ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

مدھیہ پردیش :گنج باسودا حادثہ میں 4 افراد کی لاشیں برآمد ، بچاؤ اوراحت کے کام جاری

مدھیہ پردیش کے میڈیکل ایجوکیشن کے وزیر وشواس سارنگ نے بتایا تھا کہ آدھی رات سے پہلے ہی بہت سارے لوگوں کونکلا گیاہے۔ جس میں 13 افراد کو فوری طور پر اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ سی ایم شیوراج سنگھ بھی اس واقعے پر براہ راست نگاہ رکھے ہوئے ہیں۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش :گنج باسودا حادثہ میں 4 افراد کی لاشیں برآمد ، بچاؤ اوراحت کے کام جاری
جمعرات کی دیر شام کھیلتے ہوئے ایک لڑکی کنویں میں گر گئی تھی

مدھیہ پردیش کے ودیشہ (Vidisha)میں آٹھ سالہ بچی کے ریسکیو آپریشن کو دیکھتے ہوئے قریب 40 افراد کنویں(Well) میں گر پڑے۔ اس حادثے میں 4 افراد کی موت ہوگئی ہے جبکہ 11 افراد تاحال لاپتہ ہیں۔ اب تک 16 افراد کو نکالا جا چکا ہے۔ جمعرات کی رات دیر گئےجانکاری دیتے ہوئے ، ایم پی پولیس نے بتایا کہ بچی کے ریسکیو آپریشن کے دوران لوگوں کا ہجوم کنویں کے آس پاس جمع ہوگیا تھا۔ لوگوں کے ہجوم کی وجہ سے کنویں پر دباؤ بہت بڑھ گیا تھا جس کے وجہ سے کنویں کی حصار بندی منہدم ہوگئی ۔ جس کے بعد 40 افراد قریب 40 فٹ گہرے کنویں میں گر پڑے تھے۔ اس واقعے کے بعد علاقے میں ہلچل مچی ہوئی ہے۔


سی ایم شیو راج سنگھ چوہان (CM Shivraj Singh Chauhan)نے اس حادثے پر غم کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گنج باسودہ (Ganj Basoda)حادثے میں لوگوں کی ہلاکت کی افسوسناک خبر موصول ہوئی۔ ان کی لاشیں نکال دی گئیں ہیں۔ تمام ہلاک ہونے والوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے ، وزیراعلیٰ نے کہا کہ ابھی بھی امدادی اور بچاؤ کام جاری ہے۔ وہ اس کی مستقل نگرانی کر ر ہے ہیں۔



مدھیہ پردیش کے میڈیکل ایجوکیشن کے وزیر وشواس سارنگ نے بتایا تھا کہ آدھی رات سے پہلے ہی بہت سارے لوگوں کو نکالا گیاہے۔ جس میں 13 افراد کو فوری طور پر اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ سی ایم شیوراج سنگھ بھی اس واقعے پر براہ راست نگاہ رکھے ہوئے ہیں۔ اس حادثے کے بعد ، انہوں نے وزیر وشواس سارنگ کو ریسکیو آپریشن کی نگرانی کا حکم دیا۔ اس کے ساتھ ہی اس حادثے کی اعلی سطح پر تحقیقات کے احکامات بھی دئے گئے ہیں۔

مقامی باشندوں کے مطابق جمعرات کی دیر شام کھیلتے ہوئے ایک لڑکی کنویں میں گر گئی تھی۔ جب اس حادثے کی خبر پورے گاؤں میں پھیل گئی ، کنواں کے آس پاس ایک بہت بڑا ہجوم جمع ہوگیا۔ بھوپال کے ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل پولیس ، سائی منوہر نے بتایا کہ بچی کو بچانے کی کوشش کرتے ہوئے جمع ہوئے ہجوم کے سبب کنویں کی حد اچانک ٹوٹ گئی اور 40 افراد 40 فٹ گہری کنویں میں گر پڑے۔


پولیس افسر کا کہنا ہے کہ اس حادثے کے بعد آٹھ سالہ بچی اور باقی 17 افراد کی حالت کے بارے میں کچھ نہیں کہا جاسکتا۔ انہوں نے کہا کہ یہ واضح نہیں ہے کہ آیا دیوار گرنے اور لوگوں کی بڑی تعداد کے گرنے کے سبب لڑکی کو چوٹ پہنچی ہے۔ پولیس افسر نے بتایا کہ بہت سارے لوگوں کو نکال لیا گیا ہے۔ لیکن پھر بھی بہت سے لوگوں کے ملبے تلے دبے ہونے کا خدشہ ہے۔

ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ پولیس ، ودیشہ ، سنجے ساہو نے بتایا کہ قریب 10 افراد کنویں میں پھنس گئے تھے۔ ابتدائی اطلاعات کے مطابق ریسکیو آپریشن کے دوران ٹریکٹر کنویں میں گرنے کے باعث امدادی کارروائی کچھ دیر کے لئے روک دی گئی۔ لوگوں کو نکالنے کا کام ابھی بھی جاری ہے۔
Published by: Mirzaghani Baig
First published: Jul 16, 2021 08:27 AM IST