ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اتراکھنڈ سانحہ میں 10 لوگوں کی موت، تپوون ٹنل سے 16 لوگوں کا ریسکیو، 150 سے زیادہ لوگ لاپتہ

Uttarakhand Glacier Tragedy Updates: گلیشیئر پھٹنے سے تپوون بیراج پوری طرح سے تباہ ہوگیا ہے۔ اتراکھنڈ کے چمولی ضلع میں رشی گنگا ندی پر پاور پروجیکٹ کے ڈیم کا ایک حصہ ٹوٹ گیا ہے۔ اس سے الکنندا ندی میں بہاؤ بڑھ گیا ہے۔

  • Share this:
اتراکھنڈ سانحہ میں 10 لوگوں کی موت، تپوون ٹنل سے 16 لوگوں کا ریسکیو، 150 سے زیادہ لوگ لاپتہ
اتراکھنڈ سانحہ میں 10 لوگوں کی موت، تپوون ٹنل سے 16 لوگوں کا ریسکیو، 150 سے زیادہ لوگ لاپتہ

مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے اتراکھنڈ کے جوشی مٹھ میں آئی قدرتی آفت کو لےکرکہا ہے کہ راحت اور بچاو کام جاری ہے اور قومی آفت سے نجات دلانے والی نیشنل ڈیزاسٹر رسپانس فورس (National Disaster Response Force) کی تینوں ٹیمیں موقع پر پہنچ گئی ہیں۔ انہوں نے یقین دہانی کرائی ہے کہ سبھی حالات کو مد نظر رکھتے ہوئے جلد از جلد حالات کو کنٹرول میں لانے کی کوشش کی جائے گی اور اس سانحہ سے نمٹنے میں مرکزی حکومت کے ذریعہ اولین ترجیحی بنیاد پر ہر ضروری مدد دی جائے گی۔ وزارت داخلہ کے بیان کے مطابق، امت شاہ نے کہا کہ نریندر مودی حکومت اتراکھنڈ کے جوشی مٹھ میں آئی قدرتی آفت کے وقت ریاست کے لوگوں کے ساتھ کندھے سے کندھا ملا کر کھڑی ہے۔


ادھر حادثہ کے بعد وزیر اعظم نریندر مودی اور وزیر داخلہ امت شاہ نے اتراکھنڈ کے وزیر اعلی ترویندر سنگھ راوت سے حادثہ کے بارے میں پوری جانکاری لی ہے۔ انہوں نے وزیر اعلی سے راحت اور بچاو کام کے بارے میں جانکاری حاصل کی۔ اترپردیش کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا ہے کہ تراکھنڈ میں گلیشیئر ٹوٹنے سے خطرناک تباہی ہوئی ہے۔ متاثرہ اہل خانہ کے تئیں ہماری تعزیت ہے۔ الکنندہ گنگا کی معاون ندی ہے اور اترپردیش کے اندر گنگا تقریباً 1,000 کلو میٹر کا راستہ طے کرتی ہے، ہم نے اپنے جل شکتی محکمہ کو الرٹ کردیا ہے۔




ایس ایس بی دیسوال، جنرل ڈائریکٹر، آئی ٹی بی پی نے کہا کہ یہ خدشہ ہے کہ تقریباً 100 مزدور جائے حادثہ پر موجود تھے، جس میں سے 9-10 لاشیں ندی سے برآمد کی گئی ہیں۔ دیسوال نے کہا کہ آئی ٹی بی پی کی ایک ٹیم جائے حادثہ پر تعینات ہے اور بچاو مہم چلا رہی ہے اور ہم این ٹی پی سی کی منیجمنٹ ٹیم کے ساتھ رابطے میں ہے تاکہ لاپتہ لوگوں کے بارے میں جانکاری جمع کی جاسکے۔



وہیں دوسری جانب، افسران نے بتایا کہ دھولی ندی میں سیلاب آنے کی اطلاع ملنے کے بعد الرٹ جاری کردیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی ہری دوار ضلع انتظامیہ نے بھی الرٹ جاری کردیا ہے ۔ سبھی تھانوں اور ندی کنارے کی آبادی کو محتاط رہنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ رشی کیش میں بھی الرٹ جاری کردیا گیا ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ گلیشیئر پھٹنے کے بعد باندھ کو نقصان پہنچا ہے، جس کی وجہ سے ندیوں میں سیلاب آگیا ہے۔ تپوون بیراج کو بری طرح سے نقصان پہنچا ہے۔ شری نگر انتظامیہ نے ندی کے کنارے کی بستیوں میں رہ رہے لوگوں سے محفوظ مقامات پر جانے کی اپیل کی ہے۔

گلیشیئر واقعہ پر وزیر اعلی ترویندر سنگھ راوت نے گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے لوگوں کو کسی بھی طرح کی افواہ پر دھیان نہ دینے کی اپیل کی ہے۔ ساتھ ہی ڈایزاسٹر مینجمنٹ محکمہ کے سکریٹری اور ڈی ایم چمولی سے واقعہ کی پوری تفصیلات طلب کی ہے۔ وزیر اعلی مسلسل حالات پر نظر بنائے ہوئے ہیں۔ پوڑی گڑھوال پولیس نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ عوام کو مطلع کیا جاتا ہے کہ تپوون رینی علاقہ میں گلیئشر ٹوٹنے سے رشی گنگا پاور پروجیکٹ کو کافی نقصان پہنچا ہے، جس کی وجہ سے ندی کی آبی سطح مسلسل بڑھ رہی ہے۔ الکنندا ندی کے کنارے رہنے والے لوگوں سے اپیل کی جاتی ہے کہ جلد از جلد محفوظ مقامات پر چلے جائیں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Feb 07, 2021 06:16 PM IST