உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مظفر نگر: پانچ خاندانوں کے 26 اراکین نے کی ہندو مذہب میں واپسی، 15 سال پہلے اپنایا تھا مذہب اسلام

    مظفر نگر: پانچ خاندانوں کے 26 اراکین نے کی ہندو مذہب میں واپسی، 15 سال پہلے اپنایا تھا مذہب اسلام

    مظفر نگر: پانچ خاندانوں کے 26 اراکین نے کی ہندو مذہب میں واپسی، 15 سال پہلے اپنایا تھا مذہب اسلام

    Muzaffarnagar Religion Change: اترپردیش کے مظفر نگر (Muzaffarnagar) میں ہندو مذہب کو چھوڑ کر اسلام اپنانے والوں کے ذریعہ اب پھر ہندو مذہب میں واپسی کی خبر ہے۔ پیر کے روز مظفر نگر ضلع کے بگھرا بلاک میں واقع یوگا سادھنا آشرم میں مہنت سوامی یشویر جی مہاراج کے ذریعہ گزشتہ کچھ مہینوں میں تقریباً 60 لوگوں کی ہندو مذہب میں واپسی کرائی گئی ہے۔

    • Share this:
      مظفر نگر: اترپردیش کے مظفر نگر (Muzaffarnagar) میں ہندو مذہب کو چھوڑ کر مذہب اسلام اپنانے والوں کے ذریعہ اب پھر ہندو مذہب میں واپسی کی خبر ہے۔ پیر کے روز مظفر نگر ضلع کے بگھرا بلاک میں واقع یوگا سادھنا آشرم میں مہنت سوامی یشویر جی مہاراج کے ذریعہ گزشتہ کچھ مہینوں میں تقریباً 60 لوگوں کی ہندو مذہب میں واپسی کرائی گئی ہے۔ ہندو مذہب میں واپسی کے اسی ضمن میں آج سہارنپور کی پانچ فیملی کے 26 اراکین کی آشرم میں پوجا پاٹھ کراکر جنیئو پہناکر پورے رسوم کے ساتھ مسلم مذہب سے ہندو مذہب میں واپسی کرائی گئی۔

      مذہب تبدیلی کرنے والوں نے کہی یہ بات

      اس بارے میں مذہب میں واپسی کرنے والے عارف سے سدھارتھ بنے شخص نے بتایا کہ وہ سہارنپور ضلع کا رہنے والا ہے اور تقریباً 15 سال قبل ان کے اہل خانہ نے کسی کے بہکاوے میں آکر ہندو مذہب چھوڑ کر مذہب اسلام اپنا لیا تھا، لیکن آج پھر سے اپنے سناتن دھرم میں آکر انہیں بہت خوشی محسوس ہو رہی ہے۔ وہیں نازیہ سے سونیا بنی خاتون نے بتایا آج اپنے مذہب میں واپسی کرکے کافی خوشی ہو رہی ہے۔

      اب تک 60 لوگوں کی ہوئی ہندو مذہب میں واپسی

      وہیں اس بارے میں آشرم کے مہنت سوامی یشویر جی مہاراج نے بتایا کہ جو بھی اپنی مرضی سے یہاں مذہب میں واپسی کے لئے آتا ہے، اس کا پورے رسم ورواج سے پوجا کراکر ہندو مذہب میں واپسی کرائی جاتی ہے۔ اب تک تقریباً 60 لوگوں کو مذہب اسلام سے ہندو مذہب میں اور 7 افراد کو عیسائی مذہب سے ہندو مذہب میں واپسی کرائی گئی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا- یوپی میں دہشت گردی اور جناح حامی سے ہے مقابلہ، بی جے پی مضبوط بوتھ کے ساتھ تیار

      پہلے بھی آیا ہے اس طرح کا معاملہ

      اترپردیش واقع مظفر نگر (Muzaffarnagar) میں اس سے قبل بھی مذہب تبدیلی (Religious Conversion) کا معاملہ سامنے آیا تھا۔ حالانکہ بعد میں الزام لگانے والی خاتون نے مجسٹریٹ کے سامنے دعویٰ کیا تھا کہ انہوں نے کچھ ہندو تنظیموں کے دباو میں آکر معاملہ درج کرایا تھا۔ 24 سالہ سکھ خاتون نے دو مسلم بھائیوں کے خلاف اپنے الزامات کو واپس لے لیا، جن پر آبروریزی اور دھوکہ دہی کا معاملہ درج کیا گیا ہے۔ خاتون کی شکایت پر ہی مذہب تبدیلی قانون کے تحت دفعات بھی لگائی گئی ہیں۔ خاتون نے مجسٹریٹ کے سامنے سبھی الزامات سے انکار کیا۔ پولیس کے مطابق، خاتون نے دعویٰ کیا کہ اس نے کچھ ہندو تنظیموں کے دباو کے بعد شکایت درج کرائی تھی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: