ہوم » نیوز » وطن نامہ

ٹیکہ کاری مہم : سات لوگوں کو دی گئی کوویکسین کی تیسری ڈوز ، جانچ کی جائے گی امیونٹی پاور

Corona Vaccination: اس کو بوسٹر ڈوز کہا جارہا ہے ۔ ایسا یہ دیکھنے کیلئے کیا گیا ہے کہ کیا اس سے جسم میں طویل عرصہ کیلئے امیونٹی ڈیولپ ہوسکتی ہے ۔

  • Share this:
ٹیکہ کاری مہم : سات لوگوں کو دی گئی کوویکسین کی تیسری ڈوز ، جانچ کی جائے گی امیونٹی پاور
ٹیکہ کاری مہم : سات لوگوں کو دی گئی کوویکسین کی تیسری ڈوز ، جانچ کی جائے گی امیونٹی پاور(File pic)

نئی دہلی : ملک میں بڑھتے کورونا وائرس کی روک تھام اور اس سے نمٹنے کیلئے سائنسداں مسلسل کوششیں کررہے ہیں ۔ دو ملکی کورونا ویکسین کی ٹیکہ کاری مہم بھی چل رہی ہے ۔ لوگوں کو دو ڈوز دی جارہی ہیں ۔ تاہم یکم مئی سے ٹیکہ کاری مہم کے تیسرے مرحلہ کی شروعات سے پہلے ایک اہم ریسرچ کی گئی ہے ۔ اس کے تحت چنئی میں سات لوگوں کو پیر کو کورونا ویکسین کوویکسین کی تیسری ڈوز دی گئی ۔ اس کو بوسٹر ڈوز کہا جارہا ہے ۔ ایسا یہ دیکھنے کیلئے کیا گیا ہے کہ کیا اس سے جسم میں طویل عرصہ کیلئے امیونٹی ڈیولپ ہوسکتی ہے ۔


ٹائمس آف انڈیا کی ایک رپورٹ کے مطابق چنئی کے ایس آر ایم میڈیکل کالج اسپتال اور ریسرچ سینٹر میں سات لوگوں کو کوویکسین کی تیسری ڈوز دی گئی ہے ۔ انہیں چھ مہینے پہلے ویکسین کی دوسری ڈوز دی گئی تھی ۔ اس ریسرچ کے تحت نئی دہلی ، پٹنہ ، حیدرآباد جیسے شہروں کے 8 مراکز میں کل 190 لوگوں کو ویکسین کی تیسری ڈوز دی جانی ہے ۔ ان میں سے تقریبا 20 سے 25 لوگ ایس آر ایم میں ہی یہ ڈوز لیں گے ۔


کوویکسین کو حیدرآباد کی کمپنی بھارت بایوٹیک نے انڈین کاونسل آف میڈیکل ریسرچ اور نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف وائرولاجی کے ساتھ مل کر بنایا ہے ۔ اسپتال میں اس ریسرچ کے سربراہ ڈاکٹر ستیہ جیت موہاپاترا کے مطابق ریسرچ میں شامل سبھی لوگ 18 سے 55 سال کے درمیان کے ہیں ۔ ان پر اگلے چھ مہینے تک نگرانی رکھی جائے گی ۔ ان سبھی لوگوں کے ایک مہینے ، تین مہینے اور چھ مہینے کے بعد خون کے نمونے لئے جائیں گے ۔ اس کے بعد اس میں امیونٹی صلاحیت کی جانچ کی جائے گی ۔


بتادیں کہ دو اپریل کو ڈی سی جی آئی کی ماہرین کی کمیٹی نے بھارت بایوٹیک کو کورونا ٹیکہ کے کلینیکل ٹرائل میں کچھ رضاکاروں کو ویکسین کی تیسری خوراک دینے کو منظوری دی تھی ۔ بھارت بایوٹیک نے ڈی سی جی آئی کی ایس ای سی کو دوسری ڈوز کے چھ مہینے بعد بوسٹر ڈوز دینے کیلئے دوسرے مرحلہ کے کلینیکل ٹرائل کو لے کر ترمیم شدہ رپورٹ پیش کی تھی ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 27, 2021 04:55 PM IST