உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    خاتون نے پرائیوٹ پارٹ میں چھپائی 6 کروڑ کی ڈرگس: نکالنے میں ڈاکٹروں کو لگے 11 دن، ایکس رے کرنے پر باڈی میں دکھی تھی ہیروئین کی تھیلیاں

    شارجہ سے جئے پور آئی ایک خاتون نے اپنے پرائیوٹ پارٹ میں چھپائے تھے ڈرگس کے کیپسول۔

    شارجہ سے جئے پور آئی ایک خاتون نے اپنے پرائیوٹ پارٹ میں چھپائے تھے ڈرگس کے کیپسول۔

    میڈیکل ٹیم نے معائنہ کیا تو معلوم ہوا کہ خاتون اپنے جسم میں تقریباً 88 کیپسول لے کر آئی تھی۔ یہ خاتون دبئی کے شارجہ سے یہ منشیات لے کر جے پور پہنچی تھی۔ خاتون سے کیپسول برآمد ہوا اور اسے جمعرات کو جیل بھیج دیا گیا۔

    • Share this:
      جئے پور: جے پور میںDRI (ڈائریکٹوریٹ ریونیو سروسز) نے ایک بڑی کارروائی کرتے ہوئے سوڈانی خاتون سے 60 ملین مالیت کی منشیات برآمد کی ہے۔ وہ ان دوائیوں کو پرائیویٹ پارٹ (ریکٹم ویجائنا) اور پیٹ میں چھپا کر لائی تھی۔ اسے نکالنے میں تقریباً 11 دن لگے۔

      میڈیکل ٹیم نے معائنہ کیا تو معلوم ہوا کہ خاتون اپنے جسم میں تقریباً 88 کیپسول لے کر آئی تھی۔ یہ خاتون دبئی کے شارجہ سے یہ منشیات لے کر جے پور پہنچی تھی۔ خاتون سے کیپسول برآمد ہوا اور اسے جمعرات کو جیل بھیج دیا گیا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Srinagar میں منشیات کے خلاف مشن واپسی، اس کاروبار سے حاصل شدہ جائیداد بھی اب ہوگی ضبط

      معلومات کے مطابق یہ سوڈانی خاتون 19 فروری کو شارجہ سے جے پور ایئرپورٹ پہنچی تھی۔ انٹیلی جنس سے اطلاعات ملی تھیں کہ خاتون بھاری مقدار میں ہیروئن لے کر آئی تھی۔ خاتون سے پوچھ گچھ کی گئی تو اس نے کچھ نہیں بتایا۔ تفتیش پر اس کی پرائیویٹ پارٹ میں منشیات کے کیپسول ہونے کی تصدیق ہوئی۔ ڈی آر آئی حکام سے میڈیکل ٹیسٹ کی اجازت لی گئی۔

      معلوم ہوا کہ خاتون کے پرائیویٹ پارٹ میں کیپسول ہے۔ اسے نکالنے کا عمل شروع کیا گیا۔ اسی دوران ایکسرے بھی نکالے گئے۔ اس میں کچھ تھیلیاں تھیں۔ خاتون کو ایس ایم ایس ہسپتال میں داخل کرایا گیا۔ 11 دن کے بعد خاتون کے پرائیویٹ پارٹ اور پیٹ سے تقریباً 88 کیپسول نکالے گئے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      پیہرمیں بیوی نے کی خودکشی تواُدھرشوہر نے بھی لگالی پھانسی،4گھنٹوں میں دونوں کی موت

      11 دن میں نکالے 30 سے زیادہ کیپسول
      خاتون نے اپنے پیٹ میں 30 سے ​​زائد کیپسول چھپا رکھے تھے۔ ہیروئن کو لکویڈ میں تبدیل کرکے پلاسٹک کے تھیلیوں کو کیپسول بنایا جاتا تھا۔ ڈاکٹروں کی ٹیم نے خاتون کو 11 دن تک زیر نگرانی رکھا۔ اس کے بعد پیٹ سے 30 کیپسول نکالے گئے۔ خاتون کو دوبارہ طبی امداد دی گئی۔ جمعرات کو طبیعت ٹھیک ہونے کے بعد اسے دوبارہ عدالت میں پیش کیا گیا۔

      ایک کیپسول بھی پھٹ جاتا تو ہوجاتی تھی موت
      ڈاکٹرز کے مطابق خاتون نے کیپسول کی ریپنگ درست کی تھی، اگر پیٹ میں تیزاب کی وجہ سے ایک کیپسول بھی اگر پھٹ جاتا تو خاتون موقع پر ہی مر سکتی تھی۔ اس کے جسم میں تقریباً 9 گرام ہیروئن تھی۔ حکام کا کہنا تھا کہ اتنی مقدار میں منشیات کا جسم میں ہونا خطرناک ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: