ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی فسادات : مزید 6 ملزمین کی ضمانت منظور ، عائد کئے گئے ہیں یہ سنگین الزامات

سرکاری وکیل نے ملزمین کی ضمانت پر رہائی کی سخت لفظوں میں مخالفت کرتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ ملزمین کی ضمانت پر رہائی سے امن میں خلل پڑسکتا ہے ، لیکن عدالت نے دفاعی وکلاکے دلائل سے اتفاق کرتے ہوئے ملزمین کی ضمانت عرضداشت منظور کرلی ۔

  • Share this:
دہلی فسادات : مزید 6 ملزمین کی ضمانت منظور ، عائد کئے گئے ہیں یہ سنگین الزامات
دہلی فسادات : مزید 6 ملزمین کی ضمانت منظور ، عائد کئے گئے ہیں یہ سنگین الزامات ۔ فائل فوٹو

جمعیۃ علماء ہند کی کوششوں سے دہلی فساد میں مبینہ طور پرماخوذ  کئے گئے مسلم ملزمان کی ضمانت عرضداشتوں کی منظوری کا سلسلہ جاری ہے۔ گزشہ دو دونوں میں کڑکڑڈوما سیشن عدالت نے ملزمین شاداب احمد ، راشد سیفی ، شاہ عالم اور محمد عابد کو ایف آئی آر نمبر 117/20 (دیال پور پولس اسٹیشن) اور ارشد قیوم ، شاہ عالم کو ایف آئی آرنمبر 98/93/2020 مقدمہ میں مشروط ضمانت پر رہا کئے جانے کے احکامات جاری کئے ۔ جمعیۃ علماء کے توسط سے ابتک دہلی ہائی کورٹ اور سیشن عدالت سے 16 ضمانت عرضداشتیں منظور ہوچکی ہیں ۔


ملزمین شاداب احمد ، راشد سیفی ، شاہ عالم اور محمد عابد کو ایڈیشنل سیشن جج ونود یادو نے پچیس ہزار روپے کے ذاتی مچلکہ پر ضمانت پررہا کئے جانے کے احکامات جاری کئے ۔ سرکاری وکیل نے ملزمین کی ضمانت پر رہائی کی سخت لفظوں میں مخالفت کرتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ ملزمین کی ضمانت پر رہائی سے امن میں خلل پڑسکتا ہے ، لیکن عدالت نے دفاعی وکلاکے دلائل سے اتفاق کرتے ہوئے ملزمین کی ضمانت عرضداشت منظور کرلی ۔


جمعیۃ علماء ہند کی جانب سے ملزمین کی پیروی ایڈوکیٹ ظہیر الدین بابر چوہان او ر ان کے معاون وکیل ایڈوکیٹ دنیش نے کی اور عدالت کو بتایا کہ اس معاملے میں پولس کی جانب سے چار ج شیٹ داخل کی جاچکی ہے اور ملزمین کے خلاف الزامات پر ڈائریکٹ ثبوت نہیں ہیں ، لہذا انہیں ضمانت پر رہا کیا جانا چاہئے ۔ ملزمین پر تعزیرات ہند کی دفعات 147,148,149,436, 427 (خطرناک ہتھیاروں سے فساد برپا کرنا،آتش گیر مادہ یا آگ زنی سے گھروں کو نقصان پہنچانا،غیر قانونی طور پر جمع ہونا)اور پی ڈی پی پی ایکٹ کی دفعہ 3,4 (عوامی املاک کوآتش گیر مادہ یا آگ زنی سے نقصان پہنچانا) کے تحت مقدمہ قائم کیا گیا ہے اور ملزمین گذشتہ تین ماہ سے زائد عرصہ سے جیل میں مقید ہیں۔


صدر جمعیۃ علماء ہند مولانا سید ارشد مدنی نے ان تمام لوگوں کی ضمانت عرضیوں کی منظوری پر اطمینان کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ محض ضمانت پررہائی ہی ہمارا مقصد نہیں ہے ، بلکہ ہم چاہتے ہیں کہ دہلی فساد میں جن بے قصوروں کو ملزم بناکر جیل کی سلاخوں کے پیچھے پہنچادیا گیا ہے ، ان کو قانونی طورپر انصاف ملے اور ان کی باعزت رہائی ہو ۔

انہوں نے مزید کہا کہ جمعیۃ علما ہند کی قانونی مدد کا حقیقی مقصد یہی ہے کہ تمام بے گناہ لوگوں کو بہرصورت قانونی مدد پہنچا کر انصاف دلایا جائے ۔ اس سلسلہ میں جمعیۃعلما ء ہند کو مسلسل کامیابی حاصل ہورہی ہے اور ہمارے وکلا کی جدوجہد رنگ لارہی ہے ، جس کے نتیجہ میں مہینوں سے جیلوں میں بند افراد کی ضمانت کی عرضیاں سرکاری وکیل کی پرزورمخالفت کے باوجود منظورہورہی ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Oct 23, 2020 07:07 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading