ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کورونا متاثرین کی تعداد میں اضافہ کے باوجود میرٹھ سے راحت کی خبر ، 9 مریض ڈسچارج

میڈیکل کالج کے پرنسپل ڈاکٹر آر این گپتا نے لوگوں سے اپیل کی کہ کورونا متاثرین کے ٹھیک ہو جانے کا یہ مطلب نہیں ہے کہ اس کا خطرہ کم ہو گیا ہے ، بلکہ لوگوں کو ابھی بہت زیادہ احتیاط برتنے کی ضرورت ہے ۔

  • Share this:
کورونا متاثرین کی تعداد میں اضافہ  کے باوجود میرٹھ سے راحت کی خبر ، 9 مریض ڈسچارج
کورونا متاثرین کی تعداد میں اضافہ کے باوجود میرٹھ سے راحت کی خبر ، 9 مریض ڈسچارج

کورونا انفیکشن کے متاثر مریضوں کی بڑھتی تعداد کے باوجود متاثرین میں سے کئی مریضوں کی ٹیسٹ رپورٹ اب نیگیٹیو آنے سے کچھ راحت ضرور محسوس کی جا رہی ہے ۔ میرٹھ کے لالہ لاجپت رائے میڈیکل کالج میں زیر علاج  کورونا انفیکشن کے 9 مریضوں کی تیسری رپورٹ نیگیٹیو آنے کے بعد آج انہیں ڈسچارج کر دیا گیا ۔ ڈسچارج ہونے والوں میں وہ پہلا مریض بھی شامل ہے ، جس سے خاندان کے دیگر 18 افراد بھی کورونا انفیکشن کے شکار ہو گئے تھے ۔ کورونا انفیکشن سے لڑ کر صحتیاب ہونے والوں کو ڈسچارج کیے جانے کے بعد محکمہ صحت کے افسران اور میڈیکل ٹیم ممبران نے بھی راحت اور خوشی کا اظہار کیا ہے ۔


میڈیکل کالج کے پرنسپل ڈاکٹر آر این گپتا کا کہنا ہے کہ کورونا انفیکشن کے مریضوں کے صحتیاب ہوکر گھر لوٹنے سے میڈیکل اسٹاف میں بھی خوشی اور اطمینان نظر آ رہا ہے ۔ ڈاکٹر گپتا کے مطابق ابھی تک کورونا متاثرین کی تعداد میں ہو رہے اضافے سے میڈیکل کالج اسٹاف میں بھی بےچینی تھی لیکن 9 مریضوں کے ٹیسٹ رپورٹ نیگیٹیو آنے سے محکمہ صحت نے بھی راحت کی سانس لی ہے ۔ ڈاکٹر گپتا کے مطابق میڈیکل اسٹاف کا کام ان کی دیکھ بھال کرنا تھا اور وہ ٹیم نے بہتر طریقہ سے انجام دیا ہے ۔ جہاں تک سوال ان افراد کے ٹھیک ہونے کا ہے ، تو یہ مریض کی جسمانی قوت اور مرض سے لڑنے کی طاقت پر منحصر ہوتا ہے ۔


ڈاکٹر گپتا نے لوگوں سے اپیل کی کہ کورونا متاثرین کے ٹھیک ہو جانے کا یہ مطلب نہیں ہے کہ اس کا خطرہ کم ہو گیا ہے ، بلکہ لوگوں کو ابھی بہت زیادہ احتیاط برتنے کی ضرورت ہے ۔ لیکن اس خطرے سی گھبرانے کی ضرورت نہیں ۔ بلکہ اس سلسلے کو توڑنے کی ضرورت ہے ، جو ایک سے دوسرے اور تیسرے تک اس وائرس کے انفیکشن کو پھیلنے میں مددگار ثابت ہو رہا ہے ۔

First published: Apr 11, 2020 09:46 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading