ایکشن میں حکومت: جموں وکشمیرسے لکھنوجیل شفٹ کئے جائیں گے 20 دہشت گرد

جموں وکشمیرمیں فی الحال آرٹیکل 370 ہٹنے کے بعد سے ہی دفعہ 144 نافذ ہے۔

Aug 11, 2019 12:07 AM IST | Updated on: Aug 11, 2019 12:07 AM IST
ایکشن میں حکومت: جموں وکشمیرسے لکھنوجیل شفٹ کئے جائیں گے 20 دہشت گرد

جموں وکشمیر کے دہشت گردوں کو لکھنو جیل میں شفٹ کیا جارہا ہے۔

اترپردیش سےخبرآرہی ہے کہ جموں وکشمیرکے 20 دہشت گردوں کولکھنوسینٹرل جیل میں شفٹ کیا جارہا ہے۔ جموں وکشمیرمیں فی الحال آرٹیکل 370 ہٹنےکے بعد سے ہی دفعہ 144 نافذ ہے۔ بتایا جارہا ہےکہ سیکورٹی اسباب کے پیش نظریہ کارروائی کی جارہی ہے۔ مناسب انتظامات کرنے کے لئےلکھنوکےپولیس سپرنٹنڈنٹ سمیت اعلیٰ افسرمعائنہ کےلئےجیل پہنچ چکےہیں۔ ان دہشت گردوں کوایئرفورس کی مدد سے بخشی کا تالاب ایئربیس پرلایا گیا ہے، جہاں سےانہیں ضلع جیل میں شفٹ کیا جائےگا۔

خبرہےکہ بریلی، جھانسی، نینی اورلکھنوجیل میں بھی قیدیوں کوشفٹ کیا جارہا ہے۔ دفعہ 370 ہٹنےسےپہلےکشمیرکے قیدیوں کوملک کے کسی دیگرحصے میں نہیں لایا جاسکتا تھا۔ 370 ہٹنے کےبعد حکومت کی طرف سے بڑا قدم اٹھایا گیا ہے۔ ان دہشت گردوں کوبھاری سیکورٹی میں رکھا جائے گا۔ سیکوٹی کےمد نظرآس پاس کے تھانوں کی فورس بلا لی گئی ہے۔ وہیں پولیس سپرنٹنڈنٹ سمیت کئی افسروں نے ضلع جیل کا جائزہ لیا اورسیکورٹی کےانتظامات دیکھے۔

Loading...

آگرہ جیل میں شفٹ ہوئے 70 قیدی

واضح رہے کہ اس سے قبل بھی جمعرات کو سری نگر، جموں اورکٹھوعہ کی جیلوں میں بند تقریباً 100 سے زیادہ دہشت گردوں اورپتھربازوں کو ملک کے الگ الگ جیلوں میں شفٹ کیا گیا تھا۔ پہلے آگرہ میں 70 قیدی آنے کی اطلاع تھی، لیکن بعد میں انتظامیہ نے بتایا کہ 26 قیدی آئے ہیں۔

بیرک کے باہر24 گھنٹے رہے گا پہرہ

افسران نے بتایا کہ ریاست اورمرکزکے محکمہ داخلہ اس کی مانیٹرنگ کررہا ہے۔ ان قیدیوں کے بیرک کے باہر24 گھنٹے پہرہ رہے گا۔ ڈی ایم این جے روی کماراورایس ڈی ایم کے پی سنگھ قیدیوں کے رکھے جانے کی انتظامات کا جائزہ لینے سینٹرل جیل بھی پہنچے۔ وہیں ایس ایس پی ببلوکمارنے بتایا کہ سبھی قیدیوں کوسخت سیکورٹی انتظامات کے درمیان یہاں لایا گیا ہے۔

اجیت پرتاپ سنگھ کی رپورٹ

Loading...