உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بڑی خبر: دہلی میں ماسک نہیں پہننے پر لگے گا 500 کی جگہ 2 ہزار جرمانہ، احکامات جاری

    بڑی خبر: دہلی میں ماسک نہیں پہننے پر لگے گا 500 کی جگہ 2 ہزار جرمانہ، احکامات جاری

    بڑی خبر: دہلی میں ماسک نہیں پہننے پر لگے گا 500 کی جگہ 2 ہزار جرمانہ، احکامات جاری

    بغیر ماسک کے باہر نکلے لوگوں پر ابھی تک 500 روپئے کا جرمانہ لگایا جارہا تھا۔ تاہم اب اس جرمانے (Penalty) کی رقم کو بڑھا دیا گیا ہے۔ اب اگر بغیر فیس ماسک (Face Mask) باہر نکلے تو یہ آپ کو بہت مہنگا پڑے گا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: دہلی ہائی کورٹ (Delhi High Court) کے تبصرہ کے بعد اب دہلی میں بغیر ماسک گھومنے والوں پر 500 کی جگہ 2 ہزار روپئے کا جرمانہ لگے گا۔ دہلی حکومت (Delhi Government) نے یہ احکامات جاری کر دیئے ہیں۔ آج ہی دہلی ہائی کورٹ نے دہلی حکومت کو کورونا وائرس کے بڑھتے معاملوں پر پھٹکار لگائی تھی۔ ساتھ ہی کہا تھا کہ دہلی میں مسلسل کورونا (Corona) کے معاملات میں اضافہ ہو رہا ہے اور جب ریاستی حکومت سے سوال کیا تب وہ حرکت میں آئی ہے۔

      اس سے پہلے وہ کیا کر رہے تھے؟ آخر کار شادی تقریب میں لوگوں کے شامل ہونے کی تعداد 200 سے 50 کرنے میں اتنا تاخیر کیوں کی گئی۔ کیوں 18 دن کا انتظار کیا گیا۔ وہیں عدالت نے بغیر ماسک گھوم رہے لوگوں پر جرمانہ رقم کو لے کر بھی بڑا کمنٹ کیا ہے۔ ہائی کورٹ کا کہنا ہے کہ ابھی جو رقم جرمانے کے طور پر لی جارہی ہے، وہ کم ہے۔ واضح رہے کہ بغیر ماسک (Mask) باہر نکلے لوگوں پر 500 روپئے کا جرمانہ لگایا جارہا ہے۔

      ہائی کورٹ نے دہلی حکومت کو یکم نومبر کو کہا تھا کہ ان کے ذریعہ بڑھتے معاملات کو روکنے کے لئے کیا کیا قدم اٹھائے جا رہے ہیں۔ اس بارے میں اسٹیٹس رپورٹ یا حلف نامہ دائر کریں، جس کے بعد جمعرات کو دہلی حکومت نے ہائی کورٹ سے کہا کہ وہ شادی تقریب میں مہمانوں کی تعداد 200 سے گھٹا کر50 کر رہے ہیں۔
      ہائی کورٹ نے دہلی حکومت کو یکم نومبر کو کہا تھا کہ ان کے ذریعہ بڑھتے معاملات کو روکنے کے لئے کیا کیا قدم اٹھائے جا رہے ہیں۔ اس بارے میں اسٹیٹس رپورٹ یا حلف نامہ دائر کریں، جس کے بعد جمعرات کو دہلی حکومت نے ہائی کورٹ سے کہا کہ وہ شادی تقریب میں مہمانوں کی تعداد 200 سے گھٹا کر50 کر رہے ہیں۔


      ہائی کورٹ نے کہا ’جب ہم سوال پوچھیں گے تب حرکت میں آئیں گے کیا’

      دراصل، کووڈ-19 کے معاملے مسلسل دہلی میں بڑھ رہے ہیں۔ اس کو لے کر ہائی کورٹ نے دہلی حکومت کو یکم نومبر کو کہا تھا کہ ان کے ذریعہ بڑھتے معاملات کو روکنے کے لئے کیا کیا قدم اٹھائے جا رہے ہیں۔ اس بارے میں اسٹیٹس رپورٹ یا حلف نامہ دائر کریں، جس کے بعد جمعرات کو دہلی حکومت نے ہائی کورٹ سے کہا کہ وہ شادی تقریب میں مہمانوں کی تعداد 200 سے گھٹا کر50 کر رہے ہیں۔ اس پر عدالت نے ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے سیدھے سوال پوچھا کہ آخر 18 دن کا انتظار کیوں؟ یہ قدم پہلے کیوں نہیں اٹھایا گیا۔ ہم جب سوال پوچھیں گے تب آپ حرکت میں آوگے۔

      دہلی میں 24 گھنٹے میں ہوئی 131 کورونا مریضوں کی موت

      محکمہ صحت کے ذریعہ جاری تازہ اعدادوشمار کے مطابق، گزشتہ 24 گھنٹے میں دہلی میں 131 لوگوں کی موت کووڈ-19 کی وجہ سے ہوگئی ہے۔ تو وہیں 7,486 نئے کورونا کے پازیٹیو کیسز سامنے آئے ہیں۔ تو وہیں 6,901 لوگوں نے کورونا کو شکست دینے میں کامیابی حاصل کرلی ہے۔ نئے معاملے سامنے آنے کے بعد اب دہلی میں کورونا کے کل معاملات کی تعداد بڑھ کر 5,03,084 ہوگئی ہے۔ محکمہ صحت کے اعدادوشمار کے مطابق، دہلی میں فی الحال کورونا کے 42,458 ایکٹیو کیس ہیں۔ 4,52,683 لوگ کورونا کو شکست دینے میں کامیاب ہوئے ہیں۔ انہیں اسپتال سے ڈسچارج کردیا گیا ہے تو وہیں اب تک دہلی میں کورونا سے 7,943 لوگوں کی موت ریکارڈ ہوچکی ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: