ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہندواڑہ میں دہشت گردوں نے کیا سیکورٹی اہلکاروں پر حملہ، تین سی آر پی ایف جوان شہید

ہندواڑہ کے ہی کرال گنڈ علاقے کے ونگم میں سیکورٹی اہلکاروں (Security Forces) کے ایک قافلے پر دہشت گردانہ حملہ میں تین سی آرپی ایف جوان (CRPF personnel) شہید ہوگئے ہیں۔

  • Share this:
ہندواڑہ میں دہشت گردوں نے کیا سیکورٹی اہلکاروں پر حملہ، تین سی آر پی ایف جوان شہید
ہندواڑہ میں دہشت گردوں نے کیا سیکورٹی اہلکاروں پر حملہ، تین سی آر پی ایف جوان شہید

ہندواڑہ: جموں وکشمیر (Jammu-Kashmir) کےکپواڑہ ضلع کے ہندواڑہ (Handwara) میں ہفتہ کو دہشت گردانہ مڈبھیڑ (Terrorist Encounter) کے دوران شہید ہوئے دو افسران سمیت 5 جوانوں کے بعد آج ہندواڑہ کے ہی کرال گنڈ علاقےکے ونگم میں سیکورٹی اہلکاروں (Security Forces) کے ایک قافلے پر دہشت گردانہ حملہ میں تین سی آرپی ایف جوان (CRPF personnel) شہید ہوگئے ہیں۔ ذرائع نے بتایا ہےکہ دہشت گردوں (Terrorists) نے سیکورٹی اہلکاروں پر ونگم اسٹاپ کے پاس گولی باری کی، جہاں پر مشترکہ سیکورٹی اہلکاروں (joint security forces) نے ناکہ بندی کر رکھی تھی۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ اس حملے میں کچھ سیکورٹی اہلکار زخمی ہوئے تھے، جس میں سے تین جوان زخموں سے تاب نہ لاکر دم توڑ گئے۔




حملہ آور دہشت گردوں کو پکڑنےکےلئےگھیرا بندی

ذرائع نے یہ بھی بتایا ہےکہ حملہ آوروں کو پکڑنے کےلئے علاقے کی گھیرا بندی (cordoned off) کرلی گئی ہے۔ اس سے پہلے پیرکو ہی ہندوستانی فوج کے سربراہ جنرل ایم ایم نروے نےکہا ہےکہ انہیں ہندواڑہ میں دہشت گردوں سے شہریوں کی جان بچانےکے دوران زندگی کی قربانی دینے والے پانچوں سیکورٹی اہلکاروں پر ملک کو فخر ہے۔ انہوں نےکرنل آشوتوش شرما کی تعریف کرتے ہوئےکہا کہ وہ سامنے سے گئے تاکہ شہریوں کو نقصان نہ ہو۔ انہوں نے یہ بھی کہا، ’میں ہماری فوج (Army) اور جموں وکشمیر (Jammu-Kashmir) کے زبردست بہادروں کے تئیں اپنی دلی تعزیت اور اظہار تشکر کرنا چاہتا ہوں۔

ذرائع نے یہ بھی بتایا ہےکہ حملہ آوروں کو پکڑنے کے لئے علاقے کی گھیرا بندی کرلی گئی ہے۔
ذرائع نے یہ بھی بتایا ہےکہ حملہ آوروں کو پکڑنے کے لئے علاقے کی گھیرا بندی کرلی گئی ہے۔


اس سے قبل جموں وکشمیر کے ہندواڑہ میں ہندوستانی فوج نے خفیہ اطلاع کی بنیاد پر ایک آپریشن کیا اور دو خونخوار دہشت گردوں کو مار گرایا۔ ان میں سے ایک ہی شناخت لشکر طیبہ کے ٹاپ کمانڈر حیدر کے طور پر ہوئی ہے۔ ہندواڑہ میں ہوئے انکاونٹر (Handwara encounter) میں ہندوستانی فوج کے 21 قومی رائفلس کے کمانڈنگ آفیسر کرنل آشوتوش شرما، میجر انوج سود، نائک راجیش اور لانس نائک دنیش اور جموں وکشمیر پولیس کے سب انسپکٹر شکیل قاضی شہید ہوگئے۔ اس انکاونٹر میں شہید ہوئے ہندوستانی فوج کے جوانوں نے اپنی بہادری کے ساتھ سوجھ بوجھ کی ایک شاندار مثال پیش کی۔ آئیے جانتے ہیں اس انکاونٹر کی پوری کہانی۔

گھرمیں چھپے ہوئے تھے دہشت گرد

ہندوستانی فوج کو ہندواڑہ کے چنجمولہ علاقے میں ایک گھر میں دہشت گردوں کے چھپنے کی اطلاع ملی تھی۔ اس گھر میں دہشت گردوں نےکئی لوگوں کو قیدی بنا کر رکھا ہوا تھا۔ خفیہ اطلاع ملنےکےبعد فوج کو اس بات کا اندازہ نہیں تھا کہ آخر کار دہشت گردوں کی تعداد کتنی ہے۔ خفیہ اطلاع ملنے کے بعد ہفتہ کی شام کو 21 قومی رائفلس، سی آرپی ایف اور جموں وکشمیر پولیس کی ایس اوجی ٹیم نے مشترکہ طور پر تلاشی مہم چلائی۔ علاقے میں فوجیوں کو دیکھ کر دہشت گردوں نے فائرنگ شروع کردی۔ اس کے بعد فوج کی طرف سے بچاو میں فائرنگ کی گئی۔
First published: May 04, 2020 07:25 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading