عید پر مجھے جئے شری رام کے میسیج ملتے ہیں۔ ٹرولنگ، ٹی ایم سی اور تشٹی کرن پر یہ بولیں نصرت جہاں

نیوز 18 کو دئیے انٹرویو میں نصرت جہاں نے بشیرہاٹ تشدد، ٹی ایم سی پر اقلیتوں کے تشٹی کرن کا الزام، موب لنچنگ اور جئے شری رام جیسے معاملوں پر بات کی۔

Jul 13, 2019 05:15 PM IST | Updated on: Jul 13, 2019 05:51 PM IST
عید پر مجھے جئے شری رام کے میسیج ملتے ہیں۔ ٹرولنگ، ٹی ایم سی اور تشٹی کرن پر یہ بولیں نصرت جہاں

نیوز 18 کو دئیے انٹرویو میں نصرت جہاں نے تمام سوالات کے جواب دئیے۔

ترنمول کانگریس کی رکن پارلیمنٹ نصرت جہاں لوک سبھا الیکشن جیتنے کے بعد سے ہی موضوع بحث بنی ہوئی ہیں۔ نصرت جہاں نے بشیرہاٹ سیٹ پر تقریبا 3.5 لاکھ ووٹوں سے جیت درج کی۔ انہوں نے بی جے پی کے سایانتم باسو اور کانگریس کے قاضی عبدالرحیم کو ہرا کر ٹی ایم سی کے طاقتور لیڈر ادریس علی کی جگہ لی۔ حالانکہ جیت کے ساتھ ہی نصرت جہاں تنازعات میں گھرتی نظر آئیں۔ جین کنبہ میں شادی کرنے سے لے کر رتھ یاترا میں ہندو رسم ورواج میں حصہ لینے تک ایسے کئی معاملات رہے جب نصرت جہاں کی خوب چرچا ہوئی۔

نیوز 18 کو دئیے انٹرویو میں نصرت جہاں نے بشیرہاٹ تشدد، ٹی ایم سی پر اقلیتوں کے تشٹی کرن کا الزام، موب لنچنگ اور جئے شری رام جیسے معاملوں پر بات کی۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ وہ کس طرح سے ٹرولرس کا سامنا کرتی ہیں اور آنے والے پانچ سالوں میں ان کا کیا منصوبہ ہے۔

Loading...

میں رہنما بننے کے لئے بنی تھی 

نصرت جہاں سے یہ پوچھے جانے پر کہ اتنی کم عمر میں رکن پارلیمنٹ بننے پر انہیں کیسا محسوس ہو رہا ہے تو انہوں نے بتایا کہ ’’ ٹی ایم سی کے لوک سبھا امیدواروں کی فہرست میں اپنا نام دیکھ کر مجھے خوشگوار حیرت ہوئی تھی۔ لیکن اب مجھے محسوس ہوتا ہے کہ میں لیڈر بننے کے لئے بنی تھی‘‘۔

نصرت جہاں نے بتایا کہ آغاز میں انہیں کچھ جھٹکے لگے، لیکن لوگوں کے ساتھ ساتھ وزیر اعلیٰ کو ان پر پورا بھروسہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ بڑی ذمہ داری ہے اور میں اب بھی سیکھ رہی ہوں۔ جلد ہی مفاد عامہ کے معاملوں پر سوال اٹھانا شروع کروں گی۔

کس سے شادی کروں یہ میری پسند

کپڑوں کو لے کر ٹرولنگ کے معاملہ پر نصرت جہاں نے کہا کہ میں ٹرولرس کو اہمیت نہیں دینا چاہتی تھی۔ اس لئے میں نے انہیں جواب نہیں دیا۔ انہوں نے کہا کہ اس دوران پارلیمنٹ میں میرے ساتھی میرے ساتھ تھے۔ اس کے ساتھ ہی کپڑوں اور شادی کو انہوں نے اپنی ذاتی پسند بتایا۔ نصرت نے کہا ’’ کسی کو اس بات کو بھی دیکھ لینا چاہئے کہ ایک رکن پارلیمنٹ کے علاوہ میں ایک انسان بھی ہوں اور یہ میری پسند ہے کہ مجھے کیا پہننا ہے اور کس سے مجھے شادی کرنی ہے‘‘۔

نصرت جہاں نے کہا کہ کس سے شادی کروں یہ میری پسند کی بات ہے۔ نصرت جہاں نے کہا کہ کس سے شادی کروں یہ میری پسند کی بات ہے۔

اقلیتوں کی بھلائی تشٹی کرن نہیں

ٹی ایم سی کے ذریعہ اقلیتوں کے تشٹی کرن پر نصرت جہاں نے کہا کہ کیا اقلیتوں کی بھلائی کے لئے کام کرنا تشٹی کرن ہے؟ انہوں نے کہا کہ میں نہیں جانتی کہ اقلیتوں کے لئے کام کرنا تشٹی کرن کیسے ہوتا ہے۔ نصرت جہاں نے ٹی ایم سی کو سیکولر پارٹی بتایا اور کہا کہ مجھے نہ تو کسی نے رتھ یاترا میں جانے کے لئے کہا اور نہ ہی سندور لگانے کے لئے۔

بشیرہاٹ میں صورت حال معمول پر

بشیرہاٹ میں انتخابی نتائج کے بعد بی جے پی اور ٹی ایم سی کارکنوں کے درمیان تشدد کے کئی واقعات کی خبر سامنے آئی تھی۔ جب اس پر سوال پوچھا گیا تو نصرت جہاں نے کہا کہ بشیر ہاٹ کبھی ’’ جل‘‘ نہیں رہا تھا۔ یہ صرف میڈیا کی دین ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہاں کچھ گڑبڑیاں تھیں جنہیں سنبھال لیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ بشیرہاٹ میں لوگ امن سے رہ رہے ہیں۔

عید پر ملتا ہے ’ جئے شری رام‘ کا میسیج

وہیں، لوگوں سے زبردستی جئے شری رام بلوائے جانے کی خبروں پر نصرت کہتی ہیں کہ ’’ بھگوان کا نام لینے یا مذہبی نعرے لگانے میں کوئی غلط بات نہیں ہے۔ مذہب کسی شخص کی شناخت کا ایک اہم حصہ ہوتا ہے۔ یہ اہم ہے اور اس کا اظہار کرنا بھی قابل قبول ہونا چاہئے۔ لیکن اسے لے کر کسی پر زوروزبردستی کرنا یا اکسانا غلط ہے۔ عید پر مجھے ہزاروں ایسے میسیج ملتے ہیں جن میں عید مبارک کی جگہ جئے شری رام لکھا ہوا ہوتا ہے۔ میں انہیں نظر انداز کرنے کی کوشش کرتی ہوں۔ اس کا جواب دینے سے اس طرح کی فرقہ وارانہ نفرت کو اور فروغ ملتا ہے‘‘۔

 

 

Loading...