ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

سفر کولکاتہ کے 192 سال مکمل ہونے پر مغربی بنگال اردو اکیڈمی مرزا غالب کو کرے گی یاد ، بنایا یہ پروگرام

پروگرام میں مصوری کی نماٸش کا بھی اہتمام کیا جاٸے گا ، جس میں وزیر اعلی ممتا بنرجی کی پینٹنگ بھی شامل ہوگی ۔ سمینار میں ملک و بیرونی ملکوں کے اسکالرس بھی شرکت کریں گے ۔

  • Share this:
سفر کولکاتہ کے 192 سال مکمل ہونے پر مغربی بنگال اردو اکیڈمی مرزا غالب کو کرے گی یاد ، بنایا یہ پروگرام
سفر کولکاتہ کے 192 سال مکمل ہونے پر مغربی بنگال اردو اکیڈمی مرزا غالب کو کرے گی یاد ، بنایا یہ پروگرام

مرزا اسد اللہ خاں غالب اردو دنیا کا ایک ایسا نام ہے ، جن کی شاعری کا اعتراف ہر زبان میں کیا گیا ہے ۔ آج بھی غالب کی غزل سننے کا ذوق لوگوں میں برقرار ہے ۔ غزل کی محفل غالب کی شاعری کے بغیر ادھوری سمجھی جاتی ہے ۔ یہی وجہ کے ادبی دنیا میں نہ صرف غالب پر کام کیا گیا ۔ بلکہ آج بھی تحقیق کا سفر جاری ہے ۔ غالب نے اپنی پینشن کیلئے کولکاتہ کا سفر بھی کیا تھا ۔  حالانکہ کولکاتہ کے سفر میں اس شہر کے لوگوں کی سرد مہری پر نالاں بھی ہوٸے ، لیکن اس شہر و یہاں کی تہذیب نے غالب کو کافی متاثر کیا ، جس کا اظہار انہوں نے اپنی شاعری میں بھی کیا ہے ۔


مشہور شعر ہے کہ " کلکتے کا جو تو نے ذکر کیا اے ہم نشیں ، اک تیر میرے سینے پہ مارا کے ہاٸے ہاٸے " ۔ غالب کے اسی  کولکاتہ سفر کے 192 سال مکمل ہونے پر مغربی بنگال اردو اکیڈمی "بیاد غالب" کے عنوان سے مرزا غالب کو خراج عقیدت پیش کرے گی  ۔ کولکاتہ میں منعقد ہونے والے 5 روزہ پروگرام میں سمینار ، ڈرامے ، غزل گوٸی اور مشاعرے کا انعقاد کیا جاٸے گا ۔ اکیڈمی کے رکن ایم پی ندیم الحق نے پروگرام کو اہم بتاتے ہوٸے کہا کہ غالب کی کولکاتہ آمد کے دوران بھی اس زمانے میں ازادی کے نعرے لگاٸے جارہے تھے اور اج بھی لگاٸے جارہے ہیں ۔


پروگرام میں مصوری کی نماٸش کا بھی اہتمام کیا جاٸے گا ، جس میں وزیر اعلی ممتا بنرجی کی پینٹنگ بھی شامل ہوگی ۔ سمینار میں ملک و بیرونی ملکوں کے اسکالرس بھی شرکت کریں گے ۔ اکیڈمی کی سیکریٹری نزہت زینب نے پروگرام میں اردو داں طبقے سمیت غیر اردو داں طبقے کی شمولیت کو اہم قرار دیا ۔

First published: Feb 19, 2020 08:08 PM IST