ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

اسد الدین اویسی کا یوگی آدتیہ ناتھ کو چیلنج ، کہا : سچے یوگی ہیں تو 24 گھنٹوں میں ثابت کریں کہ میں پاکستان کا حامی ہوں

اسد الدین اویسی نے کہا کہ  میں یوگی آدتیہ ناتھ کو چیلنج کرتا ہوں کہ اگر وہ سچے یوگی ہیں تو وہ 24 گھنٹے میں اس بات کو ثابت کریں کہ میں پاکستان کی حمایت کرتا ہوں ۔

  • Share this:
اسد الدین اویسی کا یوگی آدتیہ ناتھ کو چیلنج ، کہا : سچے یوگی ہیں تو 24 گھنٹوں میں ثابت کریں کہ میں پاکستان کا حامی ہوں
اسد الدین اویسی ۔ فائل فوٹو ۔

آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسد الدین اویسی نے اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کو ان کے پاکستان والے بیان کو لے کر چیلنج کیا ہے ۔ اویسی نے کہا کہ یوگی کے بیان سے مایوسی صاف طور پر جھلکتی ہے ۔ اگر ان کے پاس کو کوئی ثوت ہے تو وہ اس کو 24 گھنٹے میں پیش کریں ۔ اویسی نے آر جے ڈی اور کانگریس پر بھی نشانہ سادھتے ہوئے کہا کہ ان کے پاس بہار اسمبلی انتخابات جیتنے کیلئے کوئی بھی حکمت عملی اور نظریہ نہیں ہے ۔


ایم آئی ایم رکن پارلیمنٹ نے گزشتہ روز کہا کہ میں یوگی آدتیہ ناتھ کو چیلنج کرتا ہوں کہ اگر وہ سچے یوگی ہیں تو وہ 24 گھنٹے میں اس بات کو ثابت کریں کہ میں پاکستان کی حمایت کرتا ہوں ۔ اویسی نے کہا کہ یہ بیان ان کی مایوسی کی عکاسی کرتا ہے ۔ اویسی نے کہا کہ کیا انہیں معلوم نہیں کہ میں پاکستان جاکر وہاں ہندوستان کی جمہوریت کے بارے میں بات کرکے آیا ہوں ۔



اویسی نے بہار اسمبلی انتخابات کو لے کر کہا کہ کانگریس اور راشٹریہ جنتا دل کے پاس بہار اسمبلی انتخابات جیتنے کی طاقت نہیں ہے ۔ اویسی نے کہا کہ اس اسمبلی انتخابات کیلئے ان کے پاس کوئی سیاسی نظریہ یا حکمت عملی نہیں ہے ۔

بتادیں کہ بہار اسمبلی انتخابات میں بھارتیہ جنتا پارٹی کے اسٹار پرچارک یوگی آدتیہ ناتھ نے بہار کے جموئی ، بھوجپور اورپٹنہ کی انتخابی ریلیوں میں دعوی کیا تھا کہ جموں و کشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹائے جانے سے سب سے زیادہ تکلیف راہل گاندھی اور اسد الدین اویسی کو ہوئی ہے ۔

یوگی نے اپنی ریلیوں میں کانگریس اور اسد الدین اویسی کو پاکستان کا حامی بھی بتایا تھا ۔ ساتھ ہی کہا تھا کہ یہ لوگ پاکستان کی تعریف کرتے ہیں ، اس لئے ملک کے مفاد کے بارے میں کبھی نہیں سوچ سکتے ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Oct 22, 2020 07:49 AM IST