ممبئی بم دھماکوں کےملزم عبدالغنی ترک کی ناگپور کے اسپتال میں موت

خبرہےکہ گزشتہ کافی وقت سےعبدالغنی بیمارچل رہا تھا اوراسےناگپورکےاسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔

Apr 25, 2019 06:17 PM IST | Updated on: Apr 25, 2019 07:01 PM IST
ممبئی بم دھماکوں کےملزم عبدالغنی ترک کی ناگپور کے اسپتال میں موت

فائل فوٹو

ممبئی سلسلہ واربم دھماکوں کے ملزم عبدالغنی ترک کی ناگپوراسپتال میں موت ہوگئی ہے۔ عبدالغنی گزشتہ کافی وقت سےناگپورسینٹرل جیل میں بند تھا۔ بتایا جاتا ہےکہ 1993 میں ممبئی میں ہوئےسیریل بم بلاسٹ میں عبدالغنی نےسنچری بازارمیں بم رکھا تھا۔ خبرہےکہ گزشتہ کافی وقت سےعبدالغنی بیمارچل رہا تھا اوراسےناگپورکے اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔

غورطلب ہےکہ اس بم دھماکےکےاہم ملزم ابوسلیم اورمصطفیٰ دوسا ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ یہ دونوں حملےکی سازش میں شامل تھےاورآرڈی ایکس جیسے دھماکہ خیزاشیا ممبئی پہنچائے تھے۔ پہلی باردھماکوں میں آرڈی ایکس جیسے دھماکہ خیزاشیا کا استعمال کیا گیا تھا اور دھماکےکے بعد دونوں ملزم فرارہوگئےتھے۔

Loading...

اس دھماکے سے پورا ممبئی دہل گیا تھا۔ اس حادثے میں 257 لوگوں کی جان گئی اوریہ جان لینے والا شخص داود ابراہیم کاسکرہے، جوممبئی کی گلیوں سےنکل کراب پاکستان کی پناہ میں ہےاوروہیں سے ہندوستان کےخلاف دہشت گردانہ حملےکی سازش کرنےکا الزام ہے۔

پاکستان سےنہ صرف اس دہشت گردانہ حملےکی سازش رچی گئی بلکہ حملےمیں شامل لوگوں کودھماکہ خیزمواد تیارکرنےکی ٹریننگ بھی پاکستان میں دلائی گئی۔ پہلی بارتسکری کے ذریعہ سمندرکے راستے آرڈی ایکس ممبئی پہنچایا گیا۔ یہ پہلی بارتھا جب کسی دہشت گردانہ حملے کےلئے ممبئی میں ایک سلیپرسیل سرگرم ہوئی، جس نے دھماکہ خیزمواد بنا کر دھماکوں کوانجام دیا۔ سیریل بلاسٹ کا حملہ ملک نے پہلی بارجھیلا تھا۔

Loading...