உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K: سرحد پر دراندازی کی سازش ناکام، BSF نے مار گرائے 3 پاکستانی درانداز

    پاکستان کے 3 دراندازوں کو بی ایس ایف جوانوں نے کیا ڈھیر۔

    پاکستان کے 3 دراندازوں کو بی ایس ایف جوانوں نے کیا ڈھیر۔

    اس سے قبل 31 جنوری کو، بی ایس ایف نے ایک پاکستانی شہری کو گجرات کے کچھ ضلع کے خلیجی علاقے سے ہندوستان-پاکستان سمندری سرحد پر گشت کے دوران پکڑا تھا۔ اس کے علاوہ تین ماہی گیر کشتیاں بھی ضبط کر لی گئیں تھیں۔ بتایا گیا کہ خلیجی علاقے میں بی ایس ایف کی گشتی کشتیوں کو دیکھ کر تقریباً چار ماہی گیر پاکستان کی طرف فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے تھے۔

    • Share this:
      سرینگر:بارڈر سیکورٹی فورس (BSF)کے اہلکاروں نے جموں و کشمیر (Jammu Kashmir) میں لائن آف کنٹرول پر پاکستان(Pakistan) کی طرف سے دراندازی کو ناکام بنا دیا ہے۔ جموں و کشمیر کے سامبا سیکٹر میں ہفتہ کی رات پاکستان سے 3 درانداز ہندوستانی سرحد میں داخل ہونے کی کوشش کر رہے تھے۔ اس دوران وہاں تعینات بی ایس ایف اہلکاروں نے تینوں کو ہلاک کر دیا۔ جس کے بعد علاقے میں بڑے پیمانے پر سرچ آپریشن کیا جا رہا ہے۔

      ہفتہ کو جموں و کشمیر میں سیکورٹی فورسز کے ساتھ انکاونٹر میں لشکر طیبہ کے دو دہشت گرد مارے گئے تھے۔ ایک پولیس اہلکار نے بتایا کہ دہشت گردوں کی موجودگی کے بارے میں مخصوص اطلاع پر کارروائی کرتے ہوئے، سیکورٹی فورسز نے رات کے وقت شہر کے زکورا علاقے میں محاصرے اور تلاشی کی کارروائی شروع کی۔ انہوں نے بتایا تھا کہ جب سیکورٹی فورسز علاقے میں تلاشی مہم چلا رہے تھے، تبھی وہاں چھپے دہشت گردوں نے ان پر فائرنگ کردی۔ انہوں نے کہا کہ سیکورٹی فورسز نے جوابی کارروائی کی۔ اہلکار نے بتایا کہ تصادم میں دو دہشت گرد مارے گئے اور ان کی لاشیں موقع سے برآمد کی گئیں۔

      اس سے قبل 31 جنوری کو، بی ایس ایف نے ایک پاکستانی شہری کو گجرات کے کچھ ضلع کے خلیجی علاقے سے ہندوستان-پاکستان سمندری سرحد پر گشت کے دوران پکڑا تھا۔ اس کے علاوہ تین ماہی گیر کشتیاں بھی ضبط کر لی گئیں تھیں۔ بتایا گیا کہ خلیجی علاقے میں بی ایس ایف کی گشتی کشتیوں کو دیکھ کر تقریباً چار ماہی گیر پاکستان کی طرف فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے تھے جبکہ ایک ماہی گیر کو پکڑ لیا گیا تھا۔ بتایا گیا ہے کہ بی ایس ایف نے پاکستانی ماہی گیری کی کشتیوں کی نقل و حرکت دیکھی تھی، جس میں چار سے پانچ ماہی گیر سوار تھے۔ وہ سمندر کی ہنگامہ خیز صورتحال کا فائدہ اٹھا کر ہندوستانی حدود میں داخل ہونے کی کوشش کر رہے تھے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: