உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    نظام الدین مرکزمیں قیام کرنے والے 24افرادکوروناوائر س سے متاثر، دہلی کے وزیرصحت کابیان

    دہلی کے محکمہ صحت کے مطابق ، منگل کے روز قومی دارالحکومت میں کورونا وائرس کے کل معاملات کی تعداد بڑھ کر 576 ہوگئی ، جب کہ ایک دن میں 51 تازہ کیس اور دو اموات ریکار ڈ کی گئی ہے۔حکام کا کہناہے کہ مجموعی طور پر 333 ایسے ہیں جنہوں نے گذشتہ ماہ نظام الدین کے علاقے میں تبلیغی جماعت کے اجتماع میں شرکت کی تھی۔اس کے ساتھ ہی ، کوویڈ 19 کے نتیجے میں دہلی میں اموات کی تعداد نو ہو گئی ہے۔۔(تصویر:نیوز18)۔

    دہلی کے محکمہ صحت کے مطابق ، منگل کے روز قومی دارالحکومت میں کورونا وائرس کے کل معاملات کی تعداد بڑھ کر 576 ہوگئی ، جب کہ ایک دن میں 51 تازہ کیس اور دو اموات ریکار ڈ کی گئی ہے۔حکام کا کہناہے کہ مجموعی طور پر 333 ایسے ہیں جنہوں نے گذشتہ ماہ نظام الدین کے علاقے میں تبلیغی جماعت کے اجتماع میں شرکت کی تھی۔اس کے ساتھ ہی ، کوویڈ 19 کے نتیجے میں دہلی میں اموات کی تعداد نو ہو گئی ہے۔۔(تصویر:نیوز18)۔

    دہلی کے وزیر صحت ستیندر جین نے اے این آئی کو بتایا کہ نظام الدین مرکز میں قیام کرنے والے 24 افراد کورونا وائرس سے متاثر ہیں اور انکے میڈیکل جانچ کے بعد ٹیسٹ رپورٹ بھی مبثت آئی ہے

    • Share this:
    دہلی کے وزیر صحت ستیندر جین نے اے این آئی کو بتایا کہ نظام الدین مرکز میں قیام کرنے والے 24 افراد کورونا وائرس سے متاثر ہیں اور انکے میڈیکل جانچ کے بعد ٹیسٹ رپورٹ بھی مبثت آئی ہے۔وہیں مدھیہ پردیش کے اندور میں بھی 17 افراد کورونا وائرس سے متاثر پائے گئے ہیں اورمیڈیکل جانچ کے بعد انکی ٹیسٹ روپورٹ بھی مثبت آئی ہے۔ جس کے بعد ملک بھر میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد 1162ہوگئی ہے۔ دہلی کے وزیر صحت ستیندر جین نے یہ بھی کہا کہ حکومت کے انداز کے مطابق تقریباً 1،500 سے 1،700 نظام الدین مرکز منعقد ہ پروگرام میں شرکت کی تھی۔تاہم حکومت کو اب بھی قطعی تعداد کے بارے میں کوئی یقین نہیں ہے ۔کل 334 افراد کو اسپتالوں میں بھیج دیا گیا ہے اور 700 سے زائد افراد کو قرنطین مرکز بھیج دیا گیا ہے۔


    متعدد اطلاعات کے درمیان جس میں یہ دعوی کیا گیا ہے کہ مرکز نظام الدین نے لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کی ہے ۔ وہیں دوسری جانب مرکز نظام الدین نے ایک تفصیلی وضاحت جاری کی ۔جس میں کہا گیاہے مرکز نظام الدین کی جانب سے حکومت کے اعلان کردہ لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی نہیں کی گئی۔ وزیر اعظم نریندر مودی کے حکم پر عجلت میں لاک ڈاؤن کے ذریعہ ، لوگ پھنس گئے اور مجبوری میں انہیں احاطے میں رہائش کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ وزیراعظم نے بھی اپنے بیان میں کہا تھا کہ اس وقت جو جہاں سے ہیں وہ لوگ وہیں رک جائیں۔

    مرکز نظام الدین ، اب ہندوستان کا سب سے بڑا کورونا وائرس ہاٹ اسپاٹ کے طور پر ابھر کر سامنے آیا ہے۔پریس ریلیز میں کہا گیا ہے: " اس پورے واقعہ کے دوران مرکزنظام الدین نے کبھی بھی قانون کی کسی شق کی خلاف ورزی نہیں کی ، اور ہمیشہ مختلف ریاستوں سے دہلی آنے والے زائرین کے ساتھ ہمدردی اور اثیار کے ساتھ کام کرنے کی کوشش کی اور مرکز نے انہیں طبی رہنما یانہ خطوط کے تحت تمام بنیادی سہولتیں فراہم کی ہے۔
    Published by:Mirzaghani Baig
    First published: