پاکستانی جنگی طیارہ کو مار گرانے والے ابھینندن کی واپسی ، فضائیہ کے سربراہ کے ساتھ بھری اڑان

ونگ کمانڈر ابھینندن ورتمان پیر کو کاکپِٹ لوٹے اور انہوں نے فضائیہ کے سربراہ بی ایس دھنوآ کے ساتھ جنگی طیارہ مگ۔21 سے اڑان بھری۔

Sep 02, 2019 06:32 PM IST | Updated on: Sep 02, 2019 06:33 PM IST
پاکستانی جنگی طیارہ کو مار گرانے والے ابھینندن کی واپسی ، فضائیہ کے سربراہ کے ساتھ بھری اڑان

پاکستانی جنگی طیارہ کو مار گرانے والے ابھینندن کی واپسی

ونگ کمانڈر ابھینندن ورتمان پیر کو کاکپِٹ لوٹے اور انہوں نے فضائیہ کے سربراہ بی ایس دھنوآ کے ساتھ جنگی طیارہ مگ۔21 سے اڑان بھری۔ فروری میں جموں و کشمیرمیں سی آر پی ایف کے قافلہ پر خودکش دہشت گردانہ حملے کے بعد بالاکوٹ واقع دہشت گردی کے ٹھکانوں پر   27فروری کو فضائیہ نے کاروائی کی تھی۔ ہندوستان کی اس کاروائی پر پاکستان نے جوابی کاروائی کی تھی۔ ابھینندن نے پاکستان کے ایف۔16طیارے کو مار گرایا تھا ، لیکن ان کا طیارہ بھی حادثے کا شکار ہوگیا تھا اور وہ پاکستانی حدود میں پہنچ گئے تھے۔ انھیں پاکستان نےحراست میں لے لیا تھا۔ تاہم ہندوستان کی جانب سے چوطرفہ دباؤ کے بعد پاکستان کو جلدی ہی ابھینندن کو جلد ہی رہا کرنا پڑا تھا۔

وطن واپسی کے بعد ونگ کمانڈر گذشتہ کئی ماہ سے مگ نہیں اڑا رہے تھے اور آج فضائیہ کے سربراہ دھنوآ کے ساتھ انہوں نے پرواز کیا۔ ابھینندن کو یومِ آزادی کے موقع پر ’ویر چکر‘ سے نوازا گیا تھا۔

Loading...

پاکستان سے لوٹنے کے بعد ونگ کمانڈر کے دوبارہ طیارہ اڑانے کے سلسلے میں تمام خدشات ظاہر کیے گئے تھے۔ اس وقت فضائیہ کے سربراہ نے واضح کیا تھا کہ طبی فٹنس کے بعد ہی ابھینندن کے دوبارہ طیارہ اڑانے کے سلسلےمیں کوئی فیصلہ کیا جائے گا۔

विंग कमांडर (पायलट) अभिनंदन को इसलिए 'हाथ भी नहीं लगाया था' पाकिस्‍तान ने

بنگلور میں واقع فضائیہ کے انسٹی ٹیوٹ آف ایئرواسپیس میڈیسن کی جانب سے ونگ کمانڈر کو گذشتہ ماہ دوبارہ طیارہ اڑانے کی اجازت دی گئی تھی۔ ابھینندن کو دوبارہ اڑان بھرنے کی اجازت دینے سے قبل ان کی مکمل طبی جانچ کی گئی تھی اور وہ اس میں فٹ پائے گئے تھے۔

ونگ کمانڈ رابھینندن پیرکو پٹھان کوٹ ایئربیس سے مگ ۔21 کے ٹریننگ ورژن کے ذریعے دوبارہ پرواز کیا۔ ونگ کمانڈر کا حوصلہ بڑھانے کے لیے فضائیہ سربراہ دھنوآ بھی طیارے میں ان کے ساتھ تھے۔

Loading...