ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

بڑی خبر: جموں وکشمیر کے راجوری میں لشکرِ طیبہ کے تین کارکن گرفتار

آئی جی پی جموں مکیش سنگھ نے کہا ہے کہ جموں وکشمیر کے راجوری سے سیکورٹی فورسیز نے لشکرطیبہ کے تین کارکن کو گرفتار کیا ہے۔ اے کے 56 رائفل سمیت اسلحہ، گولہ بارود اور ایک لاکھ روپئے کی نقدی ضبط کی گئی ہے۔

  • Share this:
بڑی خبر: جموں وکشمیر کے راجوری میں لشکرِ طیبہ کے تین کارکن گرفتار
بڑی خبر: جموں وکشمیر کے راجوری میں لشکرِ طیبہ کے تین کارکن گرفتار

جموں: جموں و کشمیر پولیس نے ضلع راجوری میں جنوبی کشمیر سے تعلق رکھنے والے تین مشتبہ جنگجوؤں کو گرفتار کر کے ان کی تحویل سے اسلحہ و گولہ باردو برآمد کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ جموں پولیس زون کے انسپکٹر جنرل مکیش سنگھ نے یو این آئی کو بتایا کہ پولیس اور سیکورٹی فورسز نے ضلع راجوری میں تین مسلح جنگجوؤں کو گرفتار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ تینوں جنگجو لشکر طیبہ نامی جنگجو تنظیم سے وابستہ ہیں اور کشمیر سے راجوری آئے ہوئے تھے۔


دریں اثنا پولیس ذرائع نے بتایا کہ پولیس اور سیکورٹی فورسز نے راجوری کے گورین بالا علاقے میں 18 اور 19 ستمبر کی شب ایک آپریشن کے دوران تین جنگجوؤں کو گرفتار کیا اور ان کی تحویل سے اسلحہ و گولہ بارود بھی برآمد کیا۔ انہوں نے گرفتار شدگان کی شناخت راہل بشیر عرف ایان بھائی ساکن پلوامہ، عامر جان عرف حمزہ ساکن کاکہ پورہ پلوامہ اور حافظ یونس وانی عرف زبیر ساکن شوپیاں کے بطور کی ہے۔ گرفتار شدگان کی تحویل سے برآمد شدہ اسلحے میں 2 اے کے 56 رائفلز، 6 اے کے میگزین، 2 چینی پستول، 3 پستول میگزین، 4 گرینیڈ اور ایک لاکھ روپے نقدی شامل ہیں۔


نیوز ایجنسی یو این آئی اردو کے ان پُٹ کے ساتھ۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Sep 19, 2020 03:13 PM IST