உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کانگریس میں تبدیلی کے مطالبہ میں شدت ، 23 بڑے لیڈروں نے سونیا گاندھی کو لکھا خط

    کانگریس میں تبدیلی کے مطالبہ میں شدت ، 23 بڑے لیڈروں نے سونیا گاندھی کو لکھا خط

    کانگریس میں تبدیلی کے مطالبہ میں شدت ، 23 بڑے لیڈروں نے سونیا گاندھی کو لکھا خط

    کانگریس کی تاریخ میں ایسا پہلی مرتبہ ہوا ہے جب پارٹی کے سینئر لیڈروں نے عبوری صدر سونیا گاندھی کو خط لکھ کر کانگریس میں بڑی تبدیلی کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

    • Share this:
      کانگریس کی تاریخ میں ایسا پہلی مرتبہ ہوا ہے جب پارٹی کے سینئر لیڈروں نے عبوری صدر سونیا گاندھی کو خط لکھ کر کانگریس میں بڑی تبدیلی کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔ یہ مطالبہ کانگریس کے 23 بڑے لیڈروں نے کیا ہے ۔ ان میں پانچ سابق وزرائے اعلی ، ششی تھرور جیسے ممبران پارلیمنٹ ، کانگریس ورکنگ کمیٹی کے رکن اور سابق مرکزی وزرا شامل ہیں ۔ ان کا کہنا ہے کہ پارٹی میں بڑے پیمانے پر تبدیلی کرکے کانگریس کو ہورہے نقصان سے بچایا جاسکتا ہے ۔

      انڈین ایکسپریس کی ایک رپورٹ کے مطابق یہ خط بی جے پی کی ترقی کی جانب اشارہ کرتا ہے ۔ یہ اعتراف کرتے ہوئے کہ نوجوانوں نے فیصلہ کن طور پر نریندر مودی کو ووٹ دیا ہے ، خط بتاتا ہے کہ کانگریس کو بنیادی طور سے حمایت کا نقصان ہوا ہے ۔ نوجوانوں کا اعتماد کھونا تشویش کا موضوع ہے ۔ یہ خط تقریبا دو ہفتے پہلے بھیجا گیا تھا ۔ خط کے ذریعہ بڑے لیڈروں نے ایک کل وقتی اور موثر قیادت لانے کا مطالبہ کیا ہے ، جو کہ زمین پر نظر بھی آئے اور سرگرم بھی رہے ۔

      خط پر دستخط کرنے والوں میں راجیہ سبھا میں اپوزیشن کے لیڈر غلام نبی آزاد ، پارٹی کے رکن پارلیمنٹ اور سابق مرکزی وزیر آنند شرما ، کپل سبل ، منیش تیواری ، ششی تھرو ، اے آئی سی سی کے عہدیدار اور سی ڈبلیو سی رکن اور سابق وزرائے اعلی شامل ہیں ۔

       

      علاوہ ازیں بھوپیندر سنگھ ہڈا ، راجیندر کور بھٹل ، ایم ویرپا موئلی ، پرتھوی راج ، پی جے کورین ، اجے سنگھ ، رینوکا چودھری اور ملند دیوڑا بھی شامل ہیں ۔ راج ببر ، اروند لولی اور کول سنگھ ٹھاکر ، موجودہ بہار مہم چیف اکھلیشن پرساد سنگھ ، ہریانہ کے سابق اسپیکر کلدیپ شرما ، دہلی کے سابق اسپیکر یوگانند شاستری اور سابق ممبر پارلیمنٹ سندیپ دیکشت نے بھی اس خط پر دستخط کئے ہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: