உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہلی میں حیوانت نے لے لی جان! 3 دوستوں نے مل کر 10 سال کے لڑکے سے کی آبروریزی، موت

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      نئی دہلی: ملک کی راجدھانی دہلی میں لڑکیوں کے ساتھ ساتھ اب لڑکے بھی محفوظ نہیں ہیں۔ دہلی میں ایک بچے کے ساتھ غیر فطری آبروریزی کی حیوانیت آمیز سانحہ سامنے آیا ہے۔ سیلم علاقے میں 10 سال کے بچے کے ساتھ اس کے ہی تین دوستوں نے اس قدر درندگی کی، جس سے اس کی موت ہوگئی۔ دہلی پولیس نے بتایا کہ تینوں ملزمین 10 سے 12 سال کے بچے ہیں اور ان تینوں نے ہی اپنے 10 سال کی عمر کے دوست کے ساتھ غیرفطری آبروریزی کی۔

      نیوز ایجنسی اے این آئی کے مطابق، پولیس نے بتایا کہ غیرفطری آبرویزی کی وجہ سے لڑکا زخمی ہوگیا تھا اور اسپتال میں علاج کے دوران اس کی موت ہوگئی۔ یہ حادثہ 18 ستمبر کا بتایا جا رہا ہے۔ پولیس نے دو ملزم لڑکوں کو پکڑ لیا ہے اور تیسرے کی تلاش جاری ہے۔ کیونکہ تینوں ملزم نابالغ ہیں، اس لئے پولیس نے پہچان اجاگر کرنے سے انکار کردیا ہے۔

      میڈیا رپورٹس میں دعویٰ کیا جارہا ہے کہ ملزمین نے 10 سال کے معصوم کے ساتھ نربھیا جیسی ہی درندگی کو انجام دیا ہے۔ بتایا گیا کہ پہلے تینوں دوستوں نے مل کر معصوم کے ساتھ غیر فطری آبروریزی کی اور پھر اس کے پرائیویٹ پارٹ میں راڈ ڈال دیا، جس کی وجہ سے معصوم بری طرح زخمی ہوگیا۔ اس کے بعد اسے اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے، جہاں اس کا علاج چل رہا تھا۔ مگر اب اس کی موت کی تصدیق خود دہلی پولیس نے کردی ہے۔

       
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: