ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Delhi Oxygen Shortage:آکسیجن کاٹینکرسرگنگارام اسپتال پہنچا،60مریضوں کواب نہیں کوئی خطرہ

گنگا رام اسپتال (Ganga Ram Hospital ) کے انتظامیہ کے مطابق ’’آکسیجن مزید 2 گھنٹے جاری رہے گی۔ وینٹیلیٹرز اور بپپ موثر انداز میں کام نہیں کررہے ہیں۔ آکسیجن کو فوری طور پر دستیاب کرانے کی ضرورت ہے۔ اسپتال کے سب سے زیادہ بیمار مریضوں کی زندگی خطرہ میں ہے‘‘۔

  • Share this:
Delhi Oxygen Shortage:آکسیجن کاٹینکرسرگنگارام اسپتال پہنچا،60مریضوں کواب نہیں کوئی خطرہ
علامتی تصویر

اسپتال کے ڈائریکٹر نے جمعہ کی صبح بتایا کہ دہلی کے سر گنگا رام اسپتال (Sir Ganga Ram Hospital) میں گذشتہ 24 گھنٹوں میں 25 مریضوں کی موت ہوچکی ہے اور اسپتال کو آکسیجن کی شدید قلت کا سامنا ہے۔سر گنگا رام اسپتال کے ڈائریکٹر نے مزید کہا کہ اسپتال میں 60 بیمار مریضوں کی زندگی خطرے میں پڑ گئی ہے۔تاہم اب سے کچھ ہی دیر پہلے سرگنگارام اسپتال کوآکسجین پہنچ چکاہے اور اسپتال میں شریک مریضوں کو اب کوئی خطرہ نہیں ہے۔ جیسے ہی  آکسجین ٹینکراسپتال کے احاطہ میں پہنچا، اسپتال کے عملے اور مریضوں کے رشتہ داروں کی خوش کا ٹھکانا نہیں رہا۔ سب کی آنکھوں میں آنسو تھے۔ سب کہہ رہے کہ ہماری دعائیں قبول ہوئیں ہیں۔




اس سے اسپتال کے انتظامیہ نے کہا تھا کہ ’’آکسیجن مزید 2 گھنٹے جاری رہے گی۔ وینٹیلیٹرز اور بپپ موثر انداز میں کام نہیں کررہے ہیں۔ آکسیجن کو فوری طور پر دستیاب کرانے کی ضرورت ہے۔ اسپتال کے سب سے زیادہ بیمار مریضوں کی زندگی خطرہ میں ہے‘‘۔



یہ اعلان سر گنگا رام اسپتال نے دہلی حکومت کو ایس او ایس بھیجنے کے ایک دن بعد کیا ہے۔ جس میں کہا گیا ہے کہ اس اسپتال میں صرف پانچ گھنٹے آکسیجن باقی ہے اور درخواست کی کہ اسے فوری طور پر دوبارہ سے بھر دیا جائے۔جمعرات کو ایک عہدیدار نے کہا کہ ’’رات 8 بجے اسپتال کے اسٹور میں موجود آکسیجن صبح کے 1 بجے تک ایمرجنسی استعمال کے لیے پانچ گھنٹے اور تیز بہاؤ کے زیادہ استعمال کے لیے کم تھی۔ فوری طور پر آکسیجن کی فراہمی کی ضرورت ہے‘‘۔

وسطی دہلی میں واقع اسپتال میں 510 کورونا وائرس کے مریض زیرعلاج ہیں۔ جن میں 142 مریض تیز فلو آکسیجن سپورٹ پر ہیں۔ اسپتال ایجنسیوں کے ساتھ رابطے میں ہے۔ فوری فراہمی کی ضرورت ہے‘‘۔اس سے پہلے ہی دن میں سر گنگا رام اسپتال (ایس جی آر ایچ) نے کہا تھا کہ ان کا آکسیجن اسٹاک جمعہ کی صبح دس بجے تک جاری رہ سکتا ہے۔ تیز بہاؤ کی ضرورت سے زیادہ مریضوں کو اسپتال میں داخل کرایا گیا۔ عہدیدار نے بتایا کہ تقریبا 40 مریض اضافی ہیں۔


جمعرات کے روز شہر کے متعدد چھوٹے اسپتال کورونا وائرس کے مریضوں کے لئے آکسیجن کی فراہمی کو بھرنے کے لئے جدوجہد کر رہے تھے۔ یہاں تک کہ صحت کی دیکھ بھال کرنے والی کچھ بڑے اداروں کو کچھ سہولیات دی گئی۔دہلی ہائی کورٹ نے بدھ کی شب مرکز کو حکم دیا کہ فوری طور پر یہاں کووڈ۔19 کے مریضوں کے علاج میں گیس کی قلت کا سامنا کرنے والے اسپتالوں کو فوری طور پر آکسیجن فراہم کیاجائے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Apr 23, 2021 10:13 AM IST