گجرات میں خطرناک سڑک حادثہ، بس پلٹنےسے21 لوگ ہلاک، وزیراعظم مودی کا اظہارافسوس

ایس پی اجیت راجین نےبتایا کہ بس بارش کےدوران پھسل کرترشولیا گھاٹ کے نزدیک پلٹ گئی۔ اس میں 21 لوگوں کی موت ہوگئی۔ مہلوکین کی تعداد میں مزید اضافے کا اندیشہ ہے۔

Sep 30, 2019 09:04 PM IST | Updated on: Oct 02, 2019 04:30 PM IST
گجرات میں خطرناک سڑک حادثہ، بس پلٹنےسے21 لوگ ہلاک، وزیراعظم مودی کا اظہارافسوس

گجرات میں اچانک بس کے پلٹنے سے خطرناک حادثہ ہوا۔

احمدآباد: گجرات کےبناس کانٹھا میں مذہبی مقام امباجی کےنزدیک آج ایک بس کے حادثےکا شکارہوجانے سے کم سے کم 21 لوگو ں کی موت ہوگئی اور30 سے زیادہ زخمی ہوگئے۔ ایس پی اجیت راجین نے بتایا کہ بس بارش کےدوران پھسل کرترشولیا گھاٹ کے نزدیک پلٹ گئی۔ اس میں کم سے کم 21 لوگوں کی موت ہوگئی۔ مہلوکین کی تعداد میں مزیداضافے کا اندیشہ ہے۔

وزیراعظم نریندرمودی نے حادثے پرافسوس کا اظہارکرتے ہوئے کہا 'بانس کانٹھا سے ایک مایوس کن خبرآئی ہے۔ اس حادثے کی خبرسے بہت مایوس ہوں۔ میری تعزیت ان سبھی اہل خانہ کے ساتھ ہیں۔ مقامی انتظامیہ سبھی کوجلد ازجلد مدد فراہم کرائے۔

پالن پورپولس نے بتایا کہ بس میں 53 افراد سوارتھے، جو امباجی سے درشن کرکے واپس آنند کےاسودرلوٹ رہےتھے۔ یہ دانتا کی جانب جارہی تھی تبھی پلٹ گئی۔ زخمیوں میں سے کئی کو پالن پور اسپتال میں بھرتی کرایا گیا ہے۔ اس سے قبل بناس کانٹھا ضلع کے ڈیسا دیہی علاقےمیں کچواڈا تین راستے کےپاس ایک کمانڈرجیپ اورٹرک کی ٹکرمیں جیپ میں سوار پانچ لوگوں کی موت ہوگئی، جن میں تین خواتین شامل تھیں۔

ambaji

واضح رہے کہ اس سے پہلےآج وسطی گجرات کے کھیڑا ضلع میں کاراورٹرک کی ٹکرمیں پانچ لوگوں کی موت ہوگئی تھی۔ مقامی لوگوں کے مطابق یہ حادثہ شام 4 بجے کے قریب ہوا۔ بس میں سوارعقیدت مند امباجی مندرکے درشن کے بعد لوٹ رہے تھے۔ گجرات کے وزیر اعلیٰ وجے روپانی نے ضلع کلکٹرسے بات چیت کرکے زخمیوں کوفوراً مدد دینے کی بات کہی ہے۔

نیوز ایجنسی یواین آئی اردو کے ان پٹ کے ساتھ

Loading...