ڈائریکٹر کا انکشاف: پھوٹ۔پھوٹ کر رو پڑی تھیں پرینکا چوپڑا، بولیں۔ مجھے معاف کردو

بالی ووڈ کی دیسی گرل سے انٹرنیشنل اسٹار بن چکیں پرینکا چوپڑا ان دنوں زبردست سرخیوں میں بنی ہوئی ہیں۔ وہ اپنی آنے والی فلم دا اسکائی از پنک کے پروموشن میں مصروف ہیں۔ یہ فلم ٹریلر ریلیز کے بعد سے ہی چرچا میں ہے۔

Sep 18, 2019 11:35 AM IST | Updated on: Sep 18, 2019 11:35 AM IST
ڈائریکٹر کا انکشاف: پھوٹ۔پھوٹ کر رو پڑی تھیں پرینکا چوپڑا، بولیں۔ مجھے معاف کردو

پھوٹ پھوٹ کر روئیں پرینکا چوپڑا

بالی ووڈ کی دیسی گرل سے انٹرنیشنل اسٹار بن چکیں پرینکا چوپڑا ان دنوں زبردست سرخیوں میں بنی ہوئی ہیں۔ وہ اپنی آنے والی فلم دا اسکائی از پنک کے پروموشن میں مصروف ہیں۔ یہ فلم ٹریلر ریلیز کے  بعد سے ہی چرچا میں ہے۔ وہیں اب دا اسکائی از پنک کو لیکر ایک ایسی خبر آرہی ہے جس کے بارے میں جاننے کے بعد آپ بھی حیران رہ جائیں گے۔ اس فلم کے ایک سین کے دوران رونے کی ایکٹنگ کرتے۔کرتے پرینکا چوپڑا واقعی میں پھوٹ۔پھوٹ کر رو پڑی تھیں۔  سین ختم ہوتے ہی ڈائریکٹر نے جب کٹ کہا تب بھی پرینکا اپنے آنسو روک نہیں پائیں، وہ بری طرح روتی رہیں۔

روتے۔ روتے کہی ایسی بات

یہ پورا واقعہ دا اسکائی از پنک کی ڈائریکٹر سونالی بوس نے بتایا ہے۔ انہوں نے کہا دا سکائی از پنک کے ایک سین کے دوران پرینکا بہت زیادہ جذباتی ہو گئی تھیں۔ وہ پھوٹ۔پھوٹ کر رونے لگیں۔ شوٹ کے بعد بھی ان کے آنسو تھم نہیں رہے تھے۔ سونالی نے بتایا کہ پرینکا کہے جا رہی تھیں کہ مجھے معاف کردو۔ مجھے معاف کردو۔۔۔ انہوں نے کہا اب مجھے سمجھ میں آیا کہ ایک بچے کو کھونے کا درد کیا ہوتا ہے۔ مجھے ایشلو کیلئے بہت دکھ ہے اور میں پرینکا کو سنبھالنے کی کوشش کر رہی تھی'۔

Loading...

سولہ سال کے بیٹے کی موت

بتا دیں کہ ایشلو سونالی کا بیٹا ایشان تھا۔ ایشان کی 16 سال کی عمر میں موت ہوگئی تھی۔ ایشان کی موت الیکٹرک ریزر سے کرنٹ لگنے کے سبب ہوئی تھی۔ یہ فلم 13 سال کی موٹیویشنل اسپیکر عائشہ چودھری کی زندگی پر مبنی ہے۔ عائشہ کو ایک بیماری تھی جسے امیون ڈیفیشینسی ڈس آرڈر کہتے ہیں۔ اس بیماری کے چلتے سال 2015 میں ان کا انتقال ہو گیا تھا۔

 

Loading...