علی گڑھ میں ایک مدرسہ ایسا بھی جہاں ایک ہی چھت کے نیچے نماز اور پوجا دونوں ہوتی ہے

سابق نائب صدر جمہوریہ ہند محمد حامد انصاری کی اہلیہ سلمیٰ انصاری نے علی گڑھ میں 19سال قبل ایک مدرسہ قائم کیا تھا جہاں آج ہزاروں طلباء بلا تفریق مذہب وملت تعلیم حاصل کررہے ہیں۔

Jul 16, 2019 06:12 PM IST | Updated on: Jul 16, 2019 06:33 PM IST
علی گڑھ میں ایک مدرسہ ایسا بھی جہاں ایک ہی چھت کے نیچے نماز اور پوجا دونوں ہوتی ہے

علی گڑھ میں ایک مدرسہ ایسا بھی ہے جہاں طلباءایک ہی چھت کے نیچے نماز پڑھتے ہیں اور پوجا بھی کرتے ہیں۔ غیر مسلم طلباءجہاں تعلیم کے ساتھ پوجا کرتے ہیں وہیں اسی جگہ پر مسلم طلبا نماز ادا کرتے ہیں۔ یہ خبر پڑھ  کر لوگوں کو حیرت تو ضرور ہو گی لیکن یہی سچ ہے۔

سابق نائب صدر جمہوریہ ہند محمد حامد انصاری کی اہلیہ سلمیٰ انصاری نے علی گڑھ میں 19سال قبل ایک مدرسہ قائم کیا تھا جہاں آج ہزاروں طلباء بلا تفریق مذہب وملت تعلیم حاصل کررہے ہیں۔ شروع سے ہی یہاں ہر مذہب کے طلباء کو داخلہ دیا جاتا ہے اور وہ اپنے مذہب کے حساب سے یہاں تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔ تاہم آج مدرسہ سرخیوں میں اس لئے بنا  ہوا ہے کہ سلمی انصاری وہاں اب مندر بھی تعمیر کروانے جارہی ہیں۔ فی الحال مدرسہ میں پوجا کے ساتھ ساتھ  نماز بھی ادا کی جارہی ہے ۔

Loading...

علی گڑھ کے مدرسہ چاچا نہرو میں بیگم سلمیٰ انصاری کے ذریعہ مندر کی تعمیر کے اعلان کے بعد یہ مدرسہ شدت پسندوں کے نشانہ پر آگیا ہے۔ لیکن مدرسہ میں طلباءکا پوجا کرنا اور نماز پڑھنا بدستور جاری ہے۔ ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ یہاں ایک ہی چھت کے نیچے طلباء ایک ساتھ نماز بھی ادا کر رہے ہیں اور ساتھ ہی پوجا بھی ہو رہی ہے۔

محمد کامران کی رپورٹ

Loading...