اپنا ضلع منتخب کریں۔

    غیر مسلم طلبہ کو کیسے داخلہ دے رہے ہیں مدارس؟ این سی پی سی آر نے سرکار سے جانچ کیلئے کہا

    غیر مسلم طلبہ کو کیسے داخلہ دے رہے ہیں مدارس؟ این سی پی سی آر نے سرکار سے جانچ کیلئے کہا ۔ File Photo

    غیر مسلم طلبہ کو کیسے داخلہ دے رہے ہیں مدارس؟ این سی پی سی آر نے سرکار سے جانچ کیلئے کہا ۔ File Photo

    Madrassa schools: این سی پی سی آر نے سبھی ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام خطوں سے کہا ہے کہ وہ سرکار کے ذریعہ امداد یافتہ اور منظور شدہ ان سبھی مدارس کی جانچ کرائیں جو غیر مسلم طلبہ کو داخلہ دے رہے ہیں ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | New Delhi
    • Share this:
      نئی دہلی : این سی پی سی آر نے سبھی ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام خطوں سے کہا ہے کہ وہ سرکار کے ذریعہ امداد یافتہ اور منظور شدہ ان سبھی مدارس کی جانچ کرائیں جو غیر مسلم طلبہ کو داخلہ دے رہے ہیں ۔ نیشنل کمیشن فار پروٹیکشن آف چائلڈ رائٹس ( این سی پی سی آر) کے صدر پریانک کانونگو نے سبھی چیف سکریٹریوں کو لکھے گئے خط میں کہا ہے کہ غیر مسلم کمیونٹی کے بچے سرکار کے ذریعہ امداد یافتہ اور منظور شدہ مدارس میں شامل ہورہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ کمیشن کو یہ بھی پتہ چلا ہے کہ ایسے بچوں کو کچھ ریاستیں اور مرکز کے زیر انتطام خطے وظیفہ بھی دے رہے ہیں ۔

      چیف سکریٹریوں کو لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ یہ واضح طور پر آئین کے آرٹیکل 28 (3) کے خلاف ہونے کے ساتھ اس کی خلاف ورزی بھی ہے ۔ یہ تعلیمی اداروں کو والدین کی اجازت کے بغیر کسی مذہبی تعلیم میں حصہ لینے کیلئے بچوں کو پابند کرنے سے منع کرتا ہے ۔ کمیشن نے کہا کہ ادارہ کے طور پر مدارس اصل طور پر بچوں کو مذہبی تعلیم فراہم کرنے کیلئے ذمہ دار ہیں ۔

      یہ بھی پڑھئے: راجیہ سبھا میں یو سی سی پر پرائیویٹ ممبر بل پیش، بی جے پی ایم پی نے پیش کی تجویز


      یہ بھی پڑھئے: ایم سی ڈی الیکشن میں جیتنے والے دو کونسلروں نے دیا کانگریس کو جھٹکا، اے اے پی میں شامل


      کمیشن نے کہا کہ پتہ چلا ہے کہ جو مدارس سرکار کے ذریعہ امداد یافتہ ہیں یا منظور شدہ ہیں وہ بچوں کو مذہبی اور کچھ حد تک رسمی تعلیم یعنی دونوں طرح کی تعلیم دے رہے ہیں ۔ خط میں کہا گیا ہے کہ کمیشن اپنی طاقت کا استعمال کرتے ہوئے سفارش کرتا ہے کہ آپ کی ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام خطوں میں غیر مسلم بچوں کو داخلہ دینے والے سرکار کے ذریعہ امداد یافتہ اور منظور شدہ سبھی مدارس کی تفصیل سے جانچ کرائی جائے ۔

      نیز کمیشن نے رسمی تعلیم مہیا کرانے کیلئے سبھی بچوں کا داخلہ فوری اثر سے اسکول میں کرانے کیلئے کہا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: