உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    17ماہ بعد سپریم کورٹ میں 1ستمبر سے فزیکل سماعت کادوبارہ آغاز، ان پہلوؤں پر رکھنا ہوگا خاص خیال

    سپریم کورٹ

    سپریم کورٹ

    سپریم کورٹ کے ذرائع کے مطابق معاملات کی فزیکل سماعت ان معاملات میں کی جائے گی جن میں منگل ، بدھ اور جمعرات کو طویل سماعت کی ضرورت ہوتی ہے۔

    • Share this:
      سپریم کورٹ 1 ستمبر سے محدود انداز میں مقدمات کی فزیکل سماعت شروع ہوسکتی ہے۔ عدالت عظمیٰ کے ذرائع کے مطابق معاملات کی فزیکل سماعت ان معاملات میں کی جائے گی جن میں منگل ، بدھ اور جمعرات کو طویل سماعت کی ضرورت ہوتی ہے۔

      تاہم سپریم کورٹ پیر اور جمعہ کو ورچوئل سماعتوں کے ذریعہ عرضداشتوں پرسنوائی ہوگی، جو متفرق دن ہیں اور بنچوں سے پہلے درج معاملات کی تعداد زیادہ ہے۔

      کورونا وائرس کے آغاز کے ساتھ ہی سپریم کورٹ مقدمات کی ورچوئل سماعت کر رہی ہے اور سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن (SCBA) اور سپریم کورٹ ایڈووکیٹ آن ریکارڈ بار ایسوسی ایشن (SCAORA) کی طرف سے چیف جسٹس کو کئی نمائندگیاں کی گئی ہیں۔ اسی لیے عدالتوں میں فزیکل سماعت دوبارہ شروع کرنے کے لیے منظٰوری دی گئی ہے۔

      علامتی تصویر۔(Shutterstock)۔
      علامتی تصویر۔(Shutterstock)۔


      عدالت عظمیٰ کے ذرائع کے مطابق معاملات کی فزیکل سماعت ان معاملات میں کی جائے گی جن میں منگل ، بدھ اور جمعرات کو طویل سماعت کی ضرورت ہوتی ہے۔

      تاہم سپریم کورٹ پیر اور جمعہ کو ورچوئل سماعتوں کے ساتھ جاری رہے گی، جو متفرق دن ہیں اور بنچوں سے پہلے درج معاملات کی تعداد زیادہ ہے۔

      ۔ 18 اگست کو سپریم کورٹ نے اشارہ کیا تھا کہ سپریم کورٹ میں فزیکل سماعت گزشتہ سال مارچ سے COVID-19 وبا کے درمیان عملی طور پر کارروائی کر رہی ہے ، جلد ہی دوبارہ شروع ہو سکتی ہے۔

      چیف جسٹس این وی رمانا کی سربراہی میں بنچ نے کہا تھا کہ سپریم کورٹ میں 10 دن کے اندر فزیکل سماعت شروع ہو سکتی ہے۔

      کورونا وائرس کی وجہ سے سپریم کورٹ گزشتہ سال مارچ سے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے مقدمات کی سماعت کر رہی ہے اور کئی بار باڈیز اور وکلاء مطالبہ کر رہے ہیں کہ فزیکل سماعت فوری طور پر دوبارہ شروع کی جائے۔

      اس سال جولائی میں ایس سی بی اے نے سی جے آئی کو ایک خط لکھا تھا جس میں کہا گیا تھا کہ سپریم کورٹ میں فزیکل سماعت دوبارہ شروع کی جائے اور کہا جائے کہ قومی دارالحکومت میں کوویڈ 19 کی صورتحال "تقریبا نارمل" ہو گئی ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: