا ہے ۔ ہندوستان کی تیل کمپنیاں اس کی اچھی مثال ہیں ۔ یوکرین پر روس کے حملے کے بعد بین الاقوامی سطح پر خام تیل کی قیمتوں میں اچھال آیا ۔ اس سے تیل کمپنیوں کو کافی فائدہ ملا تھا ۔

      روس ۔ یوکرین جنگ کی وجہ سے تیل کمپنیاں بھاری منافع حاصل کررہی تھیں، اس لئے ان پر ونڈ فال ٹیکس لگایا گیا تھا ۔ ہندوستان ہی نہیں اٹلی اور یوکے نے بھی اپنی اینرجی کمپنیوں پر یہ ٹیکس لگایا تھا ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: