یہ فلم آسکر کے لئے نہیں گئی لیکن یہ صدی کی 100 عظیم فلموں میں سے ایک ہے

یہ فلم 12 سال پہلے بنی تھی جس کی کہانی 40 سال پرانی ہے۔ لیکن اتنے سالوں بعد بھی اس فلم کو دیکھنا ایک ایسے تجربات سے گزرنا ہے جو آپ کے دل ودماغ پر ہمیشہ کیلئے نقش ہوجانے والا ہے۔

Nov 20, 2019 01:56 PM IST | Updated on: Nov 20, 2019 07:06 PM IST
یہ فلم آسکر کے لئے نہیں گئی لیکن یہ صدی کی 100 عظیم فلموں میں سے ایک ہے

فلم ، چار منتھس ، تھری ویکس اینڈ ٹو ڈیز'۔

کچھ کہانیوں کی یادیں کافی ساری اداسی لیکر آتی ہیں۔ ایسی ہی ایک کہانی تھی رومانین کی فلم ، چار منتھس ، تھری ویکس اینڈ ٹو ڈیز'کی۔ 1987 کا وقت ہے۔ دو لڑکیاں یونیورسٹی کی طالبات ہیں۔ ان میں سے ایک حاملہ ہے۔ فلم ان دونوں کی کہانی ہے جو اس ناپسندیدہ حمل کو جنم دینے کے لئے جدوجہد کر رہی ہیں۔ سرمئی رنگوں میں فلمائی اور مسلسل اندھیرے میں کھسکتی ہوئی فلم میں ۔لمبے۔لمبے مناظر ہیں۔ جن میں کوئی سمواد نہیں۔  صرف ان کا اکیلا ہونا ہے۔  سب کی نظروں سے بچ کرخود کو بچا لینے کی کوشش کرنا ہے۔ اس ڈاکٹر کا بلیک میل کرنا ہے اور وہ سناٹا جو فلم کے پردے پر، ان کے اندر (بھیتر) اور اسے دیکھتے ہوئے آپ کے اندر بھی اترتا جاتا ہے۔ غیر قانونی اسقاط حمل  (ابارشن) کرنے سے پہلے ڈاکٹر اس حاملہ لڑکی کی سہیلی کے ساتھ سیکس کرتا ہے۔ لڑکیوں کو بات ماننی پڑتی ہے کیونکہ ان کے پاس کوئی دوسرا راستہ نہیں۔

اگر آپ ایک عورت ہیں اور ایک حساس مرد بھی ہیں تو پھر اس فلم کو دیکھنے سے آپ کا دل بیٹھے گا۔ آپ سوچیں گے ، شکر ہے کہ ، آپ صحیح وقت میں ایک اچھے ملک میں پیدا ہوئے ہیں۔

بتادیں کہ 1987 کے رومانیا میں اسقاط حمل غیر قانونی تھا۔ رومانیا اکادمک ایدریانا گریدیا کی مانیں تو غیر قانونی ہونے کے سبب غیر محفوظ طریقے سے اسقاط حمل کرانے کی کوشش میں تقریبا 10,000  لڑکیوں نے اپنی جان گنوائی۔

فلم کے ڈائریکٹر کرستیان منچیو نے فلم ریلیز کے دوران پریس کے ساتھ شیئر کئے ایک اعدادوشمار میں کیا تھا کہ تقریبا پانچ لاکھ لڑکیوں نے اس طرح چوری۔چھپے اسقاط حمل کرانے کیلئے اپنی جان خطرے میں ڈالی تھی۔ 1989 کی کرانتی (انقلاب) کے بعد رومانیا میں ابارشن (اسقاط حمل) قانونی ہو گیا اور اسے خواتین کے آئین حقوق  میں شمار کیا گیا۔

Loading...

یہ فلم 12 سال پہلے بنی تھی جس کی کہانی 40 سال پرانی ہے۔ لیکن اتنے سالوں بعد بھی اس فلم کو دیکھنا ایک ایسے تجربات سے گزرنا ہے جو آپ کے دل ودماغ پر ہمیشہ کیلئے نقش ہوجانے والا ہے۔

Loading...