ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

وارانسی پہنچے اے آئی ایم آئی ایم چیف اسدالدین اویسی، کہا- اکھلیش حکومت نے 12 بار یوپی آنے سے روکا

Varanasi News: بہار اسمبلی انتخابات میں ملی کامیابی کے بعد یوپی میں اتحاد کی سیاست کو بڑھاتے ہوئے اے آئی ایم آئی ایم سربراہ اسدالدین اویسی نے سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی سے سمجھوتہ کیا ہے۔ اسدالدین اویسی نے کہا کہ سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی کے اوم پرکاش راج بھر سے ان کی دوستی ہے۔

  • Share this:
وارانسی پہنچے اے آئی ایم آئی ایم چیف اسدالدین اویسی، کہا- اکھلیش حکومت نے 12 بار یوپی آنے سے روکا
Varanasi News: بہار اسمبلی انتخابات میں ملی کامیابی کے بعد یوپی میں اتحاد کی سیاست کو بڑھاتے ہوئے اے آئی ایم آئی ایم سربراہ اسدالدین اویسی نے سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی سے سمجھوتہ کیا ہے۔ اسدالدین اویسی نے کہا کہ سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی کے اوم پرکاش راج بھر سے ان کی دوستی ہے۔

وارانسی: یوپی میں ہونے والے آئندہ اسمبلی انتخابات (UP Assembly Election 2021) سے قبل پروانچل کی سیاسی زمین کو تلاش کرنے کے لئے اے آئی ایم آئی ایم سربراہ اور رکن پارلیمنٹ اسد الدین اویسی (Asaduddin Owaisi) وارانسی پہنچ گئے ہیں۔ یہاں آتے ہی اسدالدین اویسی نے سماجوادی پارٹی (Samajwadi Party) کے سربراہ اکھلیش یادو (Akhilesh Yadav) پر سیدھے حملہ بولا۔ انہوں نے الزام لگایا کہ سماجوادی پارٹی کے دور اقتدار میں انہیں 12 بار یوپی آنے سے روکا گیا۔ بہار الیکشن میں ملی کامیابی کے بعد یوپی میں اتحاد کی سیاست کو بڑھاتے ہوئے انہوں نے سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی سے سمجھوتہ کیا ہے۔ ایسے میں اسدالدین اویسی نے کہا کہ سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی کے سربراہ اوم پرکاش راج بھر سے ان کی دوستی ہے۔


واضح رہے کہ یوپی اسمبلی انتخابات 2020 سے پہلے ریاست میں سیاسی ہلچل تیز ہوگئی ہے۔ اسی ضمن میں 12 جنوری یعنی منگل کو اے آئی ایم آئی ایم چیف پروانچل کے ایک روزہ دورے پر وارانسی پہنچے ہیں۔ ان کے ساتھ سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی کے صدر اوم پرکاش راج بھر بھی موجود رہیں گے۔ اس سے پہلے اوم پرکاش راج بھر اور اے آئی ایم آئی ایم چیف اسدالدین اویسی کی ملاقات ہوئی تھی۔ سوال یہ ہے کہ کیا بہار اتحاد میں شامل بی ایس پی بھی یوپی کے الیکشن میں اے آئی ایم آئی ایم کے ساتھ مل کر الیکشن لڑے گی۔


Varanasi News: بہار اسمبلی انتخابات میں ملی کامیابی کے بعد یوپی میں اتحاد کی سیاست کو بڑھاتے ہوئے اے آئی ایم آئی ایم سربراہ اسدالدین اویسی نے سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی سے سمجھوتہ کیا ہے۔ اسدالدین اویسی نے کہا کہ سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی کے اوم پرکاش راج بھر سے ان کی دوستی ہے۔
Varanasi News: بہار اسمبلی انتخابات میں ملی کامیابی کے بعد یوپی میں اتحاد کی سیاست کو بڑھاتے ہوئے اے آئی ایم آئی ایم سربراہ اسدالدین اویسی نے سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی سے سمجھوتہ کیا ہے۔ اسدالدین اویسی نے کہا کہ سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی کے اوم پرکاش راج بھر سے ان کی دوستی ہے۔


اسدالدین اویسی کے ساتھ اوم پرکاش راج بھر وارانسی کے بابت پور ایئر پورٹ پر ملیں گے۔ وہیں سے جونپور، دیدار گنج، اعظم گڑھ ہوکر پھول پور میں کارکنان کے ساتھ سنواد کریں گے۔ اسی دن دیر شام اسدالدین اویسی دہلی روانہ ہوجائیں گے۔ بہار اسمبلی انتخابات میں اسدالدین اویسی کی پارٹی کا کھاتہ کھلنے کے بعد چھوٹی جماعتیں یوپی کے آئندہ اسمبلی انتخابات میں پروانچل میں ذات پات پر مبنی اعدادوشمار کے مطابق آگے بڑھنے کی کوشش میں ہیں۔ یہی سبب ہے کہ سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی کی قیادت میں بھاگیداری سنکلپ مورچہ میں کئی جماعتوں کے جڑنے کے بعد اب اسدالدین اویسی پروانچل کی صورتحال سمجھے کے لئے 12 جنوری کو یہاں آئیں گے۔ اس دورے سے مستقبل کی سیاست کے ساتھ کئی نئے اشارے بھی ملنے کی امید ہے۔

بھاگیداری سنکلپ مورچہ کے تحت لڑیں گے الیکشن

بھاگیداری سنکلپ مورچہ میں راج بھر کی ایس بی ایس پی کے علاوہ یوپی کے سابق وزیر بابو سنگھ کشواہا کی جن ادھیکار پارٹی، بابو رام پال کی راشٹریہ ادے پارٹی، انل سنگھ چوہان کی جنتا کرانتی پارٹی اور پریم چند پرجاپتی کی راشٹریہ اپیکشت سماج پارٹی شامل ہیں۔ اس کے ساتھ اسدالدین اویسی نے کہا کہ ہم اب راج بھر کے مورچہ کا حصہ ہیں۔ آج میں ان سے ملا ہوں، ہم ان کے ساتھ جائیں گے۔ ’بھاگیداری سنکلپ مورچہ’ کی تشکیل پہلے ہی کی گئی تھی، ہم ان کے ساتھ رہیں گے۔ وہیں، انہوں نے کہا کہ راج بھر کی پارٹی نے حال ہی میں ہوئے بہار اسمبلی انتخابات میں اے آئی ایم آئی ایم امیدواروں کی جیت میں اہم کردار ادا کیا تھا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jan 12, 2021 03:25 PM IST