ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

آندھرا پردیش میں موسلادھار بارش سے 10 افراد کی موت، ہزاروں ایکڑ فصلوں کو نقصان

آندھراپردیش میں گزشتہ چند روز سے ہورہی موسلادھار بارش سے اب تک 10 افراد کی موت ہوچکی ہے اور ہزاروں ایکڑ فصلوں کو نقصان پہنچا ہے۔ وزیراعلیٰ وائی ایس جگن موہن ریڈی نے افسران کو متاثرہ خاندانوں کو معاوضہ اور راحت کیمپوں میں ہرایک کو 500 روپئے کی مالی مدد دینے کا حکم دیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 14, 2020 10:19 PM IST
  • Share this:
آندھرا پردیش میں موسلادھار بارش سے 10 افراد کی موت، ہزاروں ایکڑ فصلوں کو نقصان
آندھرا پردیش میں موسلادھار بارش سے 10 افراد کی موت، ہزاروں ایکڑ فصلوں کو نقصان

 وجے واڑہ: آندھراپردیش میں گزشتہ چند روز سے ہورہی موسلادھار بارش سے اب تک 10 افراد کی موت ہوچکی ہے او ہزاروں ایکڑ فصلوں کو نقصان پہنچا ہے۔ وزیراعلیٰ وائی ایس جگن موہن ریڈی نے افسران کو متاثرہ خاندانوں کو معاوضہ اور راحت کیمپوں میں ہر ایک کو 500 روپئے کی مالی مدد دینے کا حکم دیا ہے۔ انہوں نے فصل کے نقصان کا اندازہ کرنے اور ایک ہفتہ میں رپورٹ سونپنے کے لئے بھی متعلقہ محکمات کو حکم دیا۔

ریاست میں ہورہی مسلسل بارش سے گنٹور، کرشنا، مغربی گوداوری، مشرقی گوداوری اور وشاکھاپٹنم اضلاع سب سے زیادہ متاثر ہوئے ہیں۔ تالاب اور نہروں کا پانی سڑکوں پر آگیا ہے اور متعدد مقامات پر درخت اکھڑ گئے ہیں۔ بدھ کو خشک موسم کے باوجود، ضلع وشاکھاپٹنم میں شاردہ، تھنڈوا اور وراہا ندیاں زوروں پر ہیں اور مغربی گوداوری ضلع میں تمّلارو ندی میں سیلاب آگیا ہے۔



وزیراعلیٰ وائی ایس جگن موہن ریڈی نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ ضلع کلیکٹروں کے ساتھ میٹنگ کی اور بارش کی صورت حال کا جائزہ لیا۔ انہوں نے گنٹور اور کرشنا اضلاع کے کلکٹروں کو اگلے 24 گھنٹے چوکس رہنے کے لئے کہا ہے۔ انہوں نے ان سے بجلی فراہمی بحال کرنے کے لئے اقدام کرنے کا کہا۔ اس درمیان تیلگو دیشم پارٹی کے قومی صدر اور سابق وزیراعلیٰ این چندربابو نائیڈو نے جان و مال کی وسیع پیمانے پر تشویش کا اظہارکیا ہے اورکہا ہے کہ بھاری بارش کے سبب مکان منہدم ہوگئے اور تودے گرے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو فوری متاثرین کے لئے بچاو اور راحتی کاموں میں تیزی لانی چاہئے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Oct 14, 2020 09:42 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading